- الإعلانات -

جون کے دوران افراطِ زر کی شرح 15.5 فیصد، 12 سال کی تیز ترین شرح

حکومت کا کہنا ہے کہ جون کے دوران افراطِ زر کی شرح 15.5 فیصد تک جا سکتی ہے، اس طرح یہ ساڑھے 12 سال میں افراطِ زر کی تیز ترین شرح ہو گی۔

وزارت خزانہ کے گزشتہ روز جاری کردہ ماہانہ معاشی جائزے کے مطابق جون میں سال بہ سال کی بنیاد پر افراطِ زر 14.5سے 15.5فیصد رہے گا، آخری بار دسمبر 2010ء میں افراطِ زر کی شرح 15.5 فیصد ریکارڈ کی گئی تھی، اشیا کی قیمتوں میں اضافے کی شرح بھی وزارت خزانہ کی پیشگوئی سے زیادہ رہنے کا امکان بھی موجود ہے۔

وزارت خزانہ کا کہنا ہے کہ حکومت نے بڑھتے ہوئے خسارے کو قابو کرنے کے لیے پیٹرول و ڈیزل اور بجلی پر سبسڈی واپس لی ہے، اتحادی حکومت اب تک پیٹرول کی قیمت 150 روپے سے بڑھا کر 234 روپے فی لٹر تک بڑھا چکی ہے، امکان ہے کہ جولائی سے پیٹرولیم مصنوعات کی قیمتوں میں مزید اضافہ ہو جائے گا۔