- الإعلانات -

ملک کی تمام ایکسپورٹ انڈسٹری کو کھولنے کا فیصلہ کیا ہے، تعمیراتی سیکٹر سے جڑے تمام شعبے حفاظتی تدابیر کے ساتھ کھول رہے ہیں وفاقی وزیر برائے صنعت و پیداوار حماد اظہر کی میڈیا سے گفتگو

 وفاقی وزیر برائے صنعت و پیداوار حماد اظہر نے کہا ہے کہ ملک کی تمام ایکسپورٹ انڈسٹری کو کھولنے کا فیصلہ کیا ہے، تعمیراتی سیکٹر سے جڑے تمام شعبے حفاظتی تدابیر کے ساتھ کھول رہے ہیں۔ وزیراعظم عمران خان کے ہمراہ میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے انہوں نے بتایا کہ ای کامرس، لوکل ڈیلیوری کیلئے کاروبار کھول رہے ہیں جبکہ سافٹ ویئر ہاوسز، فرٹیلائزر پلانٹس، نرسریاں اور زراعت کے یونٹس کو بھی کھولا جا رہا ہے۔ انہوں نے مزید بتایا کہ جانوروں کیلئے طبی ہسپتال، کتابوں کی اور سٹیشنری کی دکانیں، شیشہ بنانے والی صنعتیں، الیکٹریشن، پلمبرز اور ترکھانوں کو کام کرنے کی اجازت ہو گی۔ انہوں نے کہاکہ حجام کی دکانیں کھولنے سے متعلق صوبوں کی مختلف آراء تھیں تاہم اسے بھی کھول رہے ہیں۔ اس کے علاوہ سیمنٹ، بجری اور ریت بنانے والے یونٹس اور تمام ایکسپورٹ انڈسٹری کو کھولا جائے گا۔ حماد اظہر نے کہاکہ تمام صنعتیں حفاظتی تدابیر کے ساتھ کھولی جائیں گی، الیکٹریشن، پلمبر، ریڑھی لگانے والوں کواجازت ہو گی، تعمیراتی صنعت کھولنے سے متعلق صوبوں میں اتفاق ہے۔ اس موقع پر وفاقی وزیر برائے منصوبہ بندی ترقی و اصلاحات و خصوصی اقدامات اسد عمر نے کہا ہے کہ کچھ ذمہ دار سیاسی لیڈر کہہ رہے ہیں کہ کوئی کوآرڈینیشن نہیں ہے تو میں ان کو بتانا چاہتا ہوں کہ ملک کے تمام سٹیک ہولڈرز میں اتفاق رائے سے فیصلے کئے جاتے ہیں۔ انہوں نے کہا کہ آج نیشنل کوآرڈینیشن کا نواں اجلاس تھا جو گزشتہ ایک مہینے کے دوران کے دوران منعقد کئے گئے۔ انہوں نے کہا کہ انہوں نے کہا کہ این سی سی کے اجلاس میں تمام وزراء اعلیٰ شریک ہوتے ہیں اور ان کے ساتھ مشاورت کرتے ہیں۔ انہوں نے کہا کہ دو دن بعد چاروں صوبوں کے وزراء اعلیٰ سمیت آزاد کشمیر اور گلگت بلتستان کی قیادت کو تفصیلی بریفنگ دیں گے