- الإعلانات -

ای روزگار پروگرام سے باعزت روزگار کا حصول ممکن

وزیر اعلیٰ پنجاب شہبازشریف نے گزشتہ روزارفع کریم سافٹ ویئر ٹیکنالوجی پارک میں ای روزگارٹریننگ پروگرام کا افتتاح کیا جس کے تحت صوبے کے 36 اضلاع میں 40ای روزگار سینٹرز بنائے گئے ہیں جہاں پرنوجوانوں کو3ماہ تربیت فراہم کی جائے گی تاکہ وہ اپنا آن لائن جاب کے ذریعے باعزت کماسکیں۔وزیراعلیٰ نے ای روزگار سینٹرز کی تعداد مزید بڑھانے کا اعلان کرتے ہوئے کہا 40 سینٹرز بہت کم ہیں۔ ہمیں صوبے میں ایسے 40 لاکھ سینٹرز بنانا ہوں گے تاکہ زیادہ سے زیادہ نوجوانوں کو بااختیار بنایا جاسکے۔ وزیراعلیٰ نے ای روزگارٹریننگ پروگرام کی افتتاحی تقریب اور پہلے نیشنل فری لانسنگ کنونشن سے خطاب کرتے ہوئے کہا پاکستان کی بڑی آبادی نوجوانوں پر مشتمل ہے۔ نوجوان ہمارا قیمتی اثاثہ ہیں جنہیں بااختیار بنا کر ملک و قوم کی تقدیر بدلیں گے۔ پنجاب حکومت نے نوجوانوں کی ترقی اور انہیں بااختیار بنانے کے حوالے سے متعدد پروگرام شروع کر رکھے ہیں۔ ہر سال یونیورسٹیوں سے لاکھوں کی تعداد میں گریجوایٹس آ رہے ہیں اور تعلیم یافتہ نوجوان پاکستان کا بڑا چیلنج ہے اور اسے ہم نے مواقع میں بدلنا ہے۔ قوم کی بیٹیاں اور بیٹے جہاں انفارمیشن ٹیکنالوجی سے آراستہ ہو کر ملک کی تعمیر و ترقی میں اپنا کردار ادا کر رہے ہیں، وہاں اپنے خاندانوں کا بوجھ بھی بانٹ رہے ہیں۔ یہی ترقی کی شاہراہ ہے اور پاکستان کو خوشحال ملک بنانے اور اس کی تقدیر بدلنے کا یہی طریقہ ہے۔ اس مقصد کیلئے وسائل اور ماحول کی فراہمی حکومت کی ذمہ داری ہے اور پنجاب حکومت نے اس حوالے سے بے مثال اقدامات کئے ہیں۔ ’’خادم پنجاب خود روزگار سکیم‘‘ اور ’’ای روزگار ٹریننگ پروگرام‘‘ اسی سلسلے کی کڑی ہیں۔ نوجوانوں کو بااختیار بنانے کے حوالے سے آج ایک منفرد محفل منعقد کی گئی ہے۔ 3 سال قبل وائس چانسلر انفارمیشن ٹیکنالوجی یونیورسٹی ڈاکٹر عمر سیف نے ای روزگار سکیم کے پروگرام کی داغ بیل ڈالی تھی اور آج اس پروگرام کے تحت ہزاروں نوجوان انفارمیشن ٹیکنالوجی کی تربیت حاصل کرکے اپنا روزگار کما رہے ہیں۔ اگر پاکستان اور پنجاب کو ترقی کرنا ہے تو اپنے نوجوانوں کو ترقی کا انجن بنانا ہوگا۔ نوجوانوں کو بااختیار بنائے بغیر ترقی و خوشحالی کا سفر طے نہیں کرسکتے۔ اسی مقصد کے پیش نظر پنجاب حکومت نے نوجوانوں کیلئے بے مثال پروگرام شروع کر رکھے ہیں۔ ’’خادم پنجاب خود روزگار سکیم‘‘ کے تحت نوجوانوں کو اپنے روزگار کیلئے بلاسود قرضے دیئے جا رہے ہیں اور ان قرضوں کے حصول سے 9 لاکھ بچے اور بچیاں اپنے پاؤں پر کھڑے ہوچکے ہیں۔ اسی طرح ای روزگارٹریننگ پروگرام بھی نہایت اہمیت کی حامل ہے اور اس سکیم کے تحت بنائے گئے 40 تربیتی سینٹرز کم ہیں اس لئے 40 لاکھ ای روزگارٹریننگ سینٹرز کے قیام کیلئے منصوبہ بندی کی جائے۔ وزیر اعلیٰ کا کہنا تھا کہ نوجوانوں کو میں کوئی سہانے خواب نہیں دکھانا چاہتا لیکن نوجوان میرے دل کے قریب ہیں اورمیں نے نوجوانوں کی ہر طریقے سے خدمت کی ہے اور2018ء عام انتخابات میں نوجوان یقیناًخدمت ،محنت اوردیانت کا ساتھ دیں گے۔مشیر ڈاکٹر عمر سیف نے تقریب سے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ پاکستان کی 60 فیصد آبادی نوجوانو ں پر مشتمل ہے جو پاکستان کے تابناک مستقبل کی نوید ہے۔ یونیورسٹیوں سے ہر سال ڈگریاں لے کر نکلنے والے لاکھوں گریجوایٹس کو روزگار کی فراہمی ایک چیلنج کی حیثیت رکھتا ہے تاہم پنجاب کے وزیراعلیٰ شہبازشریف کے ویژن کے مطابق ای روزگار پروگرام شروع کیا گیا ہے جو نوجوانوں کو اپنا روزگار کمانے کے مواقع فراہم کر رہا ہے۔ صوبائی وزراء سید رضا علی گیلانی اور جہانگیر خانزادہ نے تقریب سے خطاب کرتے ہوئے ای روزگارٹریننگ پروگرام کی اہمیت اور افادیت کو اجاگر کیا جبکہ ای روزگارٹریننگ پروگرام کے تحت روزگار حاصل کرنے والے نوجوان مزمل عارف نے اپنی داستان سناتے ہوئے ای روزگار پروگرام کی اہمیت بیان کی۔ ہم اس شاندار پروگرام کے اجراء پر وزیر اعلیٰ پنجاب شہباز شریف، حکومت پنجاب، ڈاکٹر عمرسیف اور ان کی پوری ٹیم کو مبارکباد دیتے ہیں کہ ایسا پروگرام وقت کی اہم ترین ضرورت تھی اور ایسے پروگراموں سے ہی پاکستان آگے بڑھ سکتا ہے۔ارفع کریم ٹاور میں ای روزگار پروگرام کی لانچنگ تقریب میں صوبائی وزرا ء سید رضا علی گیلانی، جہانگیر خان زادہ، چیئرمین پنجاب انفارمیشن ٹیکنالوجی بورڈ ڈاکٹر عمر سیف سمیت دیگر نے شرکت کی۔
****