- الإعلانات -

چین نے 80 کروڑ آبادی کو غربت سے نجات دلا دی, عالمی بینک

چین کی تاریخی کوشش کی وجہ سے دنیا میں انتہائی غربت کی زندگی بسر کرنے والے افراد کی شرح گر کر10فیصد سے کم رہ گئی ،جم یونگ کی پریس کونفرنس آئی ایم ایف نے چین کے مالیاتی عمل انگیزی کی وجہ سے2017,اور2018میں اس کی اقتصادی صورتحال کو اپ گریڈ کیا،سربراہ بین الاقوامی مالیاتی فنڈ

واشنگٹن(آئی این پی) عالمی بنک کے صدر جم یونگ کم نے کہا ہے کہ 80کروڑ عوام کو غریب سے نجات دلانے میں مدد دینے کی چینی کوشش تاریخی ہے ، کم آمدنی والے ممالک چین کے تجربات سے فائدہ اٹھائیں بین الاقوامی مالیاتی فنڈز اور عالمی بینک کے سالانہ اجلاسوں کے موقع پر پریس کانفرنس سے خطاب کرتے ہوئے جم یونگ نے کہا کہ یہ انسانی تاریخ کی ایک عظیم داستان ہے۔

عالمی بینک کے سربراہ نے کہا کہ عالمی غربت مٹاؤ پیش رفت میں چین کے اہم کردار ادار کرنے کی وجہ سے دنیا میں انتہائی غربت کی زندگی بسر کرنے والوں کی شرح 40فیصد سے گر کر10فیصد سے کم رہ گئی ہے ،انہوں نے کہا کہ ہم نے چین سے جو سبق حاصل کیے ہیں،وہ دوسرے متوسط آمدن والے ممالک کے لیے انتہائی مدد گارہیں۔

انہوں نے کہا کہ عالمی بینک ہیلتھ کیر سسٹم اوور ہال جیسے شعبوں اور چین کے دور افتادہ علاقوں میں سماجی خدمات کی رسائی کو یقینی بنانے کے لیے چین کے ساتھ کام کرتا رہے گا،چین کی اقتصادی صورتحال کے بارے میں استفسار پر عالمی بنک کے سربراہ نے کہا کہ چین سرمایہ کاری اور برآمدات پر انحصار کم کرنے اور ملکی کھپت اور سروسز سیکٹر پر توجہ مبذول کرنے میں پیش رفت کررہا ہے۔

اسی پریس کانفرنس میں بین الاقوامی مالیاتی فنڈ کی سربراہ کراسٹائن لگارڈے نے کہا کہ آئی ایم ایف نے چین کے مالیاتی عمل انگیزی کی وجہ سے 2017 اور 2018میں اس کی اقتصادی صورتحال کو اپ گریڈ کیا ہے ۔