- الإعلانات -

شبلی فراز اور عاصم سےلم باجوہ ۔ ۔ ۔ !

پاکستان تحرےک انصاف حکومت نے سےنٹر شبلی فراز کو وفاقی وزےراطلاعات اور جنرل (ر) عاصم سےلم باجوہ کو وزےراعظم کا معاون خصوصی برائے اطلاعات مقرر کیا ہے جبکہ محترمہ ڈاکٹر فردوس عاشق اعوان کی چھٹی کردی ہے ۔ محترمہ ڈاکٹر فردوس عاشق اعوان نے جتنا کام کیا ہے،اچھا کیا ہے بہرحال جو آتا ہے ،وہ جاتا ہے، ےہ دنےا کا دستور ہے ۔ احمد فراز کا شعر ہے ۔

;34; مزاج ہم سے زےادہ جدا نہ تھا اس کا

جب اپنے طور ےہی تھے تو کیا گلہ اس کا;34;

اطلاعات و نشرےات اہم وزارت ہے ، اسلیے وزےراعظم عمران خان اس میں تگڑی ٹےم لے آئے ہیں ۔ وفاقی وزےراطلاعات سنےٹر شبلی فراز اور معاون خصوصی برائے اطلاعات جنرل(ر)عاصم سےلم باجوہ کی تعےناتی خوش آئند ہے اور ان کو میں مبارکباد پیش کرتا ہوں اور ان کی کامیابی و کامرانی کےلئے دعاگو ہیں ۔ اس فےلڈ میں وہی شخص حقےقی معنی میں کامےاب ہوتا ہے جو مختصر اور بامعانی الفاظ استعمال کرتا ہو ۔ حکومت اور رےاست کی درست انداز سے ترجمانی کرسکتاہو ۔ بقول احمد فراز

;34;گفتگو اچھی لگی ،ذوق نظر اچھا لگا

مدتوں کے بعد کوئی ہم سفر اچھا لگا;34;

موجودہ اور سابقہ حکومتوں میں بھی بعض اےسے وزراء ہیں اور رہے ہیں جو غےر ضروری طور پر بولتے ہیں ۔ ان کی غےر دانشمندانہ گفتگو وزےراعظم اور حکومت کےلئے پرےشانی کا موجب بنتی رہی ہے ۔ کوئی بھی شخص ےا وزےرطوےل گفتگو کرنے کی سعی کرتا ہے تو ان سے غلطی کے امکانات پیدا ہوتے ہیں ۔ جوشخص مختصر ، مناسب الفاظ اور شائستہ انداز میں گفتگو کرتا ہے تو وہ لوگوں کے دل جےت لیتا ہے ۔ اگر خدانخواستہ معاملہ اس کے برعکس ہو تو اس سے دورےاں پیدا ہوتی ہیں اور کدراتوں کا امکان رہتا ہے ۔ حکومت اور عوام میں خلیج پیدا ہوتاہے ۔ عوام اور حکمران طبقے میں فاصلے بعےد ہونگے تو اس کا نقصان نہ صرف حکومت کا ہوتا ہے بلکہ اس سے رےاست کے نقصان کا اندےشہ بھی ہوتا ہے ۔ اسی طرح حکومت اور اپوزےشن کے درمیان بھی خوشگوار تعلقات ہونے چاہیےں کیونکہ خوشگوار تعلقات سے سنجیدہ معاملات خوش اسلوبی سے حل ہوجاتے ہیں ۔ اپوزےشن کا حق ہوتا ہے کہ وہ حکومت پرتنقےد برائے اصلاح کرے لیکن حکومت اس کو ناپسند کرے تو ےہ بھی کسی لحاظ سے مناسب نہیں ہے ۔ رےاستی امور کو چلانے کےلئے حکومت اوراپوزےشن پر اہم ذمہ دارےاں عائد ہوتی ہیں ۔ اس کےلئے ضروری ہے کہ حکومت اور اپوزےشن کے درمےان فاصلے زےادہ نہ ہو ں اور نہ ہی تعلقات کشےدہ ہوں ۔ وزارت اطلاعات و نشرےات حکومت ،اپوزےشن اور عوام کے درمےان پل کا کردار ادا کرتا ہے ، اس لئے ےہ پل مضبوط ہونا چاہیے ۔ اس پل کی تعمےر میں کرپشن نہیں ہونی چاہیے اور اس پل میں ناقص مےٹرےل قطعی استعمال نہیں ہونا چاہیے ۔ اسلیے وزارت اطلاعات و نشرےات کی معمولی غلطی سے بھی مسائل پیدا ہوتے ہےں اور اےک نکتہ سے محرم سے مجرم والا معاملہ پیدا ہوجاتا ہے ۔ بحر حال وزےر اعظم عمران خان نے وزارت اطلاعات و نشرےات میں بڑی اہم تبدےلیاں کی ہےں جو قابل تحسےن ہیں ۔ وفاقی وزےراطلاعات سنےٹر شبلی فراز اور معاون خصوصی برائے اطلاعات جنرل(ر)عاصم سےلم باجوہ دونوں منجھے اور سلجھے ہوئے ہیں ۔ نشےب و فراز سے آگاہ ہیں اور الفاظ کے استعمال وترتےب کے امور سے بھی واقف ہیں ۔ وفاقی وزےراطلاعات سےنٹر شبلی فراز اےک معروف شاعر احمد فراز کے صاحب زادے ہیں ۔ شعرا ء کرام اپنے الفاظ کے استعمال ، چناءو اورخیالات کی وجہ سے لوگوں کے دلوں میں زندہ وجاوےد رہتے ہیں ۔ شعراء کرام تخلیق کار ہوتے ہیں اور بہترےن تصورات کے مالک ہوتے ہیں ۔ علاوہ ازےں صحبت کا بھی بڑا اثر ہوتا ہے ۔ جوپھولوں کے ساتھ رہتا ہے ،وہ ان کی مہک سے معطر ہوجاتا ہے ۔ ےقےنا وفاقی وزےر اطلاعات و نشرےات سےنٹر شبلی فراز اپنے والداحمد فراز کی قربت سے مستفےد ہوئے ہونگے اور ان سے فےض حاصل کیا ہوگا ۔ قوی امید ہے کہ وہ اپنی عوام کوبھی اس درےاسے سےراب کرےں گے اور لوگوں کے دلوں کو جےتنے میں کامران ہونگے ۔

;34;جس کو بھی چاہا ،اسے شدت سے چاہا ہے فراز

سلسلہ ٹوٹا نہیں ہے درد کی زنجےر کا;34;

معاون خصوصی برائے اطلاعات جنرل(ر)عاصم سےلم باجوہ آئی اےس پی آر کے ڈائرےکٹرجنرل رہ چکے ہیں اور وسےع تجربے کے مالک ہیں ۔ افواج پاکستان سے سب کو پیار ہے اور لوگوں کی دلوں میں افواج پاکستان کا احترام ہے ۔ افواج پاکستان نے ہر مشکل گھڑی میں عوام کی مدد کی ہے ۔ افواج پاکستان نے ہر محاذ پر تارےخ رقم کی ہے اور لازوال قربانےاں دی ہیں جوکہ ناقابل فراموش ہےں ۔ آئی اےس پی آرنے ہمیشہ دشمن کے الفاظی وار کا بھی بھرپور جواب دےا ہے اور دشمن کو ہر مےدان میں شکست سے دوچار کیا ۔ عےار دشمن کے ہر پروپیگنڈے کو ناکام کیا ۔ دشمن نے بھی آئی اےس پی آر کے بہترےن کام کو تسلےم کیا ۔ جنرل(ر)عاصم سےلم باجوہ سی پیک پراجےکٹس کو احسن طرےقے سے پائے تکمیل کو پہنچا رہے ہےں اور اب ساتھ ہی وزےراعظم کا ان کو معاون خصوصی برائے اطلاعات مقررکرنا ان کی قابلیت اور اہلیت کا منہ بولتا ثبوت ہے ۔ امید ہے کہ جس طرح انھوں نے سی پیک پراجےکٹس اورآئی اےس پی آر میں شاندار خدمات سرانجام دی ہیں اور اسی طرح وزارت اطلاعات ونشرےات میں مثالی کارکردگی کا مظاہرہ کرےں گے ۔ علاوہ ازےں قوی امید ہے کہ وفاقی وزےراطلاعات سنےٹر شبلی فراز اور معاون خصوصی برائے اطلاعات جنرل(ر)عاصم سےلم باجوہ وزارت اطلاعات ونشرےات کو منفرد اور نماےاں انداز سے چلائےں گے ۔ اس ادارے کےلئے اہم اقدامات اٹھائےں ۔ پرنٹ اور الیکٹرانک مےڈےاکے مسائل حل کرےنگے ۔ قومی اور لوکل اخبارات کے اشتہارات کے کوٹے میں اضافہ کرےنگے ۔ مےڈےا کے ورکرز اور قلم کے مزدوروں کےلئے بھی پراجےکٹس لائےنگے ۔ سفےد پوش صحافےوں کی مالی معاونت کرےنگے اور ہر شعبے میں صحافےوں کے بچوں کےلئے کوٹہ مخصوص کرےں گے ۔ صحافےوں کےلئے ای او بی آئی ےا بڑھاپا الاوئنس کا اجرا کرےنگے تاکہ صحافیوں کی زےست کے آخری اےام سکون سے گزر سکیں ۔ وزےراعظم عمران خان اورمیڈےا کے درمیان خلیج ختم کرےں گے ۔ حکومت اور مےڈےا کے درمیان خوشگوار تعلقات استوار کرےں گے،انشاء اللہ العزےز ۔