- الإعلانات -

اقوام متحدہ اندھی گونگی اور بہری بنی ہوئی ہے

انگریز نے ہندوستان کی حکومت مسلمانوں سے چھینی ، ہندوستان پر انگریز سو سال حکومت کرنے کے بعد ہندوستان سے واپس جانے پر راضی ہوا۔ ہندوستانی لوگوں نے انگریز سے نجات کیلئے مختلف اوقات مختلف تحریکیں چلائیں ۔ بالآخر انگریز ہندوستان دو حصوں میں تقسیم کرکے پاکستان اور بھارت بنا دیاگیا۔ہندوستان د و حصوں یعنی مسلم او ر ہندو ممالک میں تقسیم ہوا۔ اس تقسیم سے دنیا کا واحد ہندو ملک بھارت اور دنیا و اسلام کا بڑا ملک پاکستان بنا ۔ مسلم قیادت کی نالائقی اور غداری سے پاکستان کے دو حصے بن گئے ۔ ہندوستان کی تقسیم کا مقصد جس علاقے میں جس مذہب کے لوگوں کی اکثریت ہے وہ علاقہ اس کے حوالے کیا جاےئے حیدر آباد جونا گڑھ کی ریاستوں اور کشمیر کے علاقے یا مسلم اکثریت کے علاقے تھے یا ان علاقوں کے حکمران مسلمان تھے ۔ اور وہ پاکستان سے الحاق یعنی ہندوستان کا حصہ نہ بننا چاہئے تھے کشمیر پاکستان کا ملحقہ علاقہ تھا ۔ آباد ی کی کثرت بھی مسلمان تھی مگر اس علاقے پر غیر مسلم حکمران تھے ۔جنہوں نے اپنا الحاق پاکستان کی بجائے ہندوستان سے کیا اور بھارتی افواج کشمیر میں زبردستی داخل ہو کر اس علاقے پر زبردستی قابض ہوگئیں ۔ یوں کشمیر 1947 سے ہندوستانی افواج کی گرفت میں ہے مگر کشمیر ی مسلمان ہندوستان کا حصہ بن کر رہنے پر کسی صورت تیار نہ ہیں کشمیر کے لوگ ہندوستان سے آزادی مانگتے ہیں اور عشروں سے آزادی کی کشمیر کی تحریک جاری ہے نہ جانے کتنے کشمیری اس تحریک میں جیلوں کی قید یں کاٹ چکے ہیں آزادی کشمیر کیلئے کتنی خواتین جان کی بازی ہار چکیں ۔ نہ جانے آزادی کی اس جنگ مین کشمیریوں کا کتنا مالی و جانی نقصان ہوا۔؟ شمار نا ممکن ہے ۔ کشمیری کسی صورت بھارت کے ساتھ رہنے پر راضی نہ ہیں ۔ کیونکہ ہندو سوچ وکردارسے کشمیری بالکل تنگ آچکے ہیں ۔ کشمیری قیادت گھروں پر نظر بند ہے کشمیر جوان فوج کے ساتھ حالت جنگ میں ہیں ۔ کشمیری خواتین اور بچے سراپا احتجاج ہیں ۔ روزانہ بھاری فوج کشمیریوں کا خون کرنے میں لگی ہوئی ہے ۔ مگر اقوام عالم اقوام متحدہ اندھی گونگی اور بہری بنی ہوئی ہے ۔ اقوام متحدہ میں کشمیریوں کی خود ارادیت کی قراردادیں پاس ہوئے نصف صدری سے زیادہ وقت گزر چکا ۔ نصف صدی سے کشمیریوں پر مظالم ڈھائے جارہے ہیں ۔ اقوام متحد ہ بے اختیار ثالث کی طرح سب کچھ دیکھ سن سکنے کے باوجود چپ ہے ۔ مشرقی تیمور اور سوڈان کے عیسائیوں نے الگ ملک کیلئے آج اعلان کیا تو کل امریکہ بہادر نے مسلمانوں ممالک کوتقسیم کرکے عیسائی ملک بنا دیئے گویا یہ مسلم قیادت کی نالائقی ہے پاکستان کی نااہلی ہے کہ کشمیر کی وادی خون سے رنگین ہوچکی ہے ۔ جیلیں ہندوستان کی بھر چکی ہیں ۔ جوانوں کی اموات بے شمار ہوچکی ہیں ۔ ہندوستانی افواج آزادی کی تحریک کو بزور بازو گولی دبانے میں ناکام ہوچکی ہیں ۔ مگر بھارتی کشمیر کے حریت پسندوں کی تحریک آزادی کے کنارے نہ پہنچی ۔ دنیا بھارت کو کشمیریوں پر ظلم ڈھانے اور قیدرکھنے سے نہ روک سکی۔ کشمیر کی آزادی کیلئے جانیں قربان کرنے والے کشمیریوں نے طویل جنگ لڑ کر جمہوریت پسند یورپ و امریکہ کے دوغلے چہرے کو نہ صرف بے نقاب کیا ہے کہ بلکہ دنیا ئے اسلام کے نام نہاد ٹھیکیداروں کا دو غلاچہرہ بھی دنیا اسلام کو دکھا دیا ہے ۔ مظلوم کشمیریوں کی تنہائی کو دیکھ کر بھارت پاکستان کے پانی بند کرکے پاکستان کو صحرا بنانے کی حکومت عملی اختیار کرنے لگا ہے ۔ پاکستانی قوم کو اپنے ہی نام نہاد اور مکار حکمرانوں کے تخت تاج پر قبضہ کرکے آزادی کشمیر کیلئے اپنی ایٹمی طاقت کرنا ہوگی اقوام متحدہ کی بنائے اپنی طاقت استعمال کرکے اپنا حق آزادی حاصل کرنا ہوگی ۔