- الإعلانات -

بھارت کے برے دن

چیف آف آرمی سٹاف جنرل راحیل شریف نے جس طرح بھارت کو واضح پیغام دیکر آڑے ہاتھوں لیا ہے اس پر پوری قوم انہیں سلیوٹ پیش کررہی ہے ۔اس میں کوئی شک نہیں کہ ہماری مسلح افواج دنیا کی بہترین افواج ہیں اورانہوں نے ایسے بین الاقوامی ریکارڈ قائم کیے ہیں جو رہتی دنیا تک قائم رہیں گے ۔پاک فوج کی بھارت پر اتنی زبردست دہشت ہے کہ وہ ان کے سامنے سانس تک نہیں لے سکتے چونکہ ہندو ایک بزدل قوم ہے اورپھر کفار نے ہمیشہ سے کمر پر ہی وار کیا لیکن وہ منہ پر آکر کبھی بھی مسلمان کا مقابلہ نہیں کرسکتے ۔پاک فوج نے دنیا بھر کی بہترین فوجوں میں پیشہ وارانہ اعتبار سے اپنی صلاحیتوں کالوہا منوایا ۔جب چیف آف آرمی سٹاف نے یوم دفاع کے موقع پر بھارت کو واضح اوردوٹوک پیغام دیا کہ پاک فوج اس دھرتی کا تحفظ کرنے کی بھرپور صلا حیت رکھتی ہے پھر گذشتہ روز کورکمانڈرز کا نفر نس میں بھی عسکر ی قیادت نے اس عزم کا اعادہ کیا کہ ہر بیرونی جارحیت کا منہ توڑ جواب دیا جائیگا ۔بھارت کو نوشتہ دیوار پڑھ لینا چاہیے کہ وہ جو آئے دن لائن آف کنٹرول پر بلااشتعال فائرنگ کرتا رہتا ہے ۔پہلے ہی اسے اس کا بھرپور جواب مل رہا ہے اب کے قطعی طور پر دانت توڑ دئیے جائیں گے ۔بھارت کو یہ بات واضح طور پر سمجھ لینا چاہیے کہ پاک افواج سرد یا گرم جنگ ہاٹ یا کولڈ سٹارٹ دونوں کیلئے ہمہ وقت تیار ہیں ۔پھر پاکستان نے جو ایٹم بم بنایا ہے وہ کھیلنے کیلئے نہیں بنایا اورنہ ہی کہیں اسے سجانے کیلئے بنایا گیا ہے ۔اگر ملکی سالمیت پر کسی طرح کی بھی آنچ آئی تو پاکستان بھارت کو چند منٹوں کے اندر صفحہ ہستی سے نیست ونابود کردے گا ۔اس بارے میں ہمارے ایٹمی سائنسدان واضح طور پر پہلے ہی آگاہ کرچکے ہیں ۔1965ءکی جنگ میں بھارت اپنی حالت دیکھ چکا ہے کہ وہ جنگ ان کیلئے ایک ڈراﺅنا خواب بن گئی ہے ۔بھارتی بنیوں نے شاید یہ سوچا تھا کہ خدانخواستہ پاکستان ان کیلئے کوئی ترنوالہ ہے اب بھی بھارت نے ایک اوربڑھک مارتے ہوئے کہا ہے کہ اب وہ داﺅد ابراہیم اورحافظ سعید کیخلاف کارروائی کرنے کیلئے پاکستان میں داخل ہوسکتا ہے یہ اس کی بھول ہے وہ ایسا اقدام کرکے تو دیکھے اس کے فوجی پاکستان سے واپس نہ ہی اپنے قدموں پرچل جائیں گے اورپاک فوج انہیں ایسا تاریخی سبق سکھائے گی کہ شاید پھر آنے والی نسلیں یہ سوچ بھی نہ سکیں کہ وہ پاکستان کی طرف ٹیڑھی آنکھ سے دیکھیں ۔وزیراعظم نواز شریف نے بھی واضح پیغام دیا ہے کہ اگر کسی نے مملکت خداداد پاکستان کی طرف ٹیڑھی آنکھ سے دیکھا تو اس کو پھوڑ دیا جائیگا ۔مودی تو چونکہ پاگل ہوچکا ہے اور وہ اس خطے کے امن وامان کو تباہی کے دہانے پر پہنچانے کے درپے ہیں اس کے اقدام کی وجہ سے نہ صرف بھارت کی سلامتی کو خطرہ ہے بلکہ پورے خطے میں امن وامان کاقائم رہنا ممکن نہیں ہے ۔اسی طرح وہ بیوقوفانہ حرکتیں کرتا رہا تو پاکستان کی مسلح افواج اسے بہترین سبق سکھائیں گی ۔پاکستان میں جو اس نے محدود جنگ کرنے کے حوالے سے بڑھک ماری ہے اس حوالے سے ہماری عسکری قیادت نے بتا دیا ہے کہ مسلح افواج ہر بیرونی جارحیت کا مقابلہ کرنے کیلئے تیار ہیں ۔ہماری مسلح افواج کی کارکردگی کو دیکھنے کیلئے صرف آپریشن ضرب عضب ہی کو دیکھ لیا جائے کہ انہوں نے کس طرح سے کامیابیاں حاصل کی ہیں اور آج ملک میں امن وامان کا دور دورہ ہے ۔شہر قائد جو کبھی ایک مقتل گاہ بن چکا تھا آج وہاں آپریشن کے باعث امن وامان بحال ہوتا ہوا نظرآرہا ہے ۔ٹارگٹ کلنگ میں کمی آچکی ہے ،بلکہ اگر یہ کہا جائے کہ نہ ہونے کے برابر ہے تو غلط نہ ہوگا ۔وزیراعظم نے بھی کہا ہے کہ کراچی آپریشن کے حوالے سے کوئی دباﺅ قبول نہیںکیا جائیگا اور کرپشن کو بھی ختم کریں گے ان دونوںایشوز پر وزیراعظم کاواضح موقف پاکستان کی ترقی کا ثبوت ہے کیونکہ جب یہاں سے دہشتگردی ،ان کے سہولت کار،معاونت کارسب کے سب ختم ہوجائیں گے تو پھر قومی خزانہ لوٹنے والوں کے گرد بھی گھیرا تنگ کیا جائیگا توپھر یقینی طور پر یہ ملک دن دگنی اوررات چوگنی ترقی کرے گا ۔خدا تعالیٰ نے اس ملک کو ہر نعمت سے نوازا ہے ۔یہاں پر گرمی پانی بھی ہے ،چاروں موسم بھی ہیں ،زمین بھی زرخیز ہے ،اللہ تعالیٰ نے یہاں کی زمین کو خزانوں سے مالا مال بھی کیا ہے پھر کس چیز کمی ہے ۔صرف کمی امن وامان کی تھی جو کہ وزیراعظم نوازشریف اورعسکری قیادت کی سربراہی میں حاصل ہوتی جارہی ہے ۔چونکہ یہ امن وامان بھارت کو بھا نہیں رہا ۔پاک چین اقتصادی راہداری کے منصوبے نے بھی اس کی رات کی نیندیں حرام کررکھی ہیں وہ بخوبی جانتا ہے کہ اس منصوبے کے مکمل ہونے کے بعد پاکستان ترقی کی کن بلندیوں پرپہنچ جائیگا ۔اسی وجہ سے وہ اس کیخلاف باقاعدگی سے سازشیں کررہا ہے مگر پاکستان کی قوم کسی صورت بھی ان سازشوں کو کامیاب نہیں ہونے دے گی ۔اب پوری دنیا بھارت کے مکروہ چہرے کو جان چکی ہے اس کے اصل عزائم واشگاف ہوتے جارہے ہیں ۔وہ دن بہت زیادہ دور نہیں جب بھارت ٹکڑے ٹکڑے ہوجائیگا ۔مودی کی ناقص پالیسیوں کی وجہ سے بھارت کے برے دن شروع ہوچکے ہیں ۔