- الإعلانات -

رواں مالی سال کے دوران پاکستان اور بنگہ دیش کی خدمات اور مصنوعات کی تجارت میں 1.59 فیصد تجارتی حجم پاکستان کے حق میں رہا

 رواں مالی سال کے دوران پاکستان اور بنگہ دیش کی خدمات اور مصنوعات کی تجارت میں 1.59 فیصد تجارتی حجم پاکستان کے حق میں رہا ہے۔ سٹیٹ بینک آف پاکستان (ایس بی پی) کی رپورٹ کے مطابق جاری مالی سال میں جولائی تا فروری 2019-20ء کے دوران بنگلہ دیش کو 512.089 ملین ڈالر کی برآمدات کی گئی ہیں جبکہ جولائی تا فروری 2018-19ء میں برآمدات کا حجم 510.413 ملین ڈالر رہا تھا۔ اس طرح گزشتہ مالی سال کے مقابلہ میں جاری مالی سال میں برآمدات میں 0.32 فیصد اضافہ ہوا ہے۔ ایس بی پی کے مطابق گزشتہ مالی سال کے مقابلہ میں رواں مالی سال کے دوران بنگلہ دیش سے کی جانے والی درآمدات 14.47 فیصد کی کمی سے 34.504 ملین ڈالر تک کم ہو گئیں جبکہ گزشتہ مالی سال کے اسی عرصہ بنگلہ دیش سے 40.344 ملین ڈالر کی درآمدات کی گئی تھیں۔ سٹیٹ بینک کے مطابق رواں مالی سال کے پہلے 8 ماہ کے دوران پاکستان اور بنگلہ دیش کی باہمی تجارت میں 477.585 ملین ڈالر کا تجاتی توازن پاکستان کے حق میں رہا ہے جبکہ گزشتہ مالی سال کے دوران پاکستان کے حق میں تجاتی توازن کا حجم 470.69 ملین ڈالر رہا تھا۔ اس طرح گزشتہ مالی سال کے مقابلہ میں رواں مالی سال کے دوران پاک بنگلہ دیش تجارت میں پاکستان کے حق میں تجارتی توازن میں 1.59 فیصد کا اضافہ ہواہے