انٹر ٹینمنٹ

شوبز فنکار بھی ’’یوم پاکستان‘‘ کی خوشیوں میں شریک

کراچی: یوم پاکستان کے موقع پر جہاں پوری قوم پاکستان کے رنگ میں رنگی نظر آرہی ہے وہیں شوبز فنکاروں نے بھی اس موقع پر پوری قوم کو مبارکباد کے پیغامات دئیے ہیں۔

ماہرہ خان

یوم پاکستان کے موقع پر پاکستان کی صف اول کی اداکارہ ماہرہ خان نے نہایت خوبصورت انداز میں پوری قوم کو مبارکباد دی۔ انہوں نے مشہور نظم ’’سوہنی دھرتی اللہ رکھے‘‘ کے اشعار اپنے ٹوئٹر اکاؤنٹ پر شیئر کرائےاور پورے پاکستان کو یوم پاکستان کی مبارکباد دی۔ ان اشعار میں پاکستان سے محبت اورپاکستان کے لیے قربانی جذبہ بھرپور انداز میں جھلکتا ہے۔

اشعار کچھ یوں ہیں’’سوہنی دھرتی اللہ رکھے، قدم قدم آباد تجھے

تیرا ہر اک ذرہ ہم کو اپنی جان سے پیارا، تیرے دم سے شان ہماری تجھ سے نام ہمارا‘‘

ماہرہ خان نے پہلی بارانگریزی کے ساتھ اردو میں بھی ٹوئٹ کی۔

شان

پاکستان شوبز کے صف اول کے اداکار شان نے ویڈیو پیغام کے ذریعے تمام ہم وطنوں کو یوم پاکستان کی مبارکباد دی، انہوں نے دلوں کو گرمانے والا شعرپڑھا

’’رگوں میں دوڑتے پھرنے کے ہم نہیں ہیں قائل

جو وطن کی خاطر نہ ٹپکے، پھر لہو کیاہے، پاکستان زندہ باد‘‘

علی ظفر

نامور پاکستانی گلوکارو اداکار علی  ظفر نے یوم پاکستان کے موقع پر ملک سے محبت کے جذبے سے لبریز ملی نغمہ ’’جان دے دیں گے‘‘ریلیز کیاہے۔ اس ملی نغمے کے ذریعے انہوں نے پاکستان کے گمنام ہیروز کو خراج تحسین پیش کیا ہے۔

فیصل قریشی

اداکار فیصل قریشی پاکستان کے ہر اہم موقع پر اپنے خیالات کا اظہار کرنا کبھی نہیں بھولتے، یوم پاکستان کے موقع پر بھی انہوں نے23 مارچ کے حوالے سے ایک خوبصورت تصویر شیئر کی اور پاکستان زندہ باد کا پیغام دیا۔

وینا ملک

اداکارہ وینا ملک نے بانی پاکستان قائد اعظم محمد علی جناحؒ کی ایک خوبصورت تصویر اپنے سوشل میڈیا اکاؤنٹ پر شیئر کی اور بھارت کو پیغام دیا کہ’’بھارت کوئی قوم نہیں ہے اور نہ ہی کو ئی ملک ہے،  بلکہ یہ برصغیر ہے جہاں مختلف قومیتیں آباد ہیں۔‘‘

حمزہ علی عباسی

پاکستانی اداکارومیزبان حمزہ علی عباسی نے یوم پاکستان کی شاندار پریڈ کی تصویر اپنے سوشل میڈیا اکاؤنٹ پر شیئر کی جس میں صدر پاکستان ڈاکٹر عارف علوی، وفاقی وزیردفاع پرویز خٹک، وزیر اعظم پاکستان عمران خان اورملائیشیا کے وزیراعظم مہاتیر محمد ایک ساتھ کھڑے ہیں انہوں نے اس تصویر کے ذریعے پیغام دیاکہ وہ تمام قوتیں جوپاکستان کو تنہا کرنا چاہتی ہیں دیکھ لیں، اس تقریب میں نہ صرف چین کی عسکری قوت موجود ہے بلکہ ترکی، سعودی عرب، آذربائیجان اورمسلم امہ کے قابل تعظیم رہنما مہاتیر محمد موجود ہیں جو اس بات کا ثبوت ہے کہ پاکستان کو کوئی تنہا نہیں کرسکتا، اللہ اکبر!۔

علی ظفر کا یوم پاکستان پر نیا ملی نغمہ ’جان دے دیں گے‘ ریلیز

 لاہور: بین الاقوامی شہرت یافتہ گلوکار علی ظفر کا یوم پاکستان کی مناسبت سے ملی نغمہ ’جان دے دیں گے‘ ریلیز کردیا گیا۔

علی ظفر نے ملی نغمے کی لانچ کے موقع پر میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے کہا کہ یہ یوم پاکستان ہمارے لیے بہت اہم ہے کیونکہ پاکستان ایک ایسی صورت حال کا سامنا کررہا جہاں اتحاد کی بہت ضرورت ہے، یہاں سے ہمارا مستقبل طے ہونے والا ہے بلکہ ہوچکا ہے کچھ دن پہلے پیدا ہونے والی صورتحال میں پوری قوم افواج پاکستان کے ساتھ کھڑی تھی ہم ایک قوم بن کر ابھر رہے ہیں۔

ALI Zafer Press conf

علی ظفر نے کہا کہ ایک فنکار کی حیثیت سے یہ میری ذمہ داری ہے کہ قوم میں جذبہ بیدار کرنے کے لیے کوئی ایسا کام کروں جس سے نہ صرف پاکستان بلکہ پورے خطے میں امن ہو تاکہ لوگوں کی زندگی میں خوشحالی آئے کیوں کہ کروڑوں لوگ اس خطے میں غربت کی زندگی گزار رہے ہیں جب کہ امن ہی خوشحالی کی ضمانت ہے اسی لیے یہ گیت بنایا تاکہ اپنی افواج کو خراج تحسین پیش کرسکوں۔

گلوکار کا کہنا ہے کہ دہشت گردی کے خلاف جنگ میں ہماری فوج نے بہت قربانیاں دیں، جب قوم ایک جذبے کے ساتھ متحد ہوکر کھڑی ہوگی تو کوئی ہمیں شکست نہیں دے سکتا، ہم امن کے لیے ایک ہیں اور پوری دنیا کو امن کا پیغام دیتے ہیں، وزیراعظم عمران نے اپنی تقریر میں امن کی بات کی تھی جسے دنیا بھر میں سراہا گیا۔

علی ظفر نے یہ بھی کہا کہ میری ذمہ داری ہے کہ اپنے ملک کے لیے مثبت کام کروں اور کوئی ایسا عمل نہ کروں جس سے وطن کی بدنامی ہوجو فنکار اس موقع پر بھی خاموش رہے ان کے بارے میں کچھ نہیں کہہ سکتا اس وقت پورے ملک کو چاہیے کہ پاکستان اور افواج  پاکستان کو سپورٹ کریں۔

نریندر مودی پر بنی فلم میں اپنا نام دیکھ کر جاوید اختر برہم

بھارتی وزیر اعظم نریندر مودی کی زندگی پر بنائی گئی فلم ’پی ایم نریندر مودی‘ کے پوسٹر میں اپنا نام دیکھ کر معروف فلم ساز اور شاعر جاوید اختر برہم ہوگئے۔

جاوید اختر نے فلم کے جاری کیے گئے پوسٹر کو ٹوئیٹ کرتے ہوئے برہمی کا اظہار کیا اور لکھا کہ اگرچہ انہوں نے فلم کے کسی گانے کی شاعری نہیں لکھی پھر بھی ان کا نام شاعر کے طور پر شامل کیا گیا۔

انہوں نے واضح کیا کہ انہوں نے نریندر مودی کی زندگی پر بنائی گئی فلم کے گانوں کی شاعری نہیں لکھی۔

فلم کی ٹیم کی جانب سے جاری کیے گئے پوسٹر میں جہاں فلم کی کاسٹ، ہدایت کار، فلم کی کہانی لکھنے والے اور دیگر تکنیکی ٹیم ارکان کے نام شامل ہیں، وہیں فلم کے گانوں کی شاعری لکھنے والے شخص کا نام بھی شامل ہے۔

جاوید اختر کی جانب سے ٹوئٹر پر شیئر کیے گئے پوسٹر میں ان کا نام بطور شاعر پڑھا جا سکتا ہے۔

نریندر مودی کی زندگی پر بنائی گئی فلمکی ہدایات اومنگ کمار نے دی ہیں، جب کہ اس کی کہانی سندیپ سنگھ نے لکھی ہے۔

فلم کے جاری کیے گئے ٹریلر پر بھی لوگوں نے کئی اعتراضات اٹھائے تھے اور فلم کی ٹیم پر حقائق کو توڑ مروڑ کر پیش کرنے کے الزامات عائد کیے گئے۔

ٹریلر دیکھ کر اندازا ہوتا ہے کہ فلم میں کئی بڑے اور ہولناک حقائق کو غلط انداز میں پیش کرکے نریندر مودی کو ایک صاف اور سچا سیاستدان دکھانے کی کوشش کی گئی ہے۔

فلم کے ٹریلر کے آغاز میں نریندر مودی کی جانب سے مقبوضہ کشمیر کو ٹکڑے کرنے اور وہاں پر بربریت پھیلانے کے عزائم کو دکھایا گیا ہے۔

ساتھ ہی ٹریلر میں نریندر مودی کی جانب ریاست گجرات میں کیے جانے والے مسلمانوں کے قتل عام کو بھی غلط انداز میں پیش کیے جانے عندیہ ملتا ہے۔

فلم میں نریندر مودی کا کردار اداکار وویک اوبرائے نے ادا کیا ہے، فلم کو آئندہ ماہ 5 اپریل کو ریلیز کیا جائے گا۔

اس فلم کو ایک ایسے وقت میں ریلیز کیا جا رہا ہے جب کہ بھارت میں عام انتخابات ہونے جا رہے ہیں، فلم کو انتخابی مہم کا حصہ بھی قرار دیا جا رہا ہے۔

بھارت میں عام انتخابات کا پہلا مرحلہ 11 اپریل سے شروع ہوگا اور انتخابات 23 مئی تک جاری رہیں گے۔

’افغان اسٹار آئڈول‘ کا مقابلہ پہلی بار خاتون نے جیت لیا

فغانستان کے معروف میوزک ریئلٹی شو ’افغان اسٹار‘ کا مقابلہ پہلی بار ایک خاتون نے جیت کر نئی رقم تاریخ کردی۔

’افغان اسٹار‘ افغانستان کے ’طولو ٹی وی‘ پر نشر ہوتا ہے، جو ملک کا سب سے بڑا اور معروف میوزک ریئلٹی شو ہے۔

اس شو کا آغاز 2005 میں کیا گیا تھا اور رواں برس اس کا 14 واں سیزن پیش کیا گیا اور اس کا فائنل گزشتہ روز ہوا۔

’افغان اسٹار‘ کے مقابلے میں افغانستان بھر کے نئے گلوکار حصہ لیتے ہیں اور مقابلہ جیتنے والے گلوکار کے ساتھ معاہدے کے تحت نئے گانے ریلیز کیے جاتے ہیں۔

اس مقابلے کو جیتنے والے اب تک کے گلوکار افغانستان کی میوزک انڈسٹری میں اپنا مقام بنا چکے ہیں۔

اگرچہ ’افغان اسٹار آئڈول‘ میں پہلے بھی خواتین حصہ لیتی رہیں اور وہ فائنل تک پہنچتی رہیں، تاہم کوئی بھی خاتون اس مقابلے کو جیت نہیں پائی تھیں۔

زہرا الہام نے ایوارڈ جیتنے پر خوشی کا اظہار کیا—فوٹو: انسٹاگرام
زہرا الہام نے ایوارڈ جیتنے پر خوشی کا اظہار کیا—فوٹو: انسٹاگرام

پہلی بار افغانستان کی 20 سالہ زہرا الہام نے ’افغان اسٹار‘ کا مقابلہ جیت کر نئی تاریخ رقم کردی۔

’افغان اسٹار‘ کے آخری مراحل میں زہرا الہام سمیت 2 خواتین فائنل ہوئی تھیں اور ان کے مقابلے فائنل ہونے والے لڑکوں کی تعداد 4 سے زائد تھی۔

’افغان اسٹار‘ کے آخری تین مقابلوں میں صرف زہرا الہام ہی واحد خاتون تھیں اور فائنل میں انہوں نے مرد گلوکار کو پیچھے چھوڑ کر پہلی بار ایوارڈ جیت لیا۔

ایوارڈ اپنے نام کرنے کے بعد زہرا الہام نے خوشی کا اظہار کیا اور اس ایوارڈ کا کریڈٹ اپنے والدین اور گھروالوں کو بھی دیا، جنہوں نے انہیں اس مقابلے میں شریک ہونے اور اسے جیتنے کے لیے ان کی ہمت افزائی کی۔

ساتھ ہی زہرا الہام نے اپنی جیت افغانستان لڑکیوں کے نام کی اور انہیں پیغام دیا کہ وہ بھی آگے آئیں اور ایک نئی تاریخ رقم کریں۔ زہرا الہام سے قبل ’افغان اسٹار آئڈول‘ کے 13 ٹائیٹل مرد گلوکاروں کے نام ہی رہے ہیں۔

علی ظفر کی جانب سے میشا شفیع پر ہرجانے کا کیس 15 اپریل تک نمٹانے کا حکم

لاہور: عدالت نے علی ظفر کے وکیل کی درخواست پر ماڈل میشا شفیع کے خلاف ہرجانے کا کیس 15 اپریل تک نمٹانے کا حکم دیا ہے۔

ڈسٹرکٹ اینڈ سیشن کورٹ لاہور میں علی ظفر کی جانب سے میشا شفیع کے خلاف ہرجانے سے متعلق کیس کی سماعت ہوئی جس میں مؤقف اختیار کیا گیا کہ کیس ایک سال سے زیر سماعت ہے، میشا شفیع مختلف طریقوں سے کیس کو التوا کا شکار کر رہی ہیں۔

سماعت کے دوران علی ظفر کے وکیل رانا انتظار نے درخواست کی کہ عدالت کیس کا ایک ماہ میں فیصلہ کرے کیونکہ میشا شفیع کے جھوٹے الزامات سے گلوکار کی ساکھ کو نقصان پہنچا ہے، عدالت میشا شفیع کو 100 کروڑ روپے ہرجانہ ادا کرنے کا حکم دے۔

علی ظفر کے وکیل کی استدعا پر ڈسٹرکٹ اینڈ سیشن جج نے ایڈیشنل سیشن جج شکیل احمد کو 15 اپریل تک کیس نمٹانے کا حکم دے دیا۔

’ہر دل کی آواز، پاکستان زندہ باد‘: یومِ پاکستان کا خصوصی ملی نغمہ جاری

پاک فوج کے شعبہ تعلقات عامہ (آئی ایس پی آر) نے یوم پاکستان کے لیے تیار کیا گیا جوش و جذبہ سے بھرپور خصوصی ملی نغمہ ’پاکستان زندہ باد‘ ریلیز کردیا۔

آئی ایس پی آر کی جانب سے ملی نغمے ’پاکستان زندہ باد‘ کے کئی پرومو جاری کیے گئے جن میں ملک کے مخلتف شعبوں سے تعلق رکھنے والی شخصیات کی خدمات کو اجاگر کیا گیا۔

ڈی جی آئی ایس پی آر میجر جنرل آصف غفور نے ہر دل کی آواز ’پاکستان زندہ باد‘ ملی نغمہ سوشل میڈیا پر ریلیز کردیا  جس میں پاکستان کی تینوں مسلح افواج سمیت پوری قوم کو خراج تحسین پیش کیا گیا ہے۔

یوم پاکستان کے لیے تیار کیا گیا خصوصی ملی نغمہ ‘پاکستان زندہ باد‘ 3 منٹ 46 سیکنڈ پر مشتمل ہے۔

Maj Gen Asif Ghafoor

@OfficialDGISPR

Pakistan Zindabad
پاکستان زندہ باد


🇵🇰 https://m.youtube.com/watch?feature=youtu.be&v=MjxGwfa5lxw 

6,460 people are talking about this

ملی نغمے ’پاکستان زندہ باد‘ میں گلوکار ساحر علی بگا کی لہوگرما دینے والی آواز شامل ہے جس کی شاندار شاعری عمران رضا نے تحریر کی ہے۔

یوم پاکستان کے موقع پر منعقد کل پریڈ میں بھی اس گانے کو پیش کیا جائے گا جس میں  ملائیشیا کے وزیراعظم مہاتیر بن محمد مہمان خصوصی ہوں گے۔

جب کہ آذربائیجان کے وزیردفاع جنرل ذاکر حسن اوف، بحرین فوج کے کمانڈر جنرل شیر محمد بن عیسیٰ الخلیفہ اور سلطنت آف عمان کے سرکاری عہدیداران بھی یوم پاکستان کی پریڈ میں شریک ہوں گے۔

کراچی کی کہانی سناتی ’لال کبوتر‘ نے دل جیت لیے

اداکار احمد علی اکبر اور منشا پاشا کی کامیڈی کرائم فلم ’لال کبوتر‘ کو پاکستان بھر میں ریلیز کردیا گیا۔

نہر گھر پروڈکشن کے تحت بنائی گئی اس فلم کی کہانی یوں تو دراصل ایک ایسی لڑکی پر ہے جو شوہر کے قتل سمیت کئی مسائل سے گزرتی ہے اور پھر ان سے خود کو بچاتی نظر آتی ہیں۔

تاہم فلم کی خاص بات یہ ہے کہ اس میں بیک وقت ایک سے زائد کہانیوں کو دکھایا گیا ہے۔

فلم کو اگر کراچی کے غریب ٹیکسی ڈرائیور کی دبئی جانے کی خواہش کی کہانی جائے تو بھی غلط نہیں ہوگا۔

فلم میں بیک وقت ایک سے زائد کہانیاں دکھائی گئی ہیں—اسکرین شاٹ
فلم میں بیک وقت ایک سے زائد کہانیاں دکھائی گئی ہیں—اسکرین شاٹ

اسی طرح فلم میں کراچی کے بلڈرز مافیا اور ان کی جانب سے صحافیوں سمیت دیگر افراد کو قتل کرنے اور انہیں دھمکانے کو بھی دکھایا گیا ہے۔

لال کبوتر کو چند لائنوں میں سمویا جائے تو یہ کراچی کے ایک ٹیکسی ڈرائیور یعنی احمد علی اکبر کی کہانی ہے جو اپنے حالات بہتر بنانے کے لیے دبئی جانا چاہتا ہے اور اس واسطے اسے 3 لاکھ روپے درکار ہوتے ہیں، جن کو حاصل کرنے کے لیے وہ اپنے جرائم پیشہ دوستوں کے ساتھ مل کر ٹیکسی چھینے جانے کا ڈرامہ رچاتا ہے۔

منشا پاشا نے مرکزی کردار ادا کیا ہے—اسکرین شاٹ
منشا پاشا نے مرکزی کردار ادا کیا ہے—اسکرین شاٹ

اس ڈرامے رچانے کے دوران اس کی ملاقات حادثاتی طور پر ایک لڑکی یعنی منشا پاشا سے ہوجاتی ہے جس کے صحافی شوہر یعنی علی کاظمی کو ایک بلڈر نے نامعلوم ٹارگٹ کلر کے ہاتھوں قتل کروادیا ہوتا ہے۔

ٹیکسی ڈرائیور اور مقتول صحافی کی بیوہ کی ملاقات کے بعد اس کہانی میں کئی نئے موڑ آتے ہیں جو شائقین کو اپنے سحر میں جکڑ لیتے ہیں۔

فلم کی کہانی علی عباس نقوی نے لکھی ہے جب کہ اس کی ہدایات کمال خان نے دی ہیں۔

فلم نے ریلیز کے پہلے ہی دن ہی شائقین کے دل جیت لیے اور خیال کیا جا رہا ہے کہ فلم اچھی کمائی کرنے میں کامیاب جائے گی۔

مہوش کے بعد عائشہ عمر’ تمغہ فخرِ پاکستان‘ ملنے پرتنقید کا نشانہ بن گئیں

کراچی: نامورپاکستانی اداکارہ مہوش حیات تمغہ امیتازملنے کے اعلان پرتنقید کا نشانہ بننے کے بعد اب اداکارہ وگلوکارہ عائشہ عمر ’’تمغہ فخرِ پاکستان‘‘ ملنے پر سوشل میڈیا صارفین کے نشانے پر آگئیں۔

ابھی مہوش حیات کو تمغہ امتیاز ملنے کا تنازعہ ختم نہیں ہوا تھا کہ ایک اور تنازعہ نے سر اٹھا لیا اس بار خوبرو پاکستانی اداکارہ وگلوکارہ و ماڈل عائشہ عمر تنقید کا نشانہ بنی ہیں۔ انہیں ’’تمغہ فخرِ پاکستان‘‘ ملنے پرشدید تنقید کا نشانہ بنایا جارہا ہے۔ حال ہی میں عائشہ عمر کو شوبز انڈسٹری میں 10 سالہ خدمات کے اعتراف میں ایک انٹرنیشنل فاؤنڈیشن کی جانب سے ’’تمغہ فخرِ پاکستان‘‘ اور’’گلوبل وومن ایوارڈ‘‘ سے نوازا گیا ہے۔ عائشہ عمر نے یہ خبر سوشل میڈیا پر شیئر کرکے اپنی خوشی اپنے چاہنے والوں کے ساتھ شیئرکرتے ہوئے  فاؤنڈیشن کی انتظامیہ کا شکریہ ادا کیا اورکہا کہ میں اپنے ملک کے لیے اسی طرح فخر کا باعث بنتی رہوں گی۔

تاہم سوشل میڈیا صارفین کو عائشہ کو ’’تمغہ فخرِ پاکستان‘‘ ملنا ہضم نہیں ہورہا اور انہوں نے مہوش حیات کی طرح عائشہ عمر کو بھی یہ اعزاز ملنے پر آڑے ہاتھوں لیتے ہوئے کہا کہ عائشہ عمر بطور ماڈل اچھی ہے پر یہ اس ایوارڈ کے قابل نہیں، کوئی ایک کام بتادو عائشہ کا جس کی وجہ سے انہیں اس ایوارڈ سے نوازا گیا ہے شرم کی بات ہے۔

کچھ صارفین نے عائشہ عمرکے ساتھ مہوش حیات کوبھی تنقید کا نشانہ بناتے ہوئے کہا پہلے مہوش اور اب عائشہ، ایسا کیا کیا ہے دونوں نے کہ انہیں اعزازات سے نوازا جارہاہے۔ دلچسپ بات یہ ہے کہ کچھ لوگوں کو عائشہ عمر کے ایوارڈ لینے پر نہیں بلکہ ان کے لباس پر اعتراض ہوا اورانہوں نے لباس پر تنقید کرتے ہوئے کہا اگر ایوارڈ لینا ہی تھا تو کم از کم پاکستانی لباس پہن کر جاتی لیکن ان لوگوں کو تو مغرب کی ہوا لگی ہوئی ہے۔

تاہم جہاں کچھ لوگوں نے عائشہ پر تنقید کی وہیں ان کے چاہنے والوں نے انہیں اس ایوارڈ سے نوازے جانے پر مبارکباد دی اور کہا آپ اس ایوارڈ کی حقدار تھیں اسی لیے یہ اعزاز آپ کو دیا گیا۔

Google Analytics Alternative