- الإعلانات -

’را ‘کے سہولت کار پھر ناکام

سپہ سالار نے کہا ہے کہ ہم اپنی پرعزم قوم کی حمایت کے ساتھ محنت اور شہدا کی قربانیوں کی بدولت حاصل کئے گئے امن کوعدم استحکام سے دو چار کرنے کے دشمن کے ناپاک عزائم کو ناکام بنائیں گے ۔ انہوں نے پاکستان سٹاک ایکسچینج پر دہشتگردوں کے حملے میں شہادت کا رتبہ پانے والے سکیورٹی گارڈز کو شاندار الفاظ میں خراج عقیدت پیش کرتے ہوئے ان خیالات کا اظہار کیا ۔ اسی تناظر میں عسکری ترجمان نے مزید کہا کہ ملک میں دیرپا امن شہدا کی قربانیوں سے آیا ۔ سکیورٹی گارڈز نے اپنی جان قربان کرکے دہشتگردوں کو اندر داخل ہونے سے روکا اور دہشت گردی کی ایک بڑی کوشش کو ناکام بنایا ، انشا اللہ دشمن امن کو خراب کرنے کی کوششوں میں ناکام رہے گا ۔ آرمی چیف نے مادر وطن کی حفاظت کیلئے ایک بار پھر اپنے عزم کو دہراتے ہوئے کہا کہ شہدا کی قربانیوں سے حاصل امن اور استحکام کو خراب نہیں ہونے دیا جائے گا ۔ انہوں نے قانون نافذ کرنےوالے اداروں کی تعریف کرتے ہوئے کہا کہ رینجرز اور سندھ پولیس نے دہشتگردوں کے خلاف سرعت سے اور موثر و مربوط کارروائی کی جو ہر اعتبار سے لائق تحسین ہے ۔ قانون نافذ کرنےوالے اداروں نے بروقت کارروائی کرکے مختصر وقت میں دہشت گردوں کا خاتمہ کیا ۔ اسی پس منظر میں ان کا مزیدکہنا تھا کہ ہم اپنی پرعزم قوم کی حمایت سے دہشت گردوں کی ان تمام کوششوں کو ناکام بنا دیں گے ۔ گزشتہ روز دہشتگردی کی واردات کو قانون نافذ کرنے والے اداروں نے جس موثر ڈھنگ سے ناکام بنایا ،بجا طور اس کا اعتراف پوری دنیا میں کیا جا رہا ہے ۔ دوسری جانب کراچی میں سٹاک ایکسچینج پر ہوئے حملے اور پاکستان میں دہشتگردی کی نئی لہر کو کر کے بھارتی میڈیا میں ایک نیا پراپیگنڈہ دیکھنے میں آ رہا ہے ۔ تمام ہندی اخبارات کے اداریے، سندھ کی ایک لسانی جماعت کے لندن میں مقیم بانی اور نام نہاد بلوچستان لبریشن آرمی کی شان میں قصیدہ گوئی میں مصروف ہیں ۔ بھارتی سیاستدانوں کی طرف سے بھی بھارت چین کشیدگی اور مقبوضہ کشمیر کی تحریک آزادی سے دھیان ہٹانے کیلئے پاکستان کے داخلی معاملات پر تبصرے جاری ہیں ۔ اس کی وجہ یہ ہے کہ اس وقت مودی سرکار کی مقبولیت شدید خطرے سے دوچار ہے، لداخ کے مقام پر چینی فوج کے ہاتھوں ہزیمت، نیپال کی بھارتی سرحد پر فوج کی تعیناتی اور مقبوضہ کشمیر میں مزید فعال ہوتی تحریک آزادی نے مودی سرکار کی مقبولیت کا گراف تیزی سے متاثر کیا ہے ۔ بھارتی خفیہ ایجنسیوں کو یہ بھی معلوم ہے کہ برہان وانی کی برسی اور آرٹیکل 370 کے خاتمہ کے ایک سال مکمل ہونے سے قبل مقبوضہ کشمیر میں مظاہرے انتہائی متشدد رخ اختیار کر سکتے ہیں اور اتنی بڑی تعداد میں تعینات فوج بھی وادی کے حریت پسندوں کو دبانے میں بھی مکمل طور پر ناکام رہی ہے ۔ عالمی برادری کی توجہ دوسری طرف کرنے کیلئے بھارت کو اب ایک ایسے مُدّے کی تلاش ہے جسے بنیاد بنا کر اپنی کارکردگی شو کی جا سکے، اسی لئے تمام بھارتی میڈیا کو بھارتی خفیہ ایجنسیوں کی جانب سے، پاکستان میں دہشتگردی کے حوالے سے ایک نئی پراپیگنڈہ مہم شروع کرنے کی ہدایت جاری کی گئی ہے ۔ اس شر انگیز ترکیب کا ماسٹر مائنڈ بھارتی نیشنل سیکورٹی ایڈوائزر اجیت ڈووال کو بتایا جا رہا ہے، بھارت میڈیا اس پراپیگنڈہ میں بھی مصروف ہے کہ آنے والے دنوں میں پاکستان میں دہشتگردی مزید زور پکڑے گی، اس سے بھی مودی سرکار کے عزائم کو بخوبی بھانپا جا سکتا ہے ۔ بھارتی ہندی اخبارات نو بھارت ٹائمز، دینک جاگرن، دینک بھاسکر، امر اجالا و دیگر میں سندھ کی ایک لسانی جماعت کے لندن میں مقیم بانی اور نام نہاد بلوچستان نیشنل آرمی کی شان میں طویل قصیدے تحریر کئے گئے ہیں اور کراچی میں سٹاک ایکسچینج پر ہوئے حملے کو بھی ایک مخصوص رنگ دیا جا رہا ہے ۔ اسی تناظر میں سیاسی اور سفارتی مبصرین نے رائے ظاہر کی ہے کہ بلاشبہ دہشت گردوں کی کمر بڑی حد تک توڑ ی جا چکی ہے تاہم انکی باقیات پھر سے منظم ہونے کیلئے کوشاں نظر آتی ہیں ۔ سبھی جانتے ہےں کہ پاک فوج اور قوم نے دہشت گردی کے خاتمے کیلئے بڑی قربانیاں دی ہیں ۔ اب ضرورت اس امر کی ہے کہ دہشت گردوں کو کسی صورت منظم نہ ہونے دیا جائے ۔ دہشت گردوں ہی کی طرح انکے سہولت کار بھی خطرناک ہیں کیوں کہ سہولت کاروں کی مدد کے بغیر دہشت گردی نہیں ہو سکتی ۔ دونوں کے قلع قمع کی ضرورت ہے ۔ ماہرین نے اس ضمن میں مزید کہا کہ اس کیلئے نیشنل ایکشن پلان موجود ہے‘ اس میں کسی تبدیلی و ترمیم کی ضرورت ہے تو ضرور کرلی جائے ۔ عام پاکستانیوں کو ایک بار پھر خبردار ہونا ہوگا کہ وہ اپنے گرد وپیش پر نظر رکھیں کہ کوئی مشکوک شخص تو موجود نہیں ‘ مشکوک قسم کی سرگرمیاں تو نہیں ہورہیں ۔ بادی النظر میں اس دہشت گردی کا مقصد پاکستان کی معیشت کو بڑا دھچکا لگانا یا تباہ کرنا بھی ہوسکتا ہے جس کے پیچھے ہمارے ازلی دشمن بھارت کی سازشوں کو نظرانداز ہرگز نہیں کرنا چاہیے ۔