- الإعلانات -

ہفتہ رفتہ، رسد کیساتھ خریداری بڑھنے سے روئی کی قیمتوں میں اضافہ

کراچی: گزشتہ ہفتے کے دوران روئی کی قیمت میں اضافے کا رجحان برقرار رہا۔

ہفتہ وار رپورٹ کے مطابق مقامی کاٹن مارکیٹ میں ٹیکسٹائل اور اسپننگ ملوں کی جانب سے معیاری روئی کی خریداری اور پھٹی کی رسد بڑھنے کے باعث روئی کے بھاؤ میں تیزی کا رجحان جاری رہا۔

پاکستان کاٹن جنرز ایسوسی ایشن کے 15 اکتوبر تک روئی کی پیداوار کے جاری کردہ اعداد و شمار کے مطابق گزشتہ سال کے نسبت اس سال پیداوار میں 36 فیصد یا 16 لاکھ گانٹھوں کا اضافہ ہوا ہے، اس کے باوجود ٹیکسٹائل ملوں کی خریداری میں اضافہ دیکھنے میں آیا ہے، اس عرصے میں ملوں نے گزشتہ سال کے مقالے میں روئی کی11 لاکھ گانٹھیں زیادہ خریدی جس کی وجہ کپاس کا کم ہوتا معیار قرار دیا جارہا ہے۔

صوبہ سندھ میں روئی کا بھاؤ فی من 5600 سے 6300 روپے اور 40 کلو پھٹی کا بھاؤ 2600 سے 3050 روپے رہا جبکہ صوبہ پنجاب میں روئی کی فی من قیمت 6100 سے 6300 روپے اور پھٹی کے نرخ 2900 سے 3150 روپے ریکارڈ کیے گئے۔ بنولہ اور کھل کے بھاؤ میں بھی استحکام رہا۔

کراچی کاٹن ایسوسی ایشن کی اسپاٹ ریٹ کمیٹی نے روئی کی فی من قیمت میں 50 روپے کا اضافہ کرکے اسپاٹ ریٹ 6150 روپے پر بند کیا۔ کاٹن بروکرز فورم کے مطابق ٹیکسٹائل ملوں نے امریکا، برازیل، افریقہ اور وسط ایشیا سے روئی کی تقریبا 11 لاکھ گانٹھوں کے درآمدی معاہدے کرلیے ہیں۔