- الإعلانات -

حکمران اور اپو زیشن

وزیرا عظم میاں نواز شر یف فیصل آ با د میں جلسہ کر رہے تھے تو اپو زیشن راہنما لا ہو ر میں احتسا ب ریلی نکال کر نیب ، ایف بی آ ر الیکشن کمیشن اور عدالت عظمیٰ کو ملک سے کر پشن کے خا تمہ اور کر پٹ مگر مچھو ں کو گر فتا ری کےلئے متحر ک کر نا چا ہ رہے تھے ! میاں صا حب کا فر ما ن تھاکہ ہم بجلی کا نہ صر ف بحر ان ختم کر رہے ہیں ،نہ صر ف عوا م کو بجلی دے رہے ہیں ۔ بلکہ سستی بجلی بھی پیدا کر رہے ہیں۔ انہوں نے سا بقہ حکومت کا نا م لئےے بغیر اسے نہ صر ف بجلی کی کمی اور لو ڈ شیڈ نگ کا ذمہ دار قرا ر دیا ۔سا تھی سا بق صد ر جنر ل مشر ف کا نام لیئے بغیر آمر پرلو ڈشید نگ اور تر قیا تی منصو بو ں ، شا ہر اہو ںکے منصو بو ں کو ٹھپ کر نے کا الز ام لگا یا ، میاں صا حب فیصل آبا د کے جلسے سے بڑ ے مطمئن دکھا ئی دے رہے تھے! انہو ں نے شیخ رشید احمد اور عمرا ن خان بھی تنقید کی ! میا ںصا حب فر ما رہے تھے کہ ہم نے بڑ ے مسا ئل کوحل کر دیا ہے ! دہشت گر دی پر قا بو پا لیا ہے ! تر قی کی شا ہر اہ پر چل پڑ ے ہیں ۔ بیر وز گا ری کا خا تمہ ہو نے والا ہے ۔ صحت تعلیم پر خصو صی تو جہ دے رہے ہیں ان ذمہ دار یو ں کو پو را کر نے کی وجہ سے عوام ہما رے سا تھ ہے ! انہوں نے کہا کہ ہم مو ٹر ویز کا جا ل بچھا رہے یں ! کا ر خا نو ں کو سستی بجلی فر اہم کر رہے ہیں ! ادھر عمران خان اور مو لا نا طا ہر القا دری کی سنی جا ئے تو ان کا کہنا ہے کہ ملک کو حکمران بے دردی سے لو ٹ رہے ہیں ۔ کر پشن کارو با ر بن چکا! نا انصا فی کلچر بن گیا ہے ! طا قتو ار کمز ور کے حق کو کھا نے کو جا ئز سمجھتا ہے ! انصا ف ہو تا کہیں دکھا ئی نہیں دے رہا ! کشمیر یو ں کو رو زانہ ہند و ستا نی فو ج کے ہا تھو ں مر تا دیکھ رہے ہیں اور حکمر ا ن خا مو ش ہیں ۔ حکمر ان لو ٹ ما ر کر کے غیر ملکی بنکو ں کو بھر رہے ہیں اور ایف بی آ ر اور نیب خا مو ش ہیں ! ترکی ٹھیکیدار و ں سے ملکر حکمر ان ملکی دو لت لو ٹ رہے ہیں ! پا نا مہ لیکس پر عد لیہ ، نیب اور ایف بی آ ر خوا ب خر گو ش میں مد حو ش اور خو ش ہیں ! غیر ملکی قر ضہ لیکر حکمر ان اپنے خزا نے بھر نے کے چکر میں ہیں ! مظلو مو ں اور مقتو لو ں کے سا تھ ہو نے والے ظلم پر ادارے کا روا ئی کر نے کی بجا ئے قا تلو ن اور ظالمو ں کو بے گنا ہ قرار دینے میں مصر و ف ہیں ! پر فیصلہ تو عوا م نے کر نا ہے کہ حکمر ان سچے ہیں کہ حکمر انو ں کے خلا ف جد و جہد کرنے والے علا مہ طا ہر القا دری و عمرا ن خا ن سچے ہیں ! کیو نکہ حکمر انو ں کا دعو یٰ ہے کہ ہم بجلی کے بحر ان کو حل کررہے ہیں ۔ بجلی سستی اور عا م کر رہے ہیں ! عوامی فلا ح کےلئے دن ران ایک کئے ہو ئے ہیں ۔ اپو زیشن کہہ رہی ہے کہ ملکی دو لت حکمرانو ں کی اولا د دیں نہ صر ف لو ٹ رہی ہے ! اور غیر مما لک میں سر ما یہ کار ی کر رہی ہیں ! اور غیر مما لک سے لیا ہو ا قو م کے نا م قر ضہ حر ام کی کما ئی کی طر ح اڑا یا جا رہا ہے ! عمرا ن خان اور علا مہ طا ہر القا دری ریلیو ں جلسو ں ، جلو سو ں اور دھر نے لگا کر اپنے جو انو ں کو آ ئند ہ الیکشن کےلئے تیا ر کر رہے ہیں ۔ آئے روز ان کے جلسو ں ، تقا ریر اور نعر و ں سے فضا عمر ان خان اور قا در ی نے ہمنو اکر لی ہے ! ملک کا ہر فر د پا نا مہ لیکس پر حکومتی مو قف کو کمزور اور غلط قر ار د ے رہاہیں ۔ ما حو ل حکو مت کے خلا ف بنتا دکھا ئی دے رہا ہے ! ادارو ن کی نا لا ئقی کو بھی زیر بحث لا کر عمر ان خان اپنی با ت کو سچا ثا بت کر نے کی کو شش کر رہے ہیں ۔ کہ نیب اور ایف بی آر ، چھو ٹے چھو ٹے چورو ں کو پکڑ ر اپنی کا ر کر دگی دکھا نے کی کو شش کر رہی ہیں ۔ ان کا کہنا ہے کہ حکو متی ادارے بڑ ے چو رو ں کوپکڑ یں گے تو جر ائم اور چو ری پر قا بو پا یا جا ئے گا ۔ جیسا کہ کسی شہر میں منشیا ت کے بڑ ے بیو پا ریو ں کو پو لیس اور دوسر ے ادارے نہ پو چھیں اور گلی کو چو ں میں منشیا ت کی پڑ یا ں فر و خت کر نے والو ں کو پو لیس پکڑ کر اپنی کا ر کر دگی دکھا نے کی کو شش کر ے گی تویقینا پو لیس جھو ٹے منشیا ت فرو ش تو بند کر دے گی مگر منشیا ت کے بیو پا ری نئے ایجنٹ بنا کر اپنا دھند ہ پھر سے شر و ع کر ا دیں گے !ملک میں بھی نیب چھو ٹے چو رو ں کی بجا ئے اصل اور بڑ ے چو رو ں پر ہا تھ ڈالے گی تو ملک کے خزا نو ںکو محفو ظ بنا یا جاسکے گا ! کچھ لو گ عمر ان خان کو بھی شیشہ میں اتا ر کر اپنا مفا د حا صل کر سکتے ہیں ! اسی طر ح بعض وزراءاور بیو رو کر یسی افسرا ن نے بھی وزیر اعلیٰ اور وزیر اعظم کو سب اچھا کی رپو ر ٹیں دیکر بیو قو ف بنا رکھا ہے ! اور یہی حوار ی لو ت ما ر میں خو د بھی مصر وف ہو تے ہیں اور شا ہی خا ندا ن کی لو ٹ ما ر کو جا ئز قرا ر دیکر ان کی تباہی کاراہ ہمو ار کر رہے ہو تے ہیں ۔ مو جو دہ حکمر انو ں کے حوار یو ں نے حکمر ان خا ندان کو ایک طر ف فر شتہ خیا ل دوسر ی طر ف قا نو ن سے با لا تصو ر کر تے ہیں ۔ وزیر اعظم کے خلا ف اپو زیشن کا دعویٰ سپیکر نے مستر د اور عمر ان خان اور جہا نگیر تر ین خان کے خلا ف حکو متی دعو یٰ جا ت کو در ست قر ار دیکر الیکشن کمیشن بھجو ا کر اپنے عہد ے کی تکر یم کا مذاق اڑ ایا ہے یہی کر داردو نو ں اطر اف جا ری ہے ۔ حکمر انو ں کے ما لشیئے مفا د ات کی خا طر اور اپو زیشن کے حا می جذ با ت میں آ کر حد و د پھلا نگ جا تے ہیں ۔ حکمر ان اختیا را ت اور طا قت کے نشہ میں حد ود پھلا نگ کر شا ہی فر ما ن جا ری کر جا تے ہیں اور اپو زیشن والے جذ با ت میں ا ٓ کر حکمر انو ں کے ہر فعل کو ملک اور قوم کے مفادات کے خلا ف قرا ر دیتے ہیںنو از شر یف اور عمران خان آ منے سا منے ہیں ۔ فیصلہ توبا لا خر عوام نے کر نا ہے