- الإعلانات -

کراچی کے تاجروں نے دکانیں سات بجے بند کرنے کا فیصلہ مسترد کردیا۔

وزیراعلیٰ سندھ سید مراد علی شاہ کے دکانیں جلدی بند کرنے کے احکامات کے خلاف کراچی کے تاجر میدان میں آگئے،کہتے ہیںایسا کرنا ممکن نہیں۔دفاتر بند ہونے کے بعد تو لوگ بازار آتے ہیں ،اسی لیے دکانیں کھلی رکھتے ہیں۔

گھڑی دن کے گیارہ بجا رہی تھی اور کراچی کے بیشتر بازار بند تھے۔ شہر کے ایک بازار کی چند دکانیں البتہ کھلی دکھائی دیں۔ ایک دکاندار نے بتایا کہ دیر سے دکان کھولنا اور دیر سے ہی بند کرنا ، شہر کا معمول ہے،اور دکانداروں کے پاس معمول کی وجہ بھی موجود ہے۔ اس لئے بیشتر نے وزیراعلیٰ سندھ کے بازار جلدی بند کرنے کے حکم کو ہوا میں اڑا دیا۔

بات صرف انکار تک ہی محدود نہیں رکھی بلکہ تاجروں نے تو حکومت کو انکی دوسری ذمہ داریاں ادا کرنے کا مشورہ بھی دے ڈالا۔

سندھ حکومت نے فیصلہ سنانے کے بعد تاجروں سے مشاورت کی بات کی۔ تاجروں کا کہنا ہے جب فیصلہ کر ہی لیا ،تو مشاورت بے کار ہے۔ بقول شخصے، سارا معاملہ عادتیں بدلنے کا ہے جنہیں بدلنا مشکل ہی نہیں ناممکن سا لگتا ہے-