- الإعلانات -

زراعت کو ترقی دینے کا عزم

وزیر اعلیٰ پنجاب میاں حمزہ شہباز کی حکومت نے جہاں شہروں میںعوام الناس کی فلاح و بہبود کےلئے بہت سے منصوبے شروع کئے ہیں وہیں دیہی ترقی ، کسانوں کی حالت زار بہتر بنانے کےلئے بھی بہت سے اقدامات کیے ہیں۔ پاکستان ایک زرعی ملک ہے اور زراعت و خوراک کے حوالے سے پنجاب کا ایک خاص مقام ہے۔ یہاں پانی کی فراوانی سے زرخیز زمین پاکستان بھر کےلئے اناج پیدا ہوتا ہے۔ پنجاب حکومت کاشتکاروں کےساتھ مکمل ہمدردی رکھتی ہے اور مشکل وقت میں کاشتکاروں کی حتیٰ المقدور امداد بھی کر رہی ہے ۔ وزیراعلیٰ کے زیر صدارت اجلاس میں کاشت کاروں کو سہولتیں دینے اور عوام کو اشیائے ضروریہ مقرر کردہ نرخوں پر فراہم کرنے کا فیصلہ کیا۔ اس ضمن میں انہوں نے چھوٹے کاشتکاروں کو اخوت کی طرز پر آسان اور بلاسود قرضے دینے کیلئے بنک آف پنجاب کے تعاون اور مشاورت سے جامع منصوبے بنانے کی ہدایت کی ۔ کاشتکاروں کا استحصال روکنے کیلئے پنجاب کی مارکیٹ کمیٹیوں کی تشکیل نو اور آکشن سپروائزری عملے کے فی الفور رد و بدل کا فیصلہ کیا گیا۔اس حقیقت سے انکار نہیں کہ زرعی شعبے میں تحقیق کے بغیر پیداوار میں اضافہ محض خواب ہے۔اس مقصد کےلئے ایگری ریسرچ انسٹیٹیوٹ قائم کیا گیا لیکن اس کی کارکردگی پر بھی سوالیہ نشان ہے۔ دوسری طرف یہ بھی ضروری ہے کہ فصلوں کو نقصان سے بچانے کےلئے ان کی انشورنس بھی کی جائے ۔ یوں کسان کی محنت ضائع نہیں جائے گی اور نقصان کی صورت میں وہ معاشی طورپر پریشان نہیں ہوگا۔ ہمارے ہاں بعض فصلیں مثلاً ٹماٹر، پیاز، آلو وغیرہ فصل اترنے پربہت زیادہ مقدار میں مارکیٹ میں آتے ہیں اور ان کی قیمتیں بھی بہت کم ہوتی ہیں مگر بروقت ذخیرہ نہ کرنے کی وجہ سے یہ اجناس ناپید ہو جاتی ہیں اور ان کی قیمتیں بھی آسمان سے باتیں کرنے لگتی ہیں۔ لہذا ضروری ہے کہ اجناس کی بروقت اور مناسب ذخیرہ اندوزی کی جائے ۔ اس کے علاوہ ان اجناس کی قلت پر قابو پانے کیلئے بر وقت درآمدی اقدامات کئے جائیں۔ ہمیں ٹماٹر، پیاز اور دیگر اشیائے ضروریہ کی ارزاں نرخوں پر عوام تک فراہمی کےلئے ہنگامی بنیادوں پر کام کرنا ہوگا۔ یہ امر نہایت خوش آئند ہے کہ جناب حمزہ شہباز نے لاہور سمیت پنجاب کی تمام منڈیوں میں صفائی کے انتظامات او ر منڈیوں میں کاروبار کرنے والوں کےلئے زیادہ بہتر سہولتیںفراہم کرنے کی ہدایت کی۔ پنجاب حکومت کی طرف سے زراعت ، کسانوں اور دیہی ترقی کےلئے کئے گئے اقدامات ، وزیر اعلیٰ کی دیہی عوام سے محبت کی نشانی ہے۔ حکومت پنجاب پسماندہ گاو¿ں اور دیہی آبادی کو ترقی دینے کےلئے دن رات محنت کر رہی ہے اور جلد ہی اس کے ثمرات عوام تک پہنچیں گے ۔ دیہی ترقی سے نہ صرف ہماری غذائی ضروریات پوری ہوں گی بلکہ ہمارے دیہاتی عوام بھی ترقی کی منازل طے کریں گے۔ تعلیم کے فروغ سے کسان کھیتی باڑی میں جدید طریقے اور آلات استعمال کرسکیں گے اور ملک کی خوشحالی میں اپنا حصہ ڈال سکیں گے۔ اس حقیقت سے انکار نہیں کہ وزیر اعلیٰ حمزہ شہباز کی قیادت میں پنجاب حکومت کسانوںکی خوشحالی اور معاشی استحکام کیلئے جو تاریخی اقدامات کر رہی ہے ،جلد ہی اس کے بہترین نتائج سامنے آنا شروع ہوجائیں گے۔ اس سے نہ صرف عوام کو بہترین اور صاف ستھری سبزیاں ، پھل اور دیگر زرعی اجناس سستے داموں میسر ہوں گی بلکہ کسان اور کاشتکار معاشی طورپر مضبوط بھی ہوں گے۔ پاکستان بنیادی طور پر ایک زرعی ملک ہے اور یہاں کی تقریباً 70فی صد آبادی اس شعبہ سے منسلک ہے۔ ایک زرعی ملک ہونے کی حیثیت سے چاہیے تھا تاکہ ہم زرعی اجناس کی پیداوار میں خودکفیل ہوتے اور اپنی ضروریات پوری کرنے کے علاوہ بیرون ملک برآمد کرکے زرمبادلہ کماتے۔ خوش قسمتی سے پاکستان میں موسم ہمارے حق میں ہے اور ہر موسم میں ہر قسم کی فصل ا±گائی جاتی ہے۔بدقسمتی سے ماضی میں حکومت کی ناقص حکمت عملی اور ڈنگ ٹپاو¿ پالیسیوں کی وجہ سے مطلوبہ نتائج حاصل نہیں کئے جاسکے۔ موجودہ حکومت کو اس بات کا احساس ہے کہ زرعی شعبے کی ترقی اور کسان کے حالات کار کو بہتر بنائے بغیر ملک میں سبزانقلاب نہیں لایاجاسکتا ہے۔ یہی وجہ ہے کہ وزیر اعلیٰ پنجاب حمزہ شہباز نے غذائی قلت کو دور کرنے کیلئے زراعت کے شعبہ کو غیرمعمولی اہمیت دی ہے اور یہ شعبہ حکومت کی ترجیحات میں شامل ہے۔ وزیر اعلیٰ نے وزیر مملکت برائے امور خارجہ حنا ربانی کھر سے ملاقات میں باہمی دلچسپی کے امور اور فیٹف کی گرے لسٹ سے نکلنے کےلئے پاکستان کی مثبت پیش رفت پر حنا ربانی کھر اور پوری ٹیم کی کاوشوں کو سراہا۔ مسلم لیگ ن کے رکن پنجاب اسمبلی جلیل احمد شرقپوری نے وزیر اعلیٰ پنجاب حمزہ شہباز شریف کی قیادت پر بھرپور اعتماد کا اظہارکرتے ہوئے کہا کہ مسلم لیگ ن میری جماعت ہے اور پارٹی کے ساتھ کھڑا ہوں ۔ وزیر اعلیٰ پنجاب میاں حمزہ شہباز نے صوبہ بھر کے تاجر رہنماو¿ں اورنمائندوں سے ملاقات میں توانائی کی بچت کےلئے صوبہ بھر کی تاجر برادری کی مشاورت سے فیصلہ کیا ہے کہ مارکیٹیں رات نو بجے بند کر دی جائیں ۔ تاہم تاجروں کی درخواست پر ہفتے کو تاجر برادری کو کاروبار کے اوقات میں خصوصی رعایت دی جائے گی۔ عید کی شاپنگ کےلئے اوقات کار کی پالیسی کا تاجر برادری کی مشاورت سے جائزہ لیا جائے گا۔اس موقع پر جب وطن عزیز معاشی بحران کا شکار ہے۔ حکومت اور تاجروں کے درمیان باہمی مشاورت انتہائی مستحسن اقدام ہے۔ تاجر برادری نے بھی توانائی بحران میں حکومتی اقدامات کی بھرپور حمایت کا اعلان کرتے ہوئے توانائی کی بچت کےلئے حکومتی اقدامات کو سراہا۔وزیر اعلیٰ نے اس اقدام پرتاجروں کا شکریہ ادا کرتے ہوئے کہا کہ تاجر برادری نے ہمیشہ مشکل وقت میں قوم کا ساتھ دیا ہے۔