- الإعلانات -

کپتان اگر چکری کا چکر کاٹ لےتے تو ۔ ۔ ۔ ۔ ۔ ۔

کوئی شرم ہوتی ہے کوئی حےا ہوتی ہے‘ آج خواجہ آصف کے الفاظ سے آغاز شہادت کرتے ہےں ‘ لاری اڈہ جےسا ماحول بنا دےاگےا ہے اےوانوں کا‘ کوئی بلاول بھٹو ہو‘ مراد سعےد ےا پٹےل سارے ہی ’’کمال‘‘ کرتے ہےں ۔ کوئی حدےں سرحدےں نہےں ہےں ، اپنے اپنے مفادات کی سرد جنگ جاری و ساری ہے ۔ کبڈی کے دنگل اور پہلوانوں کے اکھاڑے کے بھی کوئی اصول و ضوابط ہوتے ہوں گے کوئی حدوو قےود متعےن ہوتی ہوں گی لےکن ہمارے بالا و اعلیٰ اےوانوں کا کوئی حال ہی نہےں ہے ۔ غرےب عوام ووٹ دے کر انھےں چُنتے ہےں کہ ےہ ہماری بقاء بارے سوچےں گے ہماری بھلائی اور اچھائی کرےں گے لےکن ےہ عوامی نمائندے مثبت سوچتے ہےں نہ بھلائی بروئے کار لاتے ہےں بس تقرےرےں کرتے ہےں اور آپس مےں لڑتے جھگڑتے ہےں ۔ اس طرح تو پالےمان مضبوط ہو گا نہ جمہورےت ۔ کوئی اسلامی و معاشرتی و مشرقی اخلاقےات کا خےال ہے نہ ادب آداب نہ تکرےم و احترام اور بلاشبہ با ادب با مراد ہو کر منزلےں پالےتے ہےں جبکہ بے ادب بے مراد ناکام و ناشاد ہی رہتے ہےں ۔ صد افسوس کہ صاحبانِ سےاست اےک دوسرے کو اچھے ناموں سے نہےں پکارتے ۔ پنجاب کے شےر وزےر اعلیٰ شہباز شرےف کو ’’شوباز‘‘ بولا جاتا ہے تو دکھ ہوتا ہے کےونکہ انھوں نے مےرے پنجاب پوٹھوہار مےں بہت ہی بڑے ترقےاتی منصوبے مکمل کیے ہےں ۔ دوسرے صوبے ان پہ رشک کرتے تھے اور دعائےں مانگتے تھے کہ کاش ہمےں بھی شہباز شرےف جےسا کوئی وزےر اعلیٰ ملے ۔ کوئی شک و شبہ نہےں کہ شہباز شرےف بزدار کی طرح نہےں ہےں بلکہ اےک نامور وزےر اعلیٰ رہے ہےں لےکن سوالات تو اُٹھتے ہےں مزےد بھی اُٹھےں گے اور انھےں ہر سوال کا جواب بھی دےنا پڑے گا ۔ صدر ن لےگ مےاں شہباز شرےف کورٹ قاضےوں کو اور قوم کو بھی بتلائےں کہ 2000 ;247;ء مےں ان کی فےملی کے اثاثے 6 کروڑ تھے‘ 2009 ;247;ء مےں 68 کروڑ ہو گئے‘ 2018 ;247;ء تک ذاتی اکاءونٹ مےں رقم آتی رہی اور پھر ےہ رقم 417 ملےن کس طرح ہو گئی ۔ ;238; اس کے بعد ےہ رقم بہن‘ بھائی اور والدہ کے اکاءونٹ مےں کےسے آ گئی ۔ ;238; پائی ‘ دھےلے اور کوڑی کی بھی کرپشن نہ کرنے والے شہباز و حمزہ شہباز عوام خاص و عام تمام کو ڈنکے کی چوٹ پہ ےہ بتا کر سرخرو اور ’’امر‘‘ ہو جائےں کہ ان سارے پےسوں کا سورس کےاہے ۔ ;238; لےکن ستاروں سے آگے جہاں اور بھی ہےں ‘ ابھی عشق کے امتحان اور بھی ہےں ۔ کےونکہ ٹی وی جو ’’ٹر ٹر‘‘ ’’ٹی ٹی‘ ٹی ٹی‘‘ اور ’’ٹاں ٹاں ‘‘ کر رہے ہےں ۔ ٹائےں ٹائےں فش بالکل بھی نہےں ہو رہے ۔ خبر کے مطابق ٹی ٹی کےس سے ’’شرےفوں ‘‘ کے ٹانکے ڈھےلے ہونا شروع ہو گئے ہےں ۔ نےب نے اثاثہ جات کےس مےں کرپشن کے شواہد ملنے پر شہباز فےملی کے خلاف رےفرنس کی تےاری مکمل کرلی ہے‘ انھےں ٹی ٹےز کے ذرےعے ہونے والی منتقلی کے تےن سے چار ارب کے ثبوت حاصل ہو گئے ہےں ‘ ٹی ٹی کےس سٹےٹ بےنک سے ملنے والی اےس ٹی آر رپورٹ کی بنےاد پر ہی شروع کےا گےا ہے ۔ نےب ذراءع کے مطابق ٹی ٹی رےفرنس منظوری کےلئے نےب اسلام آباد بھجوا دےا گےا ہے ۔ چوہدری نثار علی خان بےمار ہےں ‘ پوٹھوہار دھرتی کا قےمتی سرماےہ بلکہ گوہرِ ناےاب و انمول ہےں ۔ پوٹھوہار کا شاعر ان کے بارے مےں خالص پٹھواری انگ رنگ مےں بولتا ہے کہ: ۔

بولن بول تے سراں تے تول دےندے

بولے صدق سنگ جنہاں نے بول ہوندے

چڑھ کے سولی وی کدی جو ڈولدے نئےں

عبد حق اُوہ ہےرے انمول ہوندے

گزشتہ دنوں پٹھوار کے پردھان چوہدری کا چہرہ دےکھا تو فکر مند ہو گےا کےونکہ مجھے ان کی صحت ٹھےک نہےں لگ رہی تھی ۔ ےا رب الارباب مےرا ےہ اندازہ غلط ہی ہو اور مےری نےک تمنائےں دلی دعائےں ان کے سنگ سنگ ہےں کہ اللہ الرحمن الرحےم انھےں صحت ِکاملہ شفائے عاجلہ عناےت فرمائےں ۔ مےرا اپنا ہی اےک اور شعر چوہدری نثار کی نذر ہے کہ: ۔

تو آس ہے کل کی اور اُمےد ہے آج کی

تُو عزت و عظمت ہے اس دےس و سماج کی

چوہدری نثار علی خان کی ےہ بات صد فےصد درست ہے کہ موجودہ صورت ِ حال سے نکلنے کےلئے سےاسی جماعتےں مذاکرات کرےں ۔ چوہدری نثار نے کہا کہ ’’اس وقت سب کو ملکی مسائل پر دھےان دےنا چاہیے‘ پاکستان مےں آج جو مسائل ہےں وہ پہلے کبھی نہ تھے ۔ سب سے بڑا مسئلہ سےاسی اور معاشی عدم استحکام ہے‘ مسائل کا حل دور دور تک نظر نہےں آ رہا اور مسائل کا حل تب تک ہی ممکن ہو گا جب تمام سےاسی جماعتےں اےک جگہ جمع ہو کر صرف اور صرف ملک و قوم کا سوچےں گی‘‘

بھوک پھرتی ہے مےرے دےس مےں ننگے پاءوں

رزق ظالم کی تجوری مےں چھُپا بےٹھا ہے

ہماری مائےں کوئی اےسا بچہ نہےں جنم دے سکتےں جو عالمی سامراج کا مقروض نہ ہو‘ پےارا پاکستان اس قدر ;737770; کے شکنجوں مےں جکڑا ہوا ہے ۔ ماےوسی دےس کی دہلےز پہ بال کھولے ماتم کناں ہے اور مہنگائی‘ غربت‘ بھوک ‘ بےروزگاری ‘ بے قراری غرےب عوام کو تڑپاتی ہے روز ستاتی ہے کےونکہ پےٹ بھی تو بھرنا ہے اور عوام کی قوت خرےد دم توڑ چکی ہے جبکہ کپتان فرماتے ہےں کہ گھبرانا بالکل بھی نہےں ہے ۔ معاشرتی بے حسی اور سماجی ناہموارےوں کا احساس و افلاس کا ےہ سچ ٹی وی سکرےنوں پر ننگا ناچ رہا ہے ۔ چوہدری نثار نے حالات ِ حاضرہ پر جو تبصرہ کےا ہے ےہ زمےنی حقائق ہےں اور عصری تقاضے بھی‘ ان حالات مےں سبھی سےاسی جماعتوں کو مل بےٹھ کر مذاکرات کرنے کا مشورہ بھی بجا ہے لےکن مشورے و مشاورت ےہاں مانتا کون ہے اور کپتان کو تو مشورہ دےنا اپنا مشورہ درےا برد کرنے کے مترادف ہے ۔ جب ;808473; مےں بھرتےاں زوروں پر تھےں ‘ چُن چُن کر قاف لےگئیے اور پپلیےلیے جا رہے تھے تب مےں نے کپتان کو مشورہ دےا تھا کہ پنڈی پٹھوہار کو فتح کرنا ہے تو پروےز اشرف کو پکڑ لےں اوراےک چکری کا چکر بھی کاٹ لےں اگر کسی طرےقے سے چوہدری نثار مان جاتے ہےں تو تحرےکِ انصاف کو استحکام ملے گا اور دوام بھی لےکن انھےں شاےد امےر ترےنوں اور ;658477; مشےنوں کی ضرورت تھی ۔ واقعی عمران خان اور تحرےکِ انصاف کو اگر چوہدری نثار جےسے 5 بارےک بےن اور زےرک و ذہےن‘ فکر وحکمت والے مدبر و دبنگ بندے مل جاتے تو تحرےکِ انصاف آج کی سب سے بڑی سےاسی حقےقت ہوتی اور حکومتی حالات و معاملات کبھی بھی اس طرح کے نہ ہوتے ۔ آج مےرے اور آپ کے وزےرِ اعظم جن ناتجربہ کاروں ‘ نا اہلوں اور نالائقوں کے نرغے مےں ہےں ےہاں سے باہر نکلنا آسان کھےل نہےں ہے ۔ اللہ حاکمِ برحق پےارے پاکستان اور اہلِ پاکستان کو قائم دائم آباد رکھے ۔ آمےن!