- الإعلانات -

ایک سال میں 2 اور10 ارب کروڑ ڈالر کی غذائی اشیا کی درآمد، قائمہ کمیٹی برہم

اسلام آباد: 

 قومی اسمبلی کی قائمہ کمیٹی برائے تجارت و ٹیکسٹائل کی ذیلی کمیٹی کو بتایا گیا ہے کہ گزشتہ مالی سال کے دوران 2ارب 10 کروڑ ڈالر کے غذائی اشیا درآمدکی گئیں جس میں سے ایک ارب ڈالر کی دالیں برآمد کی گئی ہیں جولمحہ فکریہ ہے۔

وزرات تجارت کے حکام نے شازیہ مری کی زیرصدارت ذیلی کمیٹی برائے تجارت کو بریفنگ دیتے ہوئے بتایاکہ یورپی یونین کو مجموعی برآمدات کا حصہ 33فیصد ہے مالی سال 2016 -2017 کے دوران یورپی یونین کو 6 ارب 2کروڑ ڈالرکی برآمدات رہیں۔ ملکی درآمدات اور تجارتی خسارہ بڑھ رہا ہے اور برآمدات کم ہورہی ہیں۔

چوہدری اسد الرحمن نے بتایاکہ پاکستان زرعی ملک ہونے کے باوجود زرعی اجناس درآمد کر رہاہے،18ویں آئینی ترمیم کے بعد زراعت کا بیڑا غرق ہو گیا۔ سیکریٹری تجارت یونس ڈھاگہ نے کہاکہ ٹیکسٹائل مصنوعات میںکمی کی بڑی وجہ غیر ملکی خریداروں کی پاکستان کے سفر پر پابندیاں ہیں، پاکستان آنے کیلیے غیر ملکی خریداروں پر ان کے ممالک نے سفری پابندی عائدکررکھی ہیں۔