- الإعلانات -

دہشت گردی کے افسوسناک واقعات

شمالی وزیرستان کے علاقے رزمک میں فوجی قافلہ پر دہشت گردوں نے حملہ کر دیا ۔ جس کے نتیجے میں 6 سکیورٹی اہلکار شہید ہوگئے ۔ دوسری طرف گوادر کی تحصیل اورماڑہ میں اوجی ڈی سی ایل کے قافلے پر حملے میں 7 بہادراہلکار اور 7گارڈز نے جام شہادت نوش کیا ۔ پاک فوج کے شعبہ تعلقات عامہ کی جانب سے جاری بیان کے مطابق دہشت گردوں نے دیسی ساختہ بم سے حملہ کیا جس کے نتیجے میں ایک افسر اور 5 جوان شہید ہوگئے ۔ سیاسی وعسکری قیادت نے دہشت گردی کے واقعے کی شدید مذمت کی ہے ۔ سیکورٹی فورسز کے قافلے پر بارودی سرنگ کے ذریعے حملہ دشمن کی بزدلانہ حرکت ہے ۔ پاکستان کا امن اور استحکام ملک دشمن عناصر کی آنکھ میں کھٹکتا ہے ۔ آج پوری قوم، دہشت گردی کے اس عفریت کو کچلنے کیلئے پاک فوج اور قانون نافذ کرنے والے اداروں کے ساتھ کھڑی ہے ۔ شرپسند عناصر عزائم میں ہرگز کامیاب نہیں ہو سکتے ۔ وزیراعظم عمران خان کے ;200;فس سے جاری ہونے والے ایک بیان میں سیکورٹی اہلکاروں کے خاندانوں کے ساتھ اظہار ہمدردی کرتے ہوئے اس واقعے کی رپورٹ طلب کی گئی ہے ۔ وفاقی وزیر داخلہ اعجاز شاہ نے اپنے پیغام میں کہا کہ حملے میں ملوث افراد کے خلاف فوری کارروائی کی جائے گی اور انہیں کیفر کردار تک پہنچایا جائے گا ۔ کوسٹل ہائی وے پر قانون نافذ کرنے والے اداروں کے اہلکاروں کی جانوں کا ضیاع اس بات کی علامت ہے کہ دشمن بلوچستان اور اس کے عوام کو ترقی کرتے نہیں دیکھ سکتا ۔ دہشت گردی کے واقعہ میں ملک دشمن قوتوں کا ہاتھ ہے ۔ دہشتگرد بزدلانہ حملوں کے ذریعے پوری قوم کو ڈرانے کی کوشش کر رہے ہیں ۔ پوری قوم ہر طرح کی دہشت گردی اور انتہا پسندی کے خلاف ایک پیج پر ہے ۔ ملک پر جان قربان کرنے والے جوان ہمارے ہیرو ہیں ۔ شہدا کا خون کبھی رائیگاں نہیں جائیگا، دشمن اپنی ناپاک عزائم میں ناکام ہوگا ۔ بلاشبہ یہ کارروائی بزدلانہ ہے اسکی جتنی مذمت کی جائے کم ہے ایسا یقینا دشمن قوتوں کے ایما کے بغیر ہونا ناممکن ہے ۔ دہشت گردی کی کوئی بھی کاروائی سہولت کاری کے بغیر ممکن نہیں ۔ سیاسی اور عسکری قیادت کو جائزہ لینے کی ضرورت ہے کہ اچانک دہشت گردی کے واقعات میں تسلسل کیوں ;200; گیا ہے ۔ افغان مہاجرین میں موجود دشمن کے ایجنٹوں پر نظر رکھنے کی ضرورت ہے ۔ پاک افغان سرحد پر باڑ لگ رہی اور اب تکمیل میں مراحل ہے ۔ اس بارڈر کے ایک ایک انچ کو سیل کرنا ہو گا بہتر ہے کہ افغان مہاجرین کو اب واپس بھجوا دیا جائے کیونکہ حالات اب وہاں بہتر ہو رہے ہیں ۔ سہولت کاروں کے قلع قمع کرنے پر خصوصی توجہ دینا ہو گی ۔ حال ہی میں جبکہ ملک دہشت گردی کی لپیٹ میں تھا ہماری فوج نے بے مثال قربانیاں دے کر جس طرح دہشت گردوں اور دہشت گردی کا قلع قمع کیا وہ نہ صرف یہ کہ قابل تحسین ہے بلکہ وطن عزیز کی تاریخ کا ایک انمٹ باب ہے افواج پاکستان ہروقت میں جان جوکھوں میں ڈال کر ان سے نبرد آزما ہوئی ہیں ۔ پاکستان جواسلام کا ایک قلعہ ہے اس کیخلاف اسلام دشمن اور پاکستان دشمن قوتیں تسلسل کے ساتھ سازشوں میں مصروف رہتی ہیں او ر یہ ہماری افواج ہی ہیں جو سازشوں کا مردانہ وار مقابلہ کرکے پاکستان اور اہل پاکستان کو تحفظ فراہم کرتی ہیں اس وقت بھی پاکستان کے خلاف ففتھ جنریشن وار جاری ہے جس کےلئے ہمار ا دشمن ملک بھارت دیگر پاکستان دشمنوں کے ساتھ مل کر ہماے چند نا عاقبت اندیش لوگوں کو ڈالروں کے عوض خرید کر ہماری بہادر افواج کے ذریعے مذموم اور گھناءونا پراپیگنڈہ کررہے ہیں لیکن پاکستان کے عوا م باشعور ہیں او ر وہ ا ن سازشوں سے بدرجہ اتم آشنا ہیں اوروہ س پراپیگنڈہ کو بری طرح مسترد کرتے ہیں ۔ بھارت کو کسی بھی بھارتی مہم جوئی کا منہ توڑ جواب دیاجائے گا ۔ پاکستان ہماری دھرتی ماں ہے ۔ کوئی غلط فہمی میں نہ رہے ۔ دھرتی ماں کی عزت، وقار، تحفظ، دفاع اور سلامتی کیلئے فوج اورعوام ایک ہیں ۔ پاک فوج دفاع وطن کے مقدس فرض کی بجا آوری کے لیے ہمہ وقت تیار ہے ۔ بھارتی غیرذمہ داری جنوبی ایشیا میں امن اور خطے میں ترقی کی دشمن ہے ۔ آج پوری دنیا مقبوضہ کشمیرکے عوام کے حالات سے آگاہ ہے ۔ کشمیرکا مسئلہ بین الاقوامی سطح پر اہمیت اختیار کرگیا ہے ۔ صرف آزاد کشمیر نہیں پوری پاکستانی قوم مقبوضہ کشمیرکے عوام کے ساتھ ہے ۔ نفرت کا پرچار کرنے والے سے امن کی امید نہیں کی جاسکتی ۔ آج پاکستان دنیا میں مسائل حل کرانے کےلئے کوششیں کررہا ہے کیونکہ پاکستان ایک پرامن ملک ہے ۔ بھارت تو قیام پاکستان سے ہی ہمارا ازلی دشمن ہے اس کی ہمیشہ یہی کوشش رہی ہے کہ پاکستان میں امن قائم نہ رہے جو اس کی خام خیالی ہے ہماری مسلح افواج نے دشمن کے مذموم عزائم کو ہمیشہ ناکام بنایا ہے ۔ پاک فوج نے شمالی وزیرستا ن میں آپریشن کرکے ملک میں امن قائم کیا ہے اب بچے کھچے دہشت گرد چھوٹی موٹی مذموم کاروائیاں کرتے رہتے ہیں جلدان کو منطقی انجام تک پہنچایاجائے گا ۔ دوسری طرف چیف آف آرمی سٹاف جنرل قمر جاوید باجوہ نے گزشتہ روز بہاولپور کا دورہ کیا جہاں انہیں بہاولپور کور کے تربیتی، انتظامی اور آپریشنل امور کے بارے میں بریفنگ دی گئی ۔ آرمی چیف نے سناءپرز کی تربیت بھی ملاحظہ کی ۔ جس دوران فوجی سپاہیوں نے پندرہ سو میٹر کے فاصلہ تک اہداف کو کامیابی سے نشانہ بنایا ۔ افسروں اور جوانوں سے گفتگو کرتے ہوئے جنرل قمر جاوید باجوہ نے ان کے عمدہ، مورال اور پیشہ ورانہ استعداد کو سراہا ۔ آرمی چیف نے شوٹرز کی شاندار نشانہ بازی کی تعریف کی ۔ جنہوں نے انتہائی طویل فاصلہ تک نشانہ بازی کیلئے قائم کی گئی سہولیات سے بھرپور استفادہ کیا ۔ سہولیات کا مقصد بہترین نشانہ باز اور سنائیپرز پیدا کرنا ہے جو آج کے جنگی ماحول میں فیصلہ کن کردار ادا کرتے ہیں ۔ اس موقع پر جنرل قمر جاوید باجوہ نے کہا کہ کسی بھی سپاہی کی پیشہ ورانہ ترٗقی کیلئے تربیت، سب سے اہم حصہ ہوتی ہے اور عمدہ تربیت ہمارا اعلیٰ ترین مقصد ہونا چاہیئے تاکہ مستقبل کی جنگوں کے چیلنجوں سے نمٹا جاسکے ۔ پاکستان کی مسلح افواج ملک و قوم اور سرحدوں کی حفاظت کرنا بخوبی جانتی ہیں ۔ پوری دنیا میں پاک فوج اپنی صلاحیتوں کا لوہا منوا چکی ہے ۔ ماضی میں بھارت دیکھ لے کہ اسے ہر موقع پر ہزیمت ہی کا سامنا پڑتا رہا ہے ۔ ایل او سی پر جب بھی اس نے بلا اشتعال فائرنگ کی تو پاک فوج کے دندان شکن جواب دینے سے بھارتی بزدل فوج دم دبا کر بھاگنے پر ہی مجبور ہوئی ۔

کرپشن کے خاتمے کے لئے شفاف احتساب ضروری

وزیراعظم عمران خان نے کہاہے کہ قومی ادارے قوم کو پیارے ہیں ، پاکستان کو استحکام کی راہ پر ڈال دیا ہے ۔ منی لانڈررز نے ملکی معیشت برباد کی ہم نے سنبھالا دیا، قومی دولت لوٹنے والے صرف این آر او کی تلاش میں ہیں ۔ ان خیالات کا اظہارانہوں نے مشیر پارلیمانی امور بابر اعوان سے ملاقات میں کیا جس میں ملکی قومی معاملات اور آئینی امور پر تبادلہ خیال کیا گیا ۔ پارلیمنٹ کے آئندہ سیشن اور نئی قانون سازی پر وزیراعظم کو بریفنگ دی گئی ۔ علاوہ ازیں وزیراعظم نے اسلام ;200;باد میں پشاور موڑ پر قائم پناہ گاہ کا دورہ کیا اور پناہ گاہ میں سہولتوں کا جائزہ لیا وزیراعظم کو پناہ گاہ میں موجود افراد سے گفتگو بھی کی ۔ وزیراعظم نے کہا کہ پناہ گاہ میں بہترین اور معیاری سہولتیں فراہم کی جائیں معیار پر کوئی سمجھوتہ نہ کیا جائے ۔ دورے کے دوران وزیراعظم نے کیفے میں موجود افراد کے ساتھ کھانا کھایا ایک مسافر کی جانب سے وزیراعظم کو روٹی پیش کی گئی پناہ گاہ کے عملے نے وزیراعظم کے ساتھ تصاویر بنوائیں ۔ دریں اثنا وزیراعظم نے حکومت و اتحادی ارکان کا پارلیمنٹ کو اعتماد میں لینے کا فیصلہ کر لیا ۔ مزید بر;200;ں وزیراعظم عمران خان کی زیر صدارت نیشنل کو;200;رڈی نیشن کمیٹی برائے سیاحت کا اجلاس ہوا ۔ اجلاس میں سیاحت کے فروغ کیلئے اٹھائے گئے اقدامات کا جائزہ لیا ۔ کسی بھی ملک کی ترقی وخوشحالی اور مضبوط معیشت میں اس کے افراد اور محکمے اہم کردار ادا کرتے ہیں ۔ اگر افراد اور ادارے اپنا کام ٹھیک اور دیانتداری سے کرینگے تو ملک ترقی کرے گا اور معیشت مستحکم ہوگی ۔ اس کےلئے اداروں اور ان میں موجودافسران و عملے کو ٹھیک کرنا اور درست طور پر چلانا بے حد ضروری ہے جس کے بغیر ملک کی تعمیرو ترقی کا خواب اُدھور اہی نہیں ناممکن ہے ۔ یقیناپاکستان تحریک انصاف کی حکومت کا ایجنڈا ہی کرپشن فری پاکستان ہے اب لٹیروں کا احتساب کیا جارہاہے تو اس کو منطقی انجام تک پہنچایاجائے تاکہ ;200;ئندہ کسی کو قومی دولت و وسائل کی اس طرح بے دریغ لوٹ مار کی جراَت نہ ہوسکے ۔