انٹر ٹینمنٹ

میکال ذوالفقار کی ’شیردل‘ نے ’لال کبوتر‘ کو پیچھے چھوڑ دیا

کراچی: یوم پاکستان کے موقع پر ریلیز ہونے والی فلمیں ’’شیردل‘‘ اور ’’لال کبوتر‘‘ پاکستانی باکس آفس پر اچھا بزنس کررہی ہیں تاہم میکال ذوالفقار کی فلم’’شیردل‘‘ نے منشا پاشا کی فلم’’لال کبوتر‘‘ کو ریلیز کے پہلے روز پیچھے چھوڑدیا۔

22 مارچ کو اداکار میکال ذوالفقار اور ارمینا خان کی حب الوطنی کے جذبے سے بھرپور فلم ’’شیر دل‘‘ جب کہ اداکارہ منشا پاشا اوراحمد علی اکبر کی کرائم تھرلر فلم ’’لال کبوتر‘‘ نمائش کے لیے پیش کی گئیں۔ بھارتی فلموں پر پابندی کے باعث دونوں فلمیں پاکستانی شائقین کو سینما تک لانے میں کامیاب رہیں۔ تاہم فلم ’’شیردل‘‘ نے ریلیز کے پہلے روز ایک کروڑسے زائد کا بزنس کرکے ’’لال کبوتر‘‘ کو پیچھے چھوڑدیا۔

باکس آفس ڈیٹیلز اور انٹرٹنمنٹ پی کے کے مطابق فلم ’’شیردل‘‘ ریلیز کے پہلے روزمجموعی طور پر ایک کروڑ 15 لاکھ کا بزنس کرنے میں کامیاب رہی ہے، یہ 2019 میں ریلیز ہونے والی کسی بھی فلم کا اب تک کا پہلے دن کا سب سے زیادہ بزنس ہے اس سے قبل بالی ووڈ فلم ’’گلی بوائے‘‘ریلیز کے چار روز میں ایک کروڑ کمانے میں کامیاب ہوئی تھی۔

دوسری جانب اداکار احمد علی اکبر اورمنشا پاشا کی کراچی کے گرد گھومتی کرائم تھرلر فلم ’’لال کبوتر‘‘ بڑے اداکاروں کی غیرموجودگی کے باعث شائقین کی زیادہ تعداد کو متوجہ نہ کرسکی، فلم ریلیز کے پہلے روزصرف 30  لاکھ کمانے میں کامیاب رہی ہے۔

اداکارہ عظمیٰ گیلانی نے کینسر کے خلاف جنگ کیسے جیتی؟

کراچی: پاکستان ٹیلی ویژن اورریڈیو کی مقبول ترین اداکارہ عظمیٰ گیلانی نے کینسر جیسے موذی مرض کے خلاف جینگ کیسے جیتی اور اس دوران ان کے جذبات کیا تھے اس حوالے سے انہوں نے حال میں دئیے گئے انٹرویو کے دوران اپنےخیالات کا اظہار کیا ہے۔

پاکستان شوبز انڈسٹری کی لازوال اداکارہ عظمیٰ گیلانی نے حال ہی میں ثمینہ پیرزادہ کے مقبول ترین آن لائن پروگرام’’اسپیک یورہارٹ‘‘ میں شرکت کی اور اپنی زندگی اوربیماری سے متعلق کھل کر باتیں کیں۔ عظمیٰ آپا نے اپنی بیماری سے متعلق بتاتے ہوئے کہا کہ ان کی بیماری کا دور ان کی زندگی کا سیاہ ترین دورتھا، انہوں نے کہا کچھ لوگ بیماری اور پریشانیوں میں بہادر بنتے ہیں اور تکلیف میں ہونے کے باوجود جتاتے ہیں کہ انہیں بیماری سے کوئی فرق نہیں پڑتا لیکن ان کے نزدیک یہ جھوٹی بہادری ہے۔

عظمیٰ آپا نے کہا اگر انسان کو کوئی بیماری ہے یا وہ کسی تکلیف میں ہے تو اسے اس کا اظہار کرنا چاہئے نہ کہ اپنی تکلیف کو جھوٹی ہنسی کے پیچھے چھپالینا چاہئے۔ انہوں نے کہا میں بھی ایسی ہی تھی کسی پر اپنی تکلیف ظاہر نہیں ہونے دیتی تھی لیکن بعد میں احساس ہوا کہ میں نے اپنے ساتھ بہت زیادتی کی۔  خدا نے آپ کو جو جذبات دئیے ہیں چاہے وہ غم کے ہوں یا خوشی کے آپ کو ان کا اظہار ضرور کرناچاہئے۔

عظمیٰ آپا نے کہا بیماری کے دوران ان کی بہنوں اور گھر والوں نےانہیں بہت سپورٹ کیا لیکن جو کچھ ایک بیمار پر گزر رہی ہوتی ہے وہ کسی اور پر نہیں گزرتی لہٰذا اندر سے تکلیف میں ہوتے ہوئے اوپر سے ایسا ظاہر کرنا کہ جیسے کچھ ہوا نہیں، یہ چیزانسان کو توڑ پھوڑ کر رکھ دیتی ہے۔ انہوں نے کہا وہ پہلے بہت مضبوط خاتون تھیں تاہم بیماری سے لڑتے لڑتے کمزور ہوگئیں جس کے باعث ان کی  شخصیت میں بہت تبدیلی آئی اور آج تک اس کے اثرات ان کی شخصیت پر ہیں۔

دوران انٹرویو انہوں نے نہ صرف اپنی بیماری سے متعلق اپنے دل کا حال بتایا بلکہ اپنی نجی زندگی کے حوالے سے بھی کئی باتیں شیئرکیں۔ انہوں نے بتایا کہ ان کے شریک حیات میاں عنایت اور ان کی عمر میں بہت زیادہ فرق تھا، لہٰذا ہمیشہ ان دونوں کے درمیان محبت کے بجائے عزت کا رشتہ قائم رہا تاہم وہ بہت اچھے شوہر تھے جنہوں نے انہیں شوبز میں کام کرنے کی اجازت دی۔

واضح رہے کہ عظمیٰ گیلانی پاکستان شوبز انڈسٹری کا بہت بڑانام ہیں، پاکستان میں اردو ڈرامے کی تاریخ عظمیٰ گیلانی کے نام اور کام کے بغیر مکمل نہیں ہوسکتی۔ ڈراما سیریل ’’قلعہ کہانی‘‘سے فنی کیریئر کا آغاز کرنے والی اداکارہ عظمیٰ گیلانی کو اشفاق احمد کے مقبول ڈراما سیریز ’’ایک محبت سو افسانے‘‘کے کھیل ’’نردبان عرفان‘‘میں بہترین اداکاری پرایوارڈ سے نوازاگیا۔ اس کے علاوہ انہوں نے امجد اسلام امجد کے مقبول ڈرامے ’’وارث‘‘ میں بھی اداکاری کے جوہر دکھائے ہیں۔ آج کل عظمی گیلانی نجی چینل کے ڈرامے ’’کیسا یہ نصیباں‘‘ میں اداکاری کے جوہر دکھاتی نظرآرہی ہیں۔

مارننگ شو چھوڑنے کے بعد صنم جنگ اب کیا کرنے والی ہیں؟

ڈراموں اور ماڈلنگ کے بعد صنم جنگ نے مارننگ شو کی میزبان کے طور پر شہرت حاصل کی۔

مگر مارننگ شو کرتے ہوئے انہوں نے ڈراموں کو چھوڑ دیا اور اب 4 سال بعد ان کی چھوٹی اسکرین پر بطور اداکارہ پھر واپسی ہورہی ہے۔

جاگو پاکستان جاگو نامی مارننگ شو تو کچھ عرصے پہلے ختم ہوگیا تھا جس کے بعد سے صنم جنگ غائب تھیں۔

اب معلوم ہوا ہے کہ وہ ایم ڈی پروڈکشنز اور عدنان صدیقی کے مل کر بنائے جانے والے ڈرامے میں 4 سال بعد جلوہ گر ہو رہی ہیں۔

اس ڈرامے میں صنم جنگ کے ساتھ اداکارہ زاہد احمد بھی کام کریں گے اور انہوں نے ہی گزشتہ دنوں انسٹاگرام پوسٹ میں اس بات کا انکشاف کیا تھا۔

اس بارے میں ڈان امیجز سے بات کرتے ہوئے اداکارہ نے بتایا کہ اس ڈرامے کو فرقان خان ڈائریکٹ کریں گے جبکہ اس کی کاسٹ میں عفان وحید، زاہد احمد اور وہ شامل ہیں۔

اسکرین شاٹ
اسکرین شاٹ

ان کا کہنا تھا ‘اس ڈرامے کی کہانی ہم تینوں کے گرد گھومتی ہے اور یہ سسپنس، ڈراما اور محبت جیسے جذبوں کا اظہار کرتا ہے جس میں زاہد اور عفان نے بہترین کام کیا’۔

اس ڈرامے کا نام اور نشر ہونے کی تاریخ سامنے نہیں آئی ہے، جسے نورا مخدوم نے تحریر کیا ہے۔

خیال رہے کہ جاگو پاکستان جاگو 2015 میں نشر ہونا شروع ہوا تھا اور دسمبر 2018 میں صنم جنگ نے مارننگ شوز سے بریک لینے کا فیصلہ کیا تھا تاکہ خاندان کے ساتھ وقت گزار سکیں۔

صنم جنگ کا آخری ڈرامہ الوداع 2015 میں ہی نشر ہوا تھا جس میں ان کے مدمقابل عمران عباس اور زاہد احمد نے کام کیا تھا۔

واضح رہے کہ صنم جنگ کی شادی 2016 میں سید عبدل قسام جعفری سے ہوئی تھی، جن کا انٹرٹینمنٹ انڈسٹری سے کوئی تعلق نہیں۔

اسکرین شاٹ
اسکرین شاٹ

صنم نے زونگ کے ایک اشتہار سے کیریئر کا آغاز کیا تھا، جس کے بعد انہوں نے 2008 میں پلے ٹی وی پر وی جے کی حیثیت سے کام کیا، صنم کو 2010 میں آگ ٹی وی سے وی جے کی آفر ہوئی جسے انھوں نے قبول کرلیا۔

صنم نے اپنے کیریئر میں متعدد ڈراموں میں بھی کام کیا، جن میں ‘دل مضطر’، ‘محبت صبح کا ستارہ’، ‘میرے ہم دم میرے دوست’ اور ‘الوداع’ شامل ہیں۔

انہیں ڈراموں کے علاوہ بولی وڈ میں ایک فلم کی آفر بھی ہوئی، تاہم صنم نے اس میں کام سے معذرت کرلی۔

ملی نغمہ ’سوہنی دھرتی اللہ رکھے‘ گانے والی گلوکارہ شہناز بیگم انتقال کرگئیں

ڈھاکا: ’’سوہنی دھرتی اللہ رکھے‘‘ اور’’جیوے جیوے پاکستان‘‘ جیسے شہرہ آفاق ملی نغمے گانے والی مقبول ترین گلوکارہ شہناز بیگم 67 سال کی عمر میں ڈھاکا میں انتقال کرگئیں۔

گلوکارہ شہناز بیگم کا انتقال ہفتے کی رات ڈھاکا کے علاقے باریدھارہ میں گھر پر دل کا دورہ پڑنے کے باعث ہوا۔ شہناز بیگم نے سوگواران میں شوہر، ایک بیٹا اور ایک بیٹی چھوڑے ہیں۔ ان کی بیٹی برطانیہ جب کہ بیٹا کینیڈا میں رہائش پزیر ہے۔

2 جنوری 1952 کو ڈھاکا میں پیدا ہونے والی شہناز بیگم نے بنگلا دیش اور پاکستانی فلموں کے لیے کئی گانے گائے۔ سقوط ڈھاکا کے بعد شہناز بیگم نے بنگلا دیش ہی میں سکونت اختیار کرلی تھی تاہم وہ پاکستان اوربنگلہ دیشن دونوں ممالک میں یکساں مقبول تھیں، ان کے گائے ہوئے ملی نغمے’’سوہنی دھرتی اللہ رکھے‘‘اور’’جیوے جیوے پاکستان‘‘ کئی دہائیاں گزرنے کے بعد بھی مقبول عام ہیں۔

شہناز بیگم نے 2010 میں عمرے کی ادائیگی کی، عمرے کی ادائیگی کے بعد ڈھاکا واپسی پر انہوں نے اپنا گھر بیچ کر رقم غریبوں میں بانٹ دی تھی۔

شہناز بیگم کا گایا ہوا مقبول ترین ملہ نغمہ ’’سوہنی دھرتی اللہ رکھے، قدم قدم آباد تجھے‘‘ جمیل الدین عالی نے لکھا تھا جب کہ اس کی موسیقی سہیل رانا نے ترتیب سی تھی۔

واضح رہے کہ شہناز بیگم کو ان کی گراں قدر خدمات کے اعتراف میں کئی اعزازات سے نوازا گیا ہے۔

شوبز فنکار بھی ’’یوم پاکستان‘‘ کی خوشیوں میں شریک

کراچی: یوم پاکستان کے موقع پر جہاں پوری قوم پاکستان کے رنگ میں رنگی نظر آرہی ہے وہیں شوبز فنکاروں نے بھی اس موقع پر پوری قوم کو مبارکباد کے پیغامات دئیے ہیں۔

ماہرہ خان

یوم پاکستان کے موقع پر پاکستان کی صف اول کی اداکارہ ماہرہ خان نے نہایت خوبصورت انداز میں پوری قوم کو مبارکباد دی۔ انہوں نے مشہور نظم ’’سوہنی دھرتی اللہ رکھے‘‘ کے اشعار اپنے ٹوئٹر اکاؤنٹ پر شیئر کرائےاور پورے پاکستان کو یوم پاکستان کی مبارکباد دی۔ ان اشعار میں پاکستان سے محبت اورپاکستان کے لیے قربانی جذبہ بھرپور انداز میں جھلکتا ہے۔

اشعار کچھ یوں ہیں’’سوہنی دھرتی اللہ رکھے، قدم قدم آباد تجھے

تیرا ہر اک ذرہ ہم کو اپنی جان سے پیارا، تیرے دم سے شان ہماری تجھ سے نام ہمارا‘‘

ماہرہ خان نے پہلی بارانگریزی کے ساتھ اردو میں بھی ٹوئٹ کی۔

شان

پاکستان شوبز کے صف اول کے اداکار شان نے ویڈیو پیغام کے ذریعے تمام ہم وطنوں کو یوم پاکستان کی مبارکباد دی، انہوں نے دلوں کو گرمانے والا شعرپڑھا

’’رگوں میں دوڑتے پھرنے کے ہم نہیں ہیں قائل

جو وطن کی خاطر نہ ٹپکے، پھر لہو کیاہے، پاکستان زندہ باد‘‘

علی ظفر

نامور پاکستانی گلوکارو اداکار علی  ظفر نے یوم پاکستان کے موقع پر ملک سے محبت کے جذبے سے لبریز ملی نغمہ ’’جان دے دیں گے‘‘ریلیز کیاہے۔ اس ملی نغمے کے ذریعے انہوں نے پاکستان کے گمنام ہیروز کو خراج تحسین پیش کیا ہے۔

فیصل قریشی

اداکار فیصل قریشی پاکستان کے ہر اہم موقع پر اپنے خیالات کا اظہار کرنا کبھی نہیں بھولتے، یوم پاکستان کے موقع پر بھی انہوں نے23 مارچ کے حوالے سے ایک خوبصورت تصویر شیئر کی اور پاکستان زندہ باد کا پیغام دیا۔

وینا ملک

اداکارہ وینا ملک نے بانی پاکستان قائد اعظم محمد علی جناحؒ کی ایک خوبصورت تصویر اپنے سوشل میڈیا اکاؤنٹ پر شیئر کی اور بھارت کو پیغام دیا کہ’’بھارت کوئی قوم نہیں ہے اور نہ ہی کو ئی ملک ہے،  بلکہ یہ برصغیر ہے جہاں مختلف قومیتیں آباد ہیں۔‘‘

حمزہ علی عباسی

پاکستانی اداکارومیزبان حمزہ علی عباسی نے یوم پاکستان کی شاندار پریڈ کی تصویر اپنے سوشل میڈیا اکاؤنٹ پر شیئر کی جس میں صدر پاکستان ڈاکٹر عارف علوی، وفاقی وزیردفاع پرویز خٹک، وزیر اعظم پاکستان عمران خان اورملائیشیا کے وزیراعظم مہاتیر محمد ایک ساتھ کھڑے ہیں انہوں نے اس تصویر کے ذریعے پیغام دیاکہ وہ تمام قوتیں جوپاکستان کو تنہا کرنا چاہتی ہیں دیکھ لیں، اس تقریب میں نہ صرف چین کی عسکری قوت موجود ہے بلکہ ترکی، سعودی عرب، آذربائیجان اورمسلم امہ کے قابل تعظیم رہنما مہاتیر محمد موجود ہیں جو اس بات کا ثبوت ہے کہ پاکستان کو کوئی تنہا نہیں کرسکتا، اللہ اکبر!۔

علی ظفر کا یوم پاکستان پر نیا ملی نغمہ ’جان دے دیں گے‘ ریلیز

 لاہور: بین الاقوامی شہرت یافتہ گلوکار علی ظفر کا یوم پاکستان کی مناسبت سے ملی نغمہ ’جان دے دیں گے‘ ریلیز کردیا گیا۔

علی ظفر نے ملی نغمے کی لانچ کے موقع پر میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے کہا کہ یہ یوم پاکستان ہمارے لیے بہت اہم ہے کیونکہ پاکستان ایک ایسی صورت حال کا سامنا کررہا جہاں اتحاد کی بہت ضرورت ہے، یہاں سے ہمارا مستقبل طے ہونے والا ہے بلکہ ہوچکا ہے کچھ دن پہلے پیدا ہونے والی صورتحال میں پوری قوم افواج پاکستان کے ساتھ کھڑی تھی ہم ایک قوم بن کر ابھر رہے ہیں۔

ALI Zafer Press conf

علی ظفر نے کہا کہ ایک فنکار کی حیثیت سے یہ میری ذمہ داری ہے کہ قوم میں جذبہ بیدار کرنے کے لیے کوئی ایسا کام کروں جس سے نہ صرف پاکستان بلکہ پورے خطے میں امن ہو تاکہ لوگوں کی زندگی میں خوشحالی آئے کیوں کہ کروڑوں لوگ اس خطے میں غربت کی زندگی گزار رہے ہیں جب کہ امن ہی خوشحالی کی ضمانت ہے اسی لیے یہ گیت بنایا تاکہ اپنی افواج کو خراج تحسین پیش کرسکوں۔

گلوکار کا کہنا ہے کہ دہشت گردی کے خلاف جنگ میں ہماری فوج نے بہت قربانیاں دیں، جب قوم ایک جذبے کے ساتھ متحد ہوکر کھڑی ہوگی تو کوئی ہمیں شکست نہیں دے سکتا، ہم امن کے لیے ایک ہیں اور پوری دنیا کو امن کا پیغام دیتے ہیں، وزیراعظم عمران نے اپنی تقریر میں امن کی بات کی تھی جسے دنیا بھر میں سراہا گیا۔

علی ظفر نے یہ بھی کہا کہ میری ذمہ داری ہے کہ اپنے ملک کے لیے مثبت کام کروں اور کوئی ایسا عمل نہ کروں جس سے وطن کی بدنامی ہوجو فنکار اس موقع پر بھی خاموش رہے ان کے بارے میں کچھ نہیں کہہ سکتا اس وقت پورے ملک کو چاہیے کہ پاکستان اور افواج  پاکستان کو سپورٹ کریں۔

نریندر مودی پر بنی فلم میں اپنا نام دیکھ کر جاوید اختر برہم

بھارتی وزیر اعظم نریندر مودی کی زندگی پر بنائی گئی فلم ’پی ایم نریندر مودی‘ کے پوسٹر میں اپنا نام دیکھ کر معروف فلم ساز اور شاعر جاوید اختر برہم ہوگئے۔

جاوید اختر نے فلم کے جاری کیے گئے پوسٹر کو ٹوئیٹ کرتے ہوئے برہمی کا اظہار کیا اور لکھا کہ اگرچہ انہوں نے فلم کے کسی گانے کی شاعری نہیں لکھی پھر بھی ان کا نام شاعر کے طور پر شامل کیا گیا۔

انہوں نے واضح کیا کہ انہوں نے نریندر مودی کی زندگی پر بنائی گئی فلم کے گانوں کی شاعری نہیں لکھی۔

فلم کی ٹیم کی جانب سے جاری کیے گئے پوسٹر میں جہاں فلم کی کاسٹ، ہدایت کار، فلم کی کہانی لکھنے والے اور دیگر تکنیکی ٹیم ارکان کے نام شامل ہیں، وہیں فلم کے گانوں کی شاعری لکھنے والے شخص کا نام بھی شامل ہے۔

جاوید اختر کی جانب سے ٹوئٹر پر شیئر کیے گئے پوسٹر میں ان کا نام بطور شاعر پڑھا جا سکتا ہے۔

نریندر مودی کی زندگی پر بنائی گئی فلمکی ہدایات اومنگ کمار نے دی ہیں، جب کہ اس کی کہانی سندیپ سنگھ نے لکھی ہے۔

فلم کے جاری کیے گئے ٹریلر پر بھی لوگوں نے کئی اعتراضات اٹھائے تھے اور فلم کی ٹیم پر حقائق کو توڑ مروڑ کر پیش کرنے کے الزامات عائد کیے گئے۔

ٹریلر دیکھ کر اندازا ہوتا ہے کہ فلم میں کئی بڑے اور ہولناک حقائق کو غلط انداز میں پیش کرکے نریندر مودی کو ایک صاف اور سچا سیاستدان دکھانے کی کوشش کی گئی ہے۔

فلم کے ٹریلر کے آغاز میں نریندر مودی کی جانب سے مقبوضہ کشمیر کو ٹکڑے کرنے اور وہاں پر بربریت پھیلانے کے عزائم کو دکھایا گیا ہے۔

ساتھ ہی ٹریلر میں نریندر مودی کی جانب ریاست گجرات میں کیے جانے والے مسلمانوں کے قتل عام کو بھی غلط انداز میں پیش کیے جانے عندیہ ملتا ہے۔

فلم میں نریندر مودی کا کردار اداکار وویک اوبرائے نے ادا کیا ہے، فلم کو آئندہ ماہ 5 اپریل کو ریلیز کیا جائے گا۔

اس فلم کو ایک ایسے وقت میں ریلیز کیا جا رہا ہے جب کہ بھارت میں عام انتخابات ہونے جا رہے ہیں، فلم کو انتخابی مہم کا حصہ بھی قرار دیا جا رہا ہے۔

بھارت میں عام انتخابات کا پہلا مرحلہ 11 اپریل سے شروع ہوگا اور انتخابات 23 مئی تک جاری رہیں گے۔

’افغان اسٹار آئڈول‘ کا مقابلہ پہلی بار خاتون نے جیت لیا

فغانستان کے معروف میوزک ریئلٹی شو ’افغان اسٹار‘ کا مقابلہ پہلی بار ایک خاتون نے جیت کر نئی رقم تاریخ کردی۔

’افغان اسٹار‘ افغانستان کے ’طولو ٹی وی‘ پر نشر ہوتا ہے، جو ملک کا سب سے بڑا اور معروف میوزک ریئلٹی شو ہے۔

اس شو کا آغاز 2005 میں کیا گیا تھا اور رواں برس اس کا 14 واں سیزن پیش کیا گیا اور اس کا فائنل گزشتہ روز ہوا۔

’افغان اسٹار‘ کے مقابلے میں افغانستان بھر کے نئے گلوکار حصہ لیتے ہیں اور مقابلہ جیتنے والے گلوکار کے ساتھ معاہدے کے تحت نئے گانے ریلیز کیے جاتے ہیں۔

اس مقابلے کو جیتنے والے اب تک کے گلوکار افغانستان کی میوزک انڈسٹری میں اپنا مقام بنا چکے ہیں۔

اگرچہ ’افغان اسٹار آئڈول‘ میں پہلے بھی خواتین حصہ لیتی رہیں اور وہ فائنل تک پہنچتی رہیں، تاہم کوئی بھی خاتون اس مقابلے کو جیت نہیں پائی تھیں۔

زہرا الہام نے ایوارڈ جیتنے پر خوشی کا اظہار کیا—فوٹو: انسٹاگرام
زہرا الہام نے ایوارڈ جیتنے پر خوشی کا اظہار کیا—فوٹو: انسٹاگرام

پہلی بار افغانستان کی 20 سالہ زہرا الہام نے ’افغان اسٹار‘ کا مقابلہ جیت کر نئی تاریخ رقم کردی۔

’افغان اسٹار‘ کے آخری مراحل میں زہرا الہام سمیت 2 خواتین فائنل ہوئی تھیں اور ان کے مقابلے فائنل ہونے والے لڑکوں کی تعداد 4 سے زائد تھی۔

’افغان اسٹار‘ کے آخری تین مقابلوں میں صرف زہرا الہام ہی واحد خاتون تھیں اور فائنل میں انہوں نے مرد گلوکار کو پیچھے چھوڑ کر پہلی بار ایوارڈ جیت لیا۔

ایوارڈ اپنے نام کرنے کے بعد زہرا الہام نے خوشی کا اظہار کیا اور اس ایوارڈ کا کریڈٹ اپنے والدین اور گھروالوں کو بھی دیا، جنہوں نے انہیں اس مقابلے میں شریک ہونے اور اسے جیتنے کے لیے ان کی ہمت افزائی کی۔

ساتھ ہی زہرا الہام نے اپنی جیت افغانستان لڑکیوں کے نام کی اور انہیں پیغام دیا کہ وہ بھی آگے آئیں اور ایک نئی تاریخ رقم کریں۔ زہرا الہام سے قبل ’افغان اسٹار آئڈول‘ کے 13 ٹائیٹل مرد گلوکاروں کے نام ہی رہے ہیں۔

Google Analytics Alternative