- الإعلانات -

بربریت اورسفاکیت

انسان دوست حلقوں نے انکشاف کیا ہے کہ بھارتی افواج کا مورال بُری طرح گر رہا ہے ۔ اور اسی کے نتیجے میں انڈین آرمی کے اندر عجب طرح کی مایوسی اور بے اطمینانی بڑی سُرعت کے ساتھ سرایت کر رہی ہے ۔ جس کی وجہ سے ایک جانب بھارتی افواج کے افسروں اور جوانوں کی کافی بڑی تعداد کوشش کر رہی ہے کہ کسی بھی طور جھوٹے سچے میڈیکل سرٹیفیکیس کی بنیاد پر انڈین آرمی سے ہمیشہ کے لئے چھٹی لے لی جائے ۔
با خبر ذرائع کے مطابق گذشتہ ڈھائی برس میں بھارتی فوج خصوصاً بی ایس ایف( بارڈر سیکورٹی فورسز ) میں ایسے جوانوں اور افسروں کی تعداد بہت بڑھ گئی ہے ہے جس کے نتیجے میں انڈین آرمڈ فورسز میں بڑے پیمانے پر بہت زیادہ بد دلی اور بے چینی پھیل رہی ہے اور دہلی سرکار کوشش کر رہی ہے کہ کسی بھی صورت اس مخدوش صورتحال پر قابو پایا جا سکے ۔
یاد رہے کہ اٹھائیس اکتوبر 2016 کو ماچھل سیکٹر میں بھارت کی بارڈر سیکورٹر فورسز کے سپاہی ’’ مندیپ سنگھ ‘‘ کا ایک دوسرے فوجی سے جھگڑا ہو گیا جس کے نتیجے میں مندیپ سنگھ نے اس فوجی کا سر قلم کر دیا ۔ تفصیلات کے مطابق انڈین آرمی کے اس مقتول اہلکار نے سکھوں کی بابت انتہائی نا زیبا گفتگو کی تھی جس پر مندیپ سنگھ نے مشتعل ہو کر اس فوجی کو موت کے گھاٹ اتار دیا ۔
یہاں یہ امر بھی قابلِ ذکر ہے کہ پچھلے کچھ عرصے میں ایسے ہندو فوجیوں کی تعداد 13 ہو گئی ہے جنھوں نے محض پچھلے چھ ماہ کے دوران یا تو خود کشی کر لی یا دوسرے فوجی کو قتل کر دیا ۔ اسی سلسلے کی تازہ کڑی کے طور پر چند روز قبل ’’ کشن سنگھ گریوال ‘‘ نامی ایک ریٹائرڈ فوجی نے خود کو گولی مار لی اور ایک خط چھوڑا جس میں لکھا تھا کہ ہندوستانیوں کا رویہ سکھوں کے ساتھ انتہائی غیر انسانی ہے اور انڈین آرمی کے دوسرے افسر سکھوں اور دیگر اقلیتوں کو خود سے انتہائی کم تر سمجھتے ہیں اور اس امر کا بار بار فخریہ طور پر اظہار کرتے ہیں ۔
اسی تناظر میں ہندوستان کے غیر جانبدار حلقوں نے کہا ہے کہ انڈین آرمی کے افسران کا رویہ عام ہندو سپاہیوں کے ساتھ اتنا ہتک آمیز ہے جس کا تصور بھی نہیں کیا جا سکتا اور یہی وجہ ہے کہ بھارتی فوج سے علیحدگی اختیار کرنے اور مستعفی ہونے کی خواہش ظاہر کرنے والوں میں آئے دن تیزی کے ساتھ اضافہ ہوتا چلا جا رہا ہے ۔ اور یہ سلسلہ ہے کہ تھمنے کا نام نہیں لے رہا اور بھارتی حلقوں نے اندیشہ ظاہر کیا ہے کہ اس امر کے قومی امکانات ہیں کہ آگے چل کر عام بھارتی فوجیوں کے یہ جذبات دہلی سرکار کے خلاف کوئی خطر ناک صورتحال اختیار کر لیں جس کے نتیجے میں انڈین آرمی کو نا قابلِ تصور مشکلات کا سامنا کر پڑ سکتا ہے ۔
مگر اس سارے معاملے کا یہ پہلو اور بھی توجہ طلب ہے کہ مقبوضہ کشمیر ، لائن آف کنٹرول اور ورکنگ باؤنڈری پر ہندوستانی افواج نے فائرنگ اور مارٹر گولہ باری کا جو لا متناہی سلسلہ شروع کر رکھا ہے اس کی وجہ سے پچھلے کچھ دنوں میں بے گناہ اور معصوم پاکستانی شہری بھارتی سفاکی کی بھینٹ چڑھ رہے ہیں ۔
ایسے میں اگر ہندوستان نے اپنی نا پاک روش کو فوری طور پر تبدیل نہ کیا تو اس کے برے نتائج