دنیا

کینیڈا میں خالصتان ریفرنڈم رکوانے کی بھارتی کوششیں ناکام

کینیڈا میں خالصتان ریفرنڈم رکوانے کی بھارتی کوششیں ناکام

کینیڈا میں خالصتان ریفرنڈم رکوانے کی بھارتی کوششیں ناکام ہوگئیں۔
اس حوالے سے کینیڈا کی حکومت نے بھارت کو جواب دیا کہ ریفرنڈم جمہوری حق ہے، جس سے سکھ کمیونٹی کو محروم نہیں کرسکتے۔
دوسری جانب ٹورنٹو میں خالصتان ریفرنڈم آج منعقد ہورہا ہے، ریفرنڈم میں ووٹ ڈالنے کے لیے طویل قطاریں لگی ہوئی ہیں، جبکہ سکھ کمیونٹی میں زبردست جوش و خروش بھی پایا جاتا ہے۔
سکھ فار جسٹس کے زیرِاہتمام ہونے والے ریفرنڈم میں ہزاروں سکھ اپنا حقِ رائے دہی استعمال کریں گے۔
دریں اثنا ریفرنڈم سے قبل آنجہانی سکھ لیڈر سنت جرنیل سنگھ بھنڈرانوالے کا پوسٹر پھاڑنے کے بعد شدید کشیدگی پیدا ہوئی تھی۔
جس پر مقامی پولیس نے پوسٹر پھاڑنے کے الزام میں ایک بھارتی نژاد شخص کو گرفتار کرلیا تھا۔
سکھ فار جسٹس کے جنرل سیکریٹری کا کہنا ہے کہ سکھ اپنے حق کے لیے جمہوری جدوجہد کر رہے ہیں۔
انہوں نے واضح کیا تھا کہ ہمارا دہشت گردی سے کوئی تعلق نہیں ہے۔
خیال رہے کہ بھارت سے آزادی اور سکھوں کے لیے علیحدہ وطن خالصتان کے مطالبے کے لیے کینیڈا میں آج ریفرنڈم ہونے جا رہا ہے۔
اس سے قبل برطانیہ سمیت مختلف یورپی ممالک میں بھی سکھوں کے علیحدہ وطن کے لیے ریفرنڈم ہو چکے ہیں جس میں ہزاروں کی تعداد میں افراد نے شرکت کی تھی۔

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔