- الإعلانات -

’’قرآن ایک مسلسل معجزہ‘‘

انسان اور کتاب کا ساتھ چولی اور دامن کےساتھ کی طرح رہا ہے لیکن برُا ہو جدت اور ٹیکنالوجی کا کہ اس نے انسان کو کتاب سے دور کرنا شروع کر دیا ہے ،خصوصاً حالیہ عشرہ میں تویہ صورتحال تشویش کی حد تک خراب ہو چلی ہے ۔ صرف کتب بینی متروک نہیں ہو رہی کتابوں کی اشاعت بھی زوال پذیر ہے ۔ 20کروڑ سے زائد ;200;بادی والے ملک میں اب سالانہ اوسطاً 2500 یا اس سے بھی کم نئی کتب شاءع ہوتی ہیں یعنی ہر ;200;ٹھ دس ہزار افراد کے لئے صرف ایک کتاب جبکہ یورپ خصوصاً سکینڈے نیوین ممالک میں یہ شرح پانچ سو افراد کےلئے ایک کتاب ہے ۔ اس کی کئی وجوہات میں سے ایک وجہ کتاب کا مہنگا ہونا اور شرح خواندگی بھی ہے ۔ اس میں دو رائے نہیں کہ کتب بینی ;200;جکل قصہَ پارینہ ہی بنتی جا رہی ہے مگر اس کے باوجود کتاب کی اہمیت نہ کم ہوئی ہے اور نہ اسے کم کیا جا سکتا ہے ۔ یہی وجہ ہے کہ اس گئے گزرے دور میں بھی کتب کی اشاعت کا سلسلہ نہیں رکا اور ہر سال نئی کتب کا اضافہ ضرور ہو رہا ہے،چاہے کم ہی سہی تاہم با معنی اور تحقیقی کتب منظر عام پر ;200;رہی ہیں ۔ ان ہی تحقیقی کتب میں سے ایک اہم کتاب ;84;he ;72;oly ;81;uran ;65; ;67;ontinuous ;77;iracle جناب ریاض احمد چوہدری صاحب نے مطالعہ کےلئے لاہور سے بھجوائی ہے جو رواں سال میں شاءع ہونے والی اہم کتابوں میں سے ایک ہے ۔

ریاض احمد چوہدری صاحب سے برسوں کی یادِ اللہ ہے ۔ روزنامہ پاکستان کےلئے وہ کئی سال سے لکھ رہے ہیں ،یہی سلسلہ ان سے رابطے کا باعث بھی ہے ۔ پیرانہ سالی میں بھی وہ جوانوں کی طرح متحرک ہیں ۔ صرف کالم نویسی ہی نہیں کرتے بلکہ بزم اقبال لاہور کے ڈائریکٹر اور سیکرٹری بھی ہیں ۔ مذکورہ کتاب اسی ادارے نے ریاض احمد چوہدری کی نگرانی میں شاءع کی ہے ۔ قیام پاکستان کے بعد جہاں نئی مملکت کی تعمیر و ترقی کےلئے نئے اداروں نے کام شروع کیا وہاں ذہنی و فکری کاشوں کو جِلا بخشنے کےلئے بھی اداروں کا قیام بھی عمل میں لایا گیا ۔ اسی سلسلے کا ایک ادارہ لاہور میں بزمِ اقبال کے نام سے قائم ہے ۔ جسکی ذمہ داری فکر اقبال کا فروغ اور ان کی تصنیفات سے دنیا کو ;200;گاہ کرنا ہے ۔ اس حوالے سے اب تک درجنوں کتب کی اشاعت کی جا چکی ہے ۔ اس کے علاوہ بھی اس کے کریڈٹ پر کئی کتب ہیں ۔ جیسے نامور سکالر پروفیسر ڈاکٹر محمد اکرم چوہدری کی تصنیف کردہ ;84;he ;72;oly ;81;uran ;65; ;67;ontinuous miracle ہے ۔

اکرم چوہدری صاحب کے بارے میں کتاب کے فلیپ پر جو مختصر تعارف لکھا ہے اس کے مطابق انہوں نے گلاسکو یونیورسٹی امریکہ سے پی ایچ ڈی کی ، پنجاب یونیورسٹی میں بطور پروفیسر کام کیا اورسرگودھا یونیورسٹی کے وائس چانسلر رہے ۔ اسکے علاوہ امریکہ کی دو یونیورسٹیوں میں پڑھایا اور فل براءٹ فیلو تھے ۔ ڈاکٹر اکرم چوہدری کا انگریزی عربی اور اردو میں بہت سا کام چھپ چکا ہے ۔ انکی مذکورہ تصنیف کل تیرہ ابواب پر مشتمل ہے ۔ کتاب جیسا کہ نام سے ظاہر ہے کا بنیادی مقصد قر;200;ن کریم کے معجزاتی پہلو کو نمایاں کرنا ہے ۔ دنیا کی تمام زبانیں اور اس کے الفاظ زمانی تغیر و تبدل کی زد میں رہتے ہیں اور انکے معانی و مطالب بدلتے رہتے ہیں جبکہ یہ ایک زندہ حقیقت ہے کہ قر;200;ن کریم واحد کتاب ہے جسکے ہر ہر لفظ کے معانی و مفاہیم صدیاں بیت جانے کے باوجود بالکل نہیں بدلے ۔ قر;200;ن مجید کے اس معجزاتی پہلو پر ;200;ج تک کسی کی نظر نہیں پڑی ۔ یہ سعادت ڈاکٹر اکرام چوہدری صاحب کے حصے میں ;200;ئی کہ وہ پہلی بار اس پہلو کو اس کتاب میں سامنے لے کر ;200;ئے ۔ کتاب کا چھٹا باب اسی نادر پہلو کےلئے مختص ہے ۔ مذکورہ کتاب پر ڈاکٹر قدیر خان نے بھی چند روز قبل اپنے کالم میں اظہار خیال کیا ہے ۔ ٖڈاکٹر صاحب لکھتے ہیں کہ ’’یہ حیران کن بات ہے کہ قر;200;نی ;200;یات کا ایک بٹہ پانچ حصہ قوانین فطرت کے متنوع پہلووَں پر مشتمل ہے ۔ جو شخص ان قوانین فطرت سے واقف نہیں یا اس حوالے سے جدید علمی پیش رفتوں سے بھرپور ;200;گاہی نہیں رکھتا وہ قر;200;ن کریم کی ایسی ;200;یات کے ترجمہ و تفسیر کا حق ادا نہیں کر سکتا ۔ کتاب اس حوالے سے بھی ایک جامع اساس فراہم کرتی ہے ۔ چنانچہ کتاب کا گیارہواں باب قوانین فطرت کامطالعہ قر;200;ن کریم کی روشنی میں پیش کرتا ہے ۔ واضح رہے کہ موضوع کی اہمیت کے پیش نظر یہ باب کتاب کا سب سے بڑا باب ہے جو چودہ کے قریب ذیلی فصول پر مشتمل ہے ۔ مجھے یقین کامل ہے کہ ڈاکٹر صاحب کی یہ کاوش نہ صرف قر;200;نی مطالعے کے حوالے سے اہم اضافہ ہوگی بلکہ جدید ذہن کے علمی و سائنسی سوالوں کا موثر جواب بھی بنے گی، نیز قر;200;ن کریم کے الوہی کردار کے اثبات کے ضمن میں بطور ایک حوالہ جاتی کتاب ثابت ہوگی ۔ علمی حلقوں میں کتاب کی وسیع پیمانے پر پذیرائی اور اصرار پر ڈاکٹر صاحب کتاب کے اردو ترجمہ پر کام کر رہے ہیں ،امید واثق کہ یہ ستمبر 2020 کے ;200;خر تک اردو میں بھی دستیاب ہوگی ۔ ان شا اللہ ۔ اللہ پاک ڈاکٹر محمد اکرم چوہدری کو اور بزم اقبال کی انتظامیہ کو اس کاوش پر اجرعظیم عطا فرمائے ;200;مین‘‘ ۔

پوری کتاب نہایت دیدہ زیب گیٹ اَپ میں شاءع کی گئی ہے اور336صفحات پرمشتمل اس کتاب کی قیمت ;200;ٹھ سو روپے رکھی گئی ہے ۔ اس کی اشاعت ِاول دو ماہ قبل جولائی میں ہوئی ہے،قرآنی علوم پر کام کرنے والوں کےلئے بلاشبہ یہ ایک نادر ذخیرہ ہے ۔ ہماری دعا ہے کہ