پاکستان

عمران خان نے کشمیر پر دبنگ پالیسی اپنائی اور بھارت کو گھٹنے ٹیکنے پر مجبور کیا

سردار رفیق نئیر

وزیراعظم کے معاون خصوصی اطلاعات ، ماحولیات و سمال انڈسٹریز چوہدری محمد رفیق نیر نے کہا ہے کہ 29 ستمبر کو مظفر آباد میں عوام کا ٹھاٹھیں مارتا ہوا سمندر سابق وزیراعظم پاکستان چیرمین تحریک انصاف عمران خان کا والہانہ اور پرتپاک استقبال کرے گا ۔وزیر اعظم سردار تنویر الیاس خان نے پاکستان تحریک انصاف کے تمام کارکنوں کو ہدایت جاری کی ہے کہ وہ اپنے قائد کا والہانہ استقبال کرنے کے لیے متحرک ہو جائیں ۔ آزاد کشمیر بھر سے قافلے مظفر آباد کی جانب رواں دواں ہوں گے جہاں وہ اپنے قائد اور کشمیریوں کے محسن عمران خان کا تاریخی استقبال کریں گے ۔معاون خصوصی اطلاعات نے ان خیالات کا اظہار تحریک انصاف کے کارکنوں کے ایک وفد سے بات چیت کرتے ہوئے کیا۔ چوہدری محمد رفیق نیر نے کہا کہ عمران خان نے کشمیر پر ایک جاندار پالیسی اپنائی انہوں نے بین الاقوامی میڈیا اور بین الاقوامی فورمز کو مسئلہ کشمیر کی اہمیت سے آگاہ کیا اور مسئلہ کشمیر پر ایک جاندار پالیسی مرتب کی ۔انہوں نے کہا میرے قائد عمران خان نے کوٹلی میں تقریر کرتے ہوئے کہا کہ پاکستان وہی فیصلہ قبول کرے گا جو کشمیریوں کا فیصلہ ہوگا کشمیری جو چاہیں گے پاکستان بھی وہی چاہے گا یہ مضبوط موقف تھا اور ایک شاندار پالیسی تھی اقوام متحدہ کی جنرل اسمبلی سے خطاب کے دوران بھی عمران خان نے کشمیر پر دبنگ پالیسی اپنائی اور بھارت کو گھٹنے ٹیکنے پر مجبور کیا ۔انہوں نے کہا کہ محسن کشمیر عمران خان کا مظفرآباد آمد پر تاریخی استقبال ہوگا ،کشمیری عوام ان کی ایک جھلک دیکھنے کے لئے بے تاب ہیں ۔ وزیراعظم سردار تنویر الیاس خان کی خصوصی ہدایت پر تحریک انصاف کے کارکنان آزاد کشمیر بھر میں متحرک ہوچکے ہیں آزاد کشمیر بھر سے قافلے اس جلسہ عام میں شرکت کریں گے اور اپنے قائد کا شاندار استقبال کریں گے

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔