- الإعلانات -

بھارت کا جنگی جنون

بھارت پر جنگی جنون سوار ہے ۔ اےک طرف معصوم کشمےرےوں کو اپنے گھروں پرمقےد رکھا ہے اور دوسری طرف بھارتی فوج نے کنٹرول لائن پر بلا اشتعال فائرنگ اور گولہ باری کا سلسلہ بھی جاری رکھا ہے ۔ بھارت نے سےنکڑوں بار سےزز فائرنگ کی خلاف ورزی کی ہے ۔ بھارتی جارحانہ عزائم کے شکار نہتے افراد ہوتے ہےں ۔ بھارت ازل سے پڑوسی ملک پاکستان کی جڑےں کاٹنے پر محو ہے اور انھوں نے پاکستان کوناقابل تلافی گزند پہنچاےا ہے ۔ بھارت متعدد بار جارحےت کا ارتکاب کرچکا ہے ۔ پاکستان پر کئی مرتبہ ےلغار کرچکا ہے ۔ الحمد اللہ افواج پاکستان نے ہمےشہ منہ توڑ جواب دےا اور بھارت کو منہ کی کھانی پڑی ۔ منہ کی گئی جولوئی تو کےا کرے گا کوئی ۔ بھارت نے کئی بار آبی جارحےت بھی کی ۔ وہ اچانک درےاءوں مےں پانی چھوڑ تا رہا جس سے وطن عزےز مےں سےلاب آئے اورپاکستان کا جانی اور مالی نقصان ہوا ۔ پاکستان کے درےاءوں کو خشک کرنے کے لئے بھی مختلف حربے استعمال کررہا ہے اور ان پر ڈےم بھی بنارہاہے ۔ بھارت پاکستان کے خلاف مختلف ہتھکنڈے استعمال کررہا ہے اور پاکستان کو ہر محاذ پر نقصان پہنچنانے پر تلا ہوا ہے ۔ بلاشبہ پاکستان بھارت کو دن کے وقت بھی تارے دےکھا سکتا ہے ۔ پاکستان اےک اٹےمی ملک ہے ۔ افواج پاکستان دنےا کے بہترےن افواج مےں سے ہےں ۔ افواج پاکستان ہر جارحےت اور ہر ےلغار کا مقابلے کرنے کی سکت رکھتے ہےں ۔ پاکستانی نڈر اور دلےر قوم ہے ۔ پاکستان اےک مسلم ملک ہے ۔ مسلمان پڑوسےوں کے ساتھ اچھے روابط رکھتے ہےں لےکن ےہ مسلمانوں کی قطعی کمزوری نہ سمجھی جائے ۔ جنگ سے تباہی اور بربادی ہوتی ہے ۔ جنگ سے دونوں ممالک تباہ ہونگے ۔ اب رواےتی جنگ نہےں ہوگی بلکہ اب اٹےمی جنگ ہوگی ۔ جنرل ضےاء الحق مرحوم کے الفاظ آپ کو ےاد ہونگے کہ انھوں نے بھارتی وزےراعظم راجو گاندھی سے کہا تھا کہ

;3477;r;4682;ajeev! ;89;ou want to attak ;80;akistan,do it;46; ;66;ut keep in mind after this world will forget ;72;ilaku ;75;han and ;67;hangez ;75;han and will remember only ;90;ia -ul- ;72;aq and ;82;ajeev ;71;andhi;46; ;66;ecause this will not be conventional war but nuclear war;46; ;80;ossibly whole ;80;akistan might be destroyed in this war but muslims will be still there, however after destruction of ;73;ndia, ;72;induism will be vanished;4634;

بھارتی وزےراعظم نرےندر مودی کو ہوش کے ناخن لےنے چاہیےں ۔ کشمےرےوں کو تقرےباً اڑھائی ماہ سے اپنے گھروں میں مقےد رکھا ہے جوقابل مذمت ہے جبکہ عالمی مےڈےا اس پر خاموش ہے اور عالمی مےڈےا کو سانپ سونگھ گےا ہے ۔ کشمےرےوں پرظلم وستم پر عالمی مےڈےا کی خاموشی مجرمانہ غفلت ہے ۔ پاکستان اور بھارت دو اٹےمی ممالک ہیں ۔ اگر خدانخواستہ اٹےمی جنگ چھڑ گئی تو کوئی نہےں بچے گا اور پوری دنےا کو اس کے نتاءج بھگتنے پڑےں گے ۔ بھارتی وزےر اعظم نرنےدر مودی کو جاپان کا دورہ کرنا چاہیے اور ;34;ہےروشےما اور ناگا ساکی;34; کو دےکھنا چاہیے ۔ ان پر عےاں ہوجائے گا کہ اٹےم بموں کے اثرات کتنے بھےانک ہوتے ہےں ۔ جاپانی ان کو ےہ بھی بتا دےں گے کہ;34;من نہ کردم شما حذر بہ کُنےد;34; ۔ لہٰذا بھارتی حکمرانوں کوجنگ سے گرےز کرناچاہیے اور اپنے شہرےوں پر رحم کھانا چاہیے، ورنہ بھارتی عوام اپنے حکمرانوں کے خلاف اٹھ کھڑے ہوجائےں گے ۔ بھارتی عوام نے جنگوں کے لئے ووٹ نہےں دیے بلکہ غربت اور پسماندگی ختم کرنے کے لئے ووٹ دیے ہےں ۔ پاکستان اور بھارت دونوں ترقی پذےر ممالک ہےں ۔ ان ممالک کی ستر فی صد آبادی خط ِ غربت سے نےچے زےست بسر کررہی ہے ۔ پاکستان اور بھارت کے غرےب افراد جس عالم سے حےات گذار رہے ہےں ،وہ کسی سے پوشےدہ نہےں ہےں ۔ غرےب لوگ دووقت کے کھانے کے لئے ترس رہے ہےں ۔ بھارتی وزےر اعظم نرےندر مودی نے خود بھی غربت کو قرےب سے دےکھا ہے ۔ اگر پاکستانی وزےراعظم عمران خان نے خود غربت نہےں دےکھی لےکن بھارتی وزےر اعظم نرےندر مودی نے اس کا ذائقہ چکھاہے ۔ اس لئے بھارتی وزےراعظم کو جنگوں سے اجتناب بھرتناچاہیے ۔ جتنی انرجی جنگوں اور جتنی رقم گولہ بارود پر خرچ کررہے ہےں ۔ اگر اتنی توانائی اور رقم افلاس لوگوں پر صرف کرےں تو غربت مےں کمی آجائے گی ۔ ےہ رقم تعلےم پر خرچ کرنی چاہیے اور ےہی رقم صحت پر صرف کرنی چاہیے ۔ بھارت کو چاہیے کہ وہ پڑوسی ممالک کے ساتھ اچھے روابط رکھے ۔ پڑوسےوں کو تنگ کرنا اچھی بات نہےں ہے ۔ بلوچستان مےں دہشت گردی سے باز آجائے ۔ پڑوسےوں کے ساتھ تجارتی اوربہتر روابط رکھے ۔ کشمےرےوں کو جےنے کا حق دے ۔ قارئےن کرام!جنگوں سے ممالک کا حلےہ تک بگڑ جاتا ہے ۔ سووےت ےونےن جنگوں کی باعث بکھر گےا ۔ امرےکہ جنگوں کی باعث دےوالےہ ہونے کے قرےب ہے ۔ اس کے برعکس چےن نے جنگ و جدل سے پرہےز کےا اور آج چےن نے ہر مےدان مےں علم گاڑے ہےں ۔ بھارت کو ان ممالک سے سبق حاصل کرنا چاہیے ۔ بھارت اور پاکستان دونوں مل کر اپنے تمام مسائل کو بات چےت کے ذرےعے حل کرےں ۔ گولی کسی مسئلے کا حل نہےں ۔