دلچسپ اور عجیب

فارن فنڈنگ کیس، پی ٹی آئی کو بڑا ریلیف مل گیا

پی ٹی آئی پر ممنوعہ فنڈنگ کا الزام ثابت، الیکشن کمیشن کا متفقہ تحریری فیصلہ جاری

الیکشن کمیشن آف پاکستان کی جانب سے پی ٹی آئی فارن فنڈنگ کیس کی سماعت 6 نومبر تک ملتوی کردی گئی ہے۔

تفصیلات کے مطابق پی ٹی آئی غیر ملکی فنڈنگ کیس کی سماعت چیف الیکشن کمشنر کی سربراہی میں ہوئی۔تحریک انصاف کے وکیل کی جانب سے الیکشن کمیشن میں غیر ملکی فنڈنگ کیس سے متعلق عبوری جواب جمع کرایا گیاہے۔ 4 افراد کے نائیکاپ اور ویڈیوز بھی جمع کرائی گئی ہیں۔
تفصیلات کے مطابق الیکشن کمیشن میں آج پی ٹی آئی فارن فنڈنگ کیس کی سماعت ہوئی جس میں پی ٹی آئی کی جانب سے پی ٹی آئی کے وکیل شاہ خاور پیش ہوئے۔

پی ٹی آئی کے وکیل شاہ خاور نے کمیشن سے استدعا کی ہمیں مزید مہلت چاہیے، 10 سال پرانا کیس ہے، بیرون ملک چیپٹر سے تفصیلات اکھٹی کرنی ہیں، ہمیں کم از کم 8 ہفتے درکار ہیں۔
چیف الیکشن کمشنر نے کہا کہ اس موقع پر چیف الیکشن کمشنر کا کہنا تھا کہ آپ سے تو ہمارا سوال تھا کہ ہم رقم ضبط کیوں نہ کر لیں، اپ کو اس پر جواب دینا ہے اور ہمارے قانون کے مطابق غیر ملکی کمپنی سے پیسے نہیں آ سکتے ۔

پی ٹی آئی کے وکیل نے کہا کہ ہمیں 6 ہفتے دے دیں جس پر چیف الیکشن کمشنر نے ریمارکس دیے کہ پہلے ہی بہت وقت لگ گیا ہے، آپ کو 6 ہفتے کی مہلت دے رہے ہیں۔شاہ خاور نے مزید کہا کہ لوگوں نے بیان دیا ہےکہ وہ پاکستانی ہیں، فیصلے میں غیر ملکی ظاہر کیا گیا تھا۔

واضح رہے کہ پی ٹی آئی کو انہی چیف الیکشن کمیشن سے ریلیف ملا ہے جن پرعمران خان اپنے فارن فنڈنگ کیس میں ناانصافی کرنے کا الزام دیتے ہیں ۔

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔