- الإعلانات -

بھارتی جنگی جنون امن کیلئے خطرہ

جنوبی ایشیا میں بھارت کی جنون کی حد تک بڑھتی ہوئی مطلق العنان بالادستی کی مذموم سفارتی اورسیاسی طرزِ حکمرانی نے خطہ کے استحکام کوگزشتہ 70 برسوں سے غیرمتوازن کیئے رکھا ہے’مغربی عالمی طاقتوں کے اپنے اپنے مفادات ہیں مفادات کی دنیا بھی عجیب ایک تماشا ہے’جن میں اخلاقی اصول وضوابط نام کی کوئی چیزکسی کوکہیں دکھائی نہیں دیتی’دنیائےِ اسلام خصوصا دنیائےِ اسلام کے واحد ایٹمی ڈیٹرنس کے حامل مسلم ملک پاکستان کا جب کہیں نام آجائے تو ویسے ہی عالمی طاقتوں کے ماتھوں پر شکنیں اور بل پڑجاتے ہیں، یہ کتنے افسوس اورتعجب کامقام ہے کہ سوڈان میں دارفر اور انڈونیشیا کے ایک جزیرے مشرقی تیمور میں جہاں بے پناہ قیمتی قدرتی وسائل زیر زمین موجود ہیں انہیں عیسائی آبادی کے علاقے قرار دے کر وہاں اقوامِ متحدہ کی فوجیں فورا اتاردی گئیں، دہرے معیار کے یہ کیسے عالمی اصول ہیں، جو صرف مذہب کی بنیاد پر انسانی حقوق کا تحفظ کرتے ہیں کیا فلسطین میں انسان نہیں بستے ؟کیا کشمیر میں انسان نہیں ؟ جس پر چین نے فورا جوابی کارروائی کی اور بھارت کے 50 فوجیوں کو ایک ہی جھڑپ میں ہلاک کردیا بھارتی عوام ہکابکا رہ گئے نئی دہلی کے بھی یہ وہم وگمان میں نہ تھا عوام کو جھوٹا دلاسہ دینے کیلئے بھارتی میڈیا میں یہ ‘کہانتیں’ دہرائی جانے لگیں کہ ‘بھارت چین سرحد کے نزدیک دونوں فوجوں کے درمیان فوجی مشقیں ہورہی ہیں ؟’یہ ہے بھارت کا چانکیائی میڈیا اور اس کی عیارانہ میڈیا پالیسی؟ یقیناًاِس میں کوئی دورائے نہیں ہوسکتی کہ آج کے بھارت کا اقتدار بھارتی عوام کی بدقسمتی سے بھارت کے بدترین جنونی اور فرقہ وارانہ ذہنیت رکھنے والی متشدد تنظیموں کے آلہِ کاروں کے ہاتھوں میں ہے، جب یہ اقتدار میں آئے تھے تو اِنہوں نے دیش کی معیشت کو سریع الحرکت پیمانے پر ترقی دینے کے نعرے لگائے تھے اقتدار پر جب پوری طرح قابض ہوگئے اوراپنے ہی کہے ہوئے انتخابی نعرے جب یہ پورے کرنے میں بری طرح سے ناکام ہونے لگے تو اِنہوں نے پہلے پاکستان کے ساتھ جنگی جنونی قسم کی بڑھکیں مارنی شروع کر دیں، لائن آف کنٹرول پر پاکستان کی باقاعدہ فوج کے سامنے آنے کی بجائے سرحدی گاوں کے پاکستانی کشمیریوں کو تاک تاک کر شہید کرنا شروع کردیا جواب میں جب پاکستان کی طرف سے منہ توڑ فوری جواب آیا تو اِنہیں ٹھنڈ پڑی تو پھر نئی دہلی کے مغربی آقاوں نے مودی کو چین کے جانب رجوع کرنے کا حکم دیا ویسے بھارت خود بھی اندر سے پاکستان چین اقتصادی راہداری پر بڑی بے چینی کی کروٹیں لے رہا تھا مغرب اور امریکا کی ایماپر اِس بار نئی دہلی نے چین کو بھی جنگی دھمکیاں ہی نہیں دیں بلکہ ڈوکلام میں چین کی قائم کردہ دفاعی سڑک کو محاذِ جنگ بنانے کی غلطی بھارت کو بڑی مہنگی پڑ گئی کبھی پاکستان اور کبھی چین کے سامنے اپنے سینے پھیلاکر مودی جنگی جنونی دھمکیاں د یا کرتا تھا’ اب سارادم خم نکل گیا ہوگا، جب چین کا فوری بروقت اور سخت ردِعمل بھارتی توقعات کے بالکل برخلاف آیا اور بھارت کو اس کی عسکری غلطی کی چین کی جانب سے بڑی سخت سزا بھگتنی پڑی، یہ سوچنا اب بھارتی دفاعی اداروں کا سر درد ہے کہ کتنا غیر محفوظ ہوگیا ہے چین کے ہاتھوں مودی کا بھارت۔۔۔؟

کمائی۔۔۔ شوق موسوی
جو اِک فقیر سے پوچھا کہ کیا کماتے ہو
یہ سچ بتاؤ کہ روزانہ آمدن کیا ہے
جواب سن کے میں حیران ہوگیا یارو
کھلا کہ وہ خطِ غربت سے خاصا بالا ہے