- الإعلانات -

دنیا بھر میں بلند فشار خون کا عالمی دن

اس دن کو منانے کا مقصد عوام کو ہائی بلڈ پریشر کی وجوہات ، علامات ، بروقت تشخیص ، علاج اور احتیاطی تدابیر سے آگاہ کرنا ہے۔

اس دن کی مناسبت سے خصوصی واکس ، سیمینارز ، کانفرنسز اور دیگر تقریبات کا اہتمام کیاجارہا ہے ، جس سے ماہرین طب خطاب کریں گے۔طبی ماہرین شوگر ٹیسٹ ، بلڈ پریشر ٹیسٹ کے ساتھ ساتھ بچاؤ کی احتیاطی تدابیر بھی بتائیں گے۔

ماہرین کا کہنا ہےکہ وزن اور بلڈ پریشر کا دل کی بیماریوں سے انتہائی گہرا تعلق ہے اور دل کے امراض میں مبتلا زیادہ تر مریض اضافی وزن اور ہائی بلڈ پریشر کا شکار ہوتے ہیں لہٰذا دل کے امراض کو کم سے کم کرنے کیلئے موٹاپا اور بلڈ پریشر پر کنٹرول اشد ضروری ہے۔

ہائی بلڈ پریشر پاکستان میں تیزی کے ساتھ پھیلنے والی بیماریوں میں سے ایک ہے ۔بدقسمتی سے آ گاہی نہ ہونے کی سبب 50فیصد مریضوں میں اس کی تشخیص ہی نہیں ہوتی اور جن میں تشخیص ہوتی ہے ان میں سے محض12فیصد اس کا علاج کرواتے ہیں۔

یہی وجہ ہے کہ ملک میں ہائی بلڈ پریشر کی وجہ سے ہونے والی شرح اموات میں تیزی سے اضافہ ہو رہا ہے۔