- الإعلانات -

کرپشن کرنیوالی پارٹی مہم چلانے نکلی ہے

بد عنوانی کے ریکارڈ بنانے والی پارٹی آج کرپشن کے خلاف مہم چلا رہی ہے مغرب کو اسلام فوبیا ہو گیا ہے ! مغرب کو اسلام مخالف پالیسی سے باہر نکلنا ہوگا! کبھی ایسا کام نہ کیا جس پر شرمندہ ہوں! راولپنڈی میں عوامی اجتماع سے خطاب کرتے ہوئے وزیر داخلہ نے بدعنوانی کے خلاف مہم کے جواب میں بڑے سخت الفاظ سے مخالفین پر وار کیا ! انہوں نے کسی کا نام لیے بغیر کرپشن کے خلاف مہم چلانے والوں کو سند یافتہ کرپٹ قرار دیا انہوں نے مخالفین کو کرپشن میں ریکارڈ ہولڈر قرار دیتے ہوئے کہا کہ آج کرپشن کے باد شاہ کرپشن کے خاتمے کیلئے کوشاں ہیں! چودھری صاحب آپ جن پر الزامات لگا کر اپنا دامن صاف کرنے چاہتے ہیں۔ وہ کرپشن کے الزامات آپ پر کم اور آپ کے بڑوں کو مورد الزام زیادہ ٹھہرارہے ہیں۔ یوں آپ اپنے اور اپنے بڑوں کو پاک دامن ٹھہراکر پارسا کہلوانا چاہتے ہیں تو مخالفین بھی معصوم بننے کیلئے حکمرانوں کو کرپشن کا ذمہ دار قراردے رہے ہیں ایعنی آپ اپنے آپ کو معصوم اور جن کو آپ بدعنوان قرار دے رہے ہیں وہ اپنے آپ معصوم اور آپ پر لوٹ مار کے الزامات لگا رہے ہیں! آپ کا کہنا ہے کہ کرپشن کے ریکارڈ قائم کرنے والے کرپشن کے خلاف مہم چلا کر خود کو پارسا ثابت کرنے کی کوشش کر رہے ہیں۔ چودھری صاحب مخالفین آپ پر اور آپ مخالفین پر انگشت نمائی کر رہے ہیں یہ کیس کسی عدالت میں ہوتا تو کسی ایک کو ضرور سزا ہو جاتی ۔ مگر یہ کیس حکومت کی عدالت میں ہے اور حکومت اگر ملزمان کے خلاف فیصلہ نہیں دیتی تو عوام یہی سمجھیں گے کہ حکومتی الزامات جھوٹ پر مبنی ہیں چودھری صاحب! آپ وزیر داخلہ ہیں اور سچے کھرے سیاستدان بھی کہلواتے ہیں اورآپ نے ریکارڈ کرپشن کا الزام بھی لگایا ہے اور تمام وسائل و ا ختیارات بھی آپ کے پاس ہیں اور ملزمان الٹا چور کوتوال کو ڈانٹے کی ضرب المثل کے مطابق آپ کو بد نام کررہے ہیںآپ کو اپنی جان چھڑانے کیلئے قانون کو حرکت میں لانا ہوگا آپ کو کرپشن کے ثبوتوں کو اکٹھا کرکے ملزمان کو عدالت کے کٹھہرے میں لانا ہو گا!آپ تمام حالات و واقعیات کے ضرور آگاہ ہو ں گے۔ بھلہ آپ نے ان معلومات کو اب تک کیوں چھپائے رکھا؟ آ پ کو جب علم تھا کہ مخالفین نے ریکارڈ کرپشن کی ہے اور آپ وزیر داخلہ ہو تے ہوئے کرپشن کے ذمہ دارں کے خلاف قانون کو حرکت میں نہ لا کر آپ سے کو تاہی ہوئی ہے۔ یہ کو تاہی آپ نے جس مصلحت کے تحت بھی کی ہے اس کو تاہی کی سزا عوام ذمہ دارں کو ضرور دیں گے! چودھری صاحب !آپ ریکارڈ کرپشن کے الزامات لگانے کے باوجود کرپشن کے ذمہ داران کے خلاف قانونی کاروائی نہ کرکے دال میں کچھ کا لے کالے سے لگ رہے ہیں کچھ لوگ یو ں بھی سوچ سکتے ہیں کہ آپ حکومت میں ہیں اور آپ کرپشن کے الزامات کے بدلے میں اپنے مخالفین پر الزامات لگار ہے ہیں اگرآپ سچے ہوتے تو جب آپ نے اقتدار سنبھالا تھا اور جو لوگ کرپشن کے ذمہ دار تھے ۔ ان کے خلاف کرپشن کے مقد مات بنوانے آپ کی ذمہ داری تھی ! آپ نے کرپشن کے ذمہ داران کے خلاف مقدمات نہ بنوائے آپ نے ان کے جرائم پر پردہ ڈالا اور اب جب آپ پر الزامات لگ رہے ہیں تو آپ نے ان کو کرپشن کا بادشاہ کہنا شروع کر دیا ہے ایک دوسرے پر آپ کے الزامات نے آپ دونوں جماعتوں کی اصل تصاویر عوام تک پہنچ گئی ہیں اور ان تصا ویر کو مخالفین گاؤں گلی گلی اور شہر ، شہرچورابیوں پر لٹکائیں گے۔آپ الزامات لگا رہے ہوں گے کہ پی پی پی والے چور ہیں۔ اور وہ الزامات لگائیں گے مسلم لیگیوں نے ملک کے خزانے لوٹ لئے دنیا بھرسے ملک اور قوم کے نام اربوں ڈالرز قرض لیئے اور مسلم لیگیوں نے جعلی منصوبوں اور جعلی ترقی کے نام کر کرے کھاپی لیے ہیں ان حالات میں کرپشن کے خلا ف مہم چلانے والی تیسری قوت پاکستان تحریک انصاف کو موقع میسر آئے گا۔ اور وہ دونوں حکمران جماعتوں کو کرپشن کا ذمہ دار ٹھہرا کر عوام میں دونوں جماعتوں کو بے عزت اور بدنام کرے گی اب آپ کو بچانے والا کوئی نہ ہوگا۔ آپ سمجھتے ہیں کہ آپ کرپشن میں بے گناہ اور پاک دامن ہیں تو جس کو کرپشن کا ذمہ ار ٹھہراراہے ہیں ان کے خلاف کرپشن کے ثبوت دیکر مقدمات قائم کریں اور اپنی جان بچائیں ورنہ آنے والے الیکشن میں پانامہ ایشو اور کرپشن کے الزامات کی ذد میں ہیںآپ کی جماعت ضرور آئے گی اور آپ نے میثاق جمہوریت کے معاہدے کے تحت ایک دوسرے کے گناہ بخش بھی دئے تو عمران خان کی جماعت آپ کو عوام میں خوب تختہ مشق بنائے گی اور آپ کی جماعت کا انجام پی پی پی والا ہوگا۔اور ابھی بھی وقت ہے کہ جو الزامات لگارہے ہیں ان کو عدلتوں میں پیش کر کے اپنی ذمہ داری پوری کر یں۔