- الإعلانات -

وزےراعظم عمران خان اور خٹک بےلٹ

وزےراعظم پاکستان عمران خان نے 22سال قبل اپنی عملی سےاست کا آغاز انتخابی حلقہ میانوالی ون سے کیا تھا ۔ اس حلقے میں تحصےل عیسیٰ خیل واقع ہے ۔ تحصےل عیسیٰ خیل کے اےک طرف آب وتاب سے بہتا درےائے سندھ ہے جوکہ پاکستان کا سب سے بڑا درےا ہے جس میں چھوٹے بڑے بہت سے ندی نالے اور درےا شامل ہوتے ہیں جو صوبہ پنجاب ، صوبہ خےبر پختوانخواہ ، صوبہ بلوچستان اورصوبہ سندھ کے علاقے کے سےراب کرتا ہے لیکن مذکورہ درےا سے تحصےل عیسیٰ خیل کا اےک فی صد علاقہ بھی سےراب نہیں ہوتا ۔ سابق وزےراعظم بے نظےر بھٹو مرحومہ کے دور میں سابق اےم اےن اے حاجی عبےد اللہ خان شادی خیل کی خصوصی کاوشوں سے سنبل وال( جلالپور) کے قرےب سے درےائے سندھ سے تحصےل عیسیٰ خیل کےلئے نہر منظور ہوئی تھی اور اس پر کام شروع ہوگےا تھالیکن ان کی حکومت ختم ہوتی ہی منصوبے پر جاری کام بھی ہمیشہ کےلئے ٹھپ ہوگےا اور ےوں وہ اہم منصوبہ سےاست کی نذر ہوگےا ۔ تحصےل عیسیٰ خیل کے دوسری طرف بلند وبالا پہاڑ ہیں جو نمک، لوہا، کوئلہ،جپسم، ےورنےم ، گےس ، تےل سمےت مختلف معدنےات سے مالا مال ہیں لیکن اس معدنی دولت سے اجتماعی فائدے کے لحاظ سے تحصےل عیسیٰ خیل محروم ہے ۔ گوکہ تحصےل عیسیٰ خیل کے اس معدنےات سے دوسرے علاقے کے لوگ ،پڑوسی ملک بھارت سمےت دےگر ممالک مستفےد ہورہے ہیں لیکن مقامی لوگوں کے نصےب میں کچھ نہیں ہے ۔ ان معدنےات کی رائےلٹی کے رقوم عملی طور پرکہاں خرچ ہورہی ہےں ےا نہیں ہورہی ہےں ;238;ےہ اےک علیحدہ باب ہے ۔ تحصےل عیسیٰ خیل کی13 ےونےن کونسل ہیں جس میں ٹولہ بانگی خیل،تبی سر،چاپری، ونجاری اورسلطان خیل خٹک بےلٹ کے ےونےن کونسل ہیں ۔ ےونےن کونسل کوٹ چاندنہ میں 80فیصد جبکہ مےونسپل کمیٹی کالاباغ کی تقرےباً40فی صد آبادی خٹک افراد پر مشتمل ہے ۔ خٹک بےلٹ کے زےادہ تر مرد حضرات افواج پاکستان اور دےگر سےکورٹی اداروں میں سروس کرتے ہیں لیکن سےکورٹی اداروں میں دھےرے دھےرے ملازمت کا ےہ باب بھی بند ہورہا ہے ۔ اےف سی میں بانگی خیل خٹک کا مخصوص کوٹہ ہوتا تھا لیکن اب وہ کوٹہ ختم کردےا گےا ہے ۔ وطن عزےز پاکستان کےلئے خٹک بےلٹ کے افراد نے لازوال قربانےاں دی ہیں اور مختلف جنگوں میں شہادت کے عظےم درجے پر فائز رہے جس پر ان شہدا کے والدےن اور سب لوگ فخر کرتے ہیں ۔ حالیہ دہشت گردی کی جنگ میں خٹک بےلٹ کے جوان سب سے نماےاں رہے اور اس کا ثبوت ان کے قبرستانوں میں لہراتے ہوئے سبز ہلالی پرچم ہیں ۔ اگر آپ سےاسی خدمات دےکھےں تو پھر بھی خٹک بےلٹ کے افراد کسی سے پیچھے نہیں رہے ۔ عمران خان نے 126 دنوں کا ملک کی تارےخ کا طوےل دھرنا دےا ،اس میں خٹک بےلٹ کے افراد نے اپنا حصہ شامل کیا ۔ ازل سے پاکستان تحرےک انصاف اور عمران خان کا ہر دور اور ہر حال میں ساتھ دےا ۔ سےاسی جدوجہد میں خٹک بےلٹ کے افراد کو مختلف مسائل اور صعوبتوں کا سامنا رہا لیکن ےہ معصمم ارادے اور چٹان کی طرح ڈٹے رہے ۔ خزاں میں خٹک بےلٹ کے افراد پیش پیش تھے لیکن جب بہار کا موسم آےا تو خٹک بےلٹ کے افراد کو فراموش کردےا گےا ۔ ماڈل وےلج میں خٹک بےلٹ کے کسی گاءوں کو بھی شامل نہیں کیا گےا ۔ پارٹی کے اہم عہدے (صدر اور جنرل سےکرٹری) میں ضلعی اور تحصےل لیول پر خٹک بےلٹ کے کسی پشتون کو اس قابل نہیں سمجھا گےاحالانکہ اول دن سے پارٹی کےلئے سب سے زےادہ قربانےاں ان پشتونوں نے دےں ۔ پارٹی انصاف کے نام پر ہے تو خٹک بےلٹ کے باسےوں کے ساتھ انصاف ہونا چاہیے ۔ اگر آپ خٹک بےلٹ پر طائرانہ نظر دوڑائےں تو آپ کو خٹک بےلٹ مسائلستان نظر آئے گا اور ان لوگوں کا کوئی پرسان حال نہیں ہے ۔ ےہ صوبہ پنجاب کا علاقہ ہے اورپنجاب کے وزےراعلیٰ سردار عثمان احمد خان بزدار ہیں لیکن وزےراعلیٰ پنجاب سردار عثمان احمد خان بزدار اپنے آپ کو صرف تونسہ شرےف کا تحصےل ناظم سمجھ رہے ہےں ۔ ان کی ترجےحات تونسہ شرےف تک محدود ہیں ۔ وزےراعظم کے آبائی حلقے کو نظر انداز کررہے ہےں حالانکہ وزےراعظم عمران خان کا آبائی حلقہ سب سے زےادہ پسماندہ ہے اور اس علاقے خٹک بےلٹ میں انسان اور حےوان اےک جوہڑ سے پانی پےتے ہیں ۔ 90فی صد دےہات پختہ رابطہ سڑکوں سے محروم ہیں ۔ لوگوں کو مرےضوں ہسپتال اور مےتوں کو قبرستان لے جاتے ہوئے سخت تکلیف اور مشکلات کا سامنا کرنا پڑتا ہے ۔ انسانی ہمدردی کی بنےاد پر بھی ضلع میانوالی کے خٹک بےلٹ خصوصاً ےونےن کونسل تبی سر اور ےونےن کونسل ٹولہ بانگی خیل کی طرف توجہ دےنی چاہیے ۔ وزےراعلیٰ پنجاب سردارعثمان احمد خان بزدار کو چاہیے کہ وہ وزےراعظم عمران خان کے آبائی حلقہ خصوصاً خٹک بےلٹ میں باربار دورے کرےں لیکن دوسالوں میں دور ہ تو دور کی بات ہے، انھوں نے ابھی تک خٹک بےلٹ کے بارے میں معلوم کرنے کی کوشش بھی نہیں کی ہے ۔ عمران خان نے وزےراعظم کا قلمدان سنبھالنے کے بعد اےن اے95 کا دورہ نہیں کیا ہے اور خٹک بےلٹ میں انتخابی مہم کے دوران بھی نہیں گئے تھے ۔ وزےراعظم عمران خان کو اچھی طرح معلوم ہے کہ ان کے آبائی حلقہ اےن اے 95 میں خٹک بےلٹ انتہائی پسماندہ علاقہ ہے ۔ وزےراعظم اس علاقے میں ذاتی دلچسپی لیں اور علاقے کے مسائل حل کرنے کی سعی کرےں ۔ کالاباغ شکردرہ روڈ کو کارپٹ بنائےں ۔ ےونےن کونسل تبی سر اور ےونےن کونسل ٹولہ بانگی خیل کے90فیصد دےہات پختہ رابطہ سڑکوں سے محروم ہیں ۔ گاءوں روغان سمےت تمام دےہاتوں کےلئے رابطہ سڑکیں بنائےں ۔ خٹک بےلٹ کے دےہاتوں کےلئے پینے کا صاف پانی فراہم کرےں ۔ ےونےن کونسل چاپری ، سلطان خیل ،ونجاری کو درےائے سندھ سے اےرےگےشن سسٹم کے ذرےعے پانی فراہم کرےں ۔ اسی طرح ےونےن کونسل تبی سر، ےونےن کونسل ٹولہ بانگی خیل اورےونےن کونسل کوٹ چاندنہ کو بھی پانی فراہم کرےں ۔ خٹک بےلٹ میں بوائز اور گرلز ڈگری کالج قائم کرےں ۔ خٹک بےلٹ میں ٹےکنکل کالج قائم کرےں ۔ معدنیات کی رائےلٹی کی رقوم براہ راست خٹک بےلٹ پرخرچ کرنے کے احکامات صادر فرمائےں ۔ اےف سی بھرتی میں بانگی خیل خٹک کا کوٹہ بحال کرائےں ۔ خٹک بےلٹ کے پہاڑ زےتون کے پودوں کےلئے موزوں ہےں ، حکومت اور مقامی افراد اس علاقے میں زےتون کے پودے لگا کر قےمتی زرمبادلہ بچا جاسکتے ہےں اور لوگوں کے آمدن میں اضافہ ہوسکتا ہے ۔ تحصےل عیسیٰ خیل کےلئے درےائے سندھ سے نہر ، مےڈےکل اور انجینئرنگ کالج اور صنعتی زون قائم کرےں ۔ کالاباغ ، باباکجھوروفقےر اےرےا (روغان ) اور طور گھڑی (کمرسر)کو سےاحتی مقام کا درجہ دےں ۔ وزےراعظم عمران خان صاحب !خٹک بےلٹ اور تحصےل عیسیٰ خیل کے مسائل ترجےجی بنےادوں پر حل کرےں ۔ اس حلقے سے وزےراعظم ہونے کے باوجودمسائل حل نہ ہوں تو پھر ان کے مسائل کب حل ہونگے;238;