انٹر ٹینمنٹ

حمزہ عباسی کا اپنی زندگی کے اہم ترین فیصلے سے مداحوں کو آگاہ کرنے کا اعلان

کراچی: معروف ڈرامہ ’پیارے افضل‘ سے شوبز کی دنیا میں دھوم مچانے والے حمزہ علی عباسی کے ایک مبہم پیغام نے جہاں اُن کے مداحوں کی دل دھڑکنوں کو تیز کردیا وہیں سوشل میڈیا پر افواہوں کا بازار گرم ہوگیا ہے۔

حمزہ علی عباسی منجھے ہوئے معروف اداکار ہیں اور ان کی اپنے پاک وطن سے محبت بھی کسی سے ڈھکی چھپی نہیں، فلم ’وار‘ میں ان کے جذبوں کو دیکھا جا سکتا ہے، وقت کے ساتھ ساتھ اُن کی شخصیت میں نمایاں تبدیلی مذہب سے قربت ہے اور خود بھی وہ اس کا برملا اظہار کرچکے ہیں۔

یوں تو حمزہ علی عباسی سماجی رابطے کی ویب سائٹس پر زیب و زینت کا باعث بنتے ہیں لیکن اُن کی ایک ٹویٹ نے مداحوں کو رنجیدہ کردیا ہے، اپنی دل گرفتہ ٹویٹ میں لکھتے ہیں کہ ایک دہائی سے جاری سفر اب ختم ہونے جا رہا ہے، میں اس ماہ کے آخر میں ایک اہم اعلان کرنے والا ہوں تب تک سوشل میڈیا سے دور رہوں گا۔

ڈرامہ ہو یا فلم، حمزہ علی عباسی کی موجودگی کامیابی کی ضمانت سمجھی جاتی ہے، وقت کے ساتھ ساتھ ان کے فن میں نکھار آتا گیا ہے اور ان کی شخصیت میں بھی کئی تبدیلیاں رونما ہوئی ہیں جس کا وہ خود بھی وقتاً فوقتاً تذکرہ کرتے رہتے ہیں اس بنیاد پر کچھ صارفین کا خیال ہے کہ حمزہ علی عباسی شوبز کو خدا حافظ کہہ دیں گے۔

حال ہی میں ساتھی اداکارہ نمل کے ساتھ زندگی کے سب سے خوشگوار سفر کا آغاز کیا ہے لیکن شوبز کی چکا چوند دنیا کے سب سے نمایاں ستارے نے اپنی شادی کی رسومات کو نہایت مختصر اور سادہ رکھ کر سب کو حیران کردیا۔ اس بات کو بھی ان کے شوبز چھوڑنے کی دلیل قرار دیا گیا۔

اس سے بڑھ کر اپنی شادی کے اعلان کے حوالے سے حمزہ علی عباسی کی طویل پوسٹ میں بھی ان کی شخصیت میں تبدیلی کا واضح اشارہ ملتا ہے۔ ڈرامہ ’الف‘ میں ان کا کردار بھی ایک ایسے فلم میکر کا ہے جس کی شخصیت میں نمایاں تبدیلی پیدا ہوتی ہے۔

حمزہ علی عباسی اپنے ہم عصروں میں سب سے زیادہ سوشل میڈیا پر متحرک رہتے ہیں اور اپنی سیاسی نظریات کو کھل کر بیان کرتے ہیں۔ وہ اولین وقت سے تحریک انصاف اور وزیراعظم عمران خان کے مداح ہیں اور سوشل میڈیا پر ان کا مقدمہ لڑتے بھی نظر آتے ہیں۔ کچھ صارفین سمجھتے ہیں وہ سیاست سے کنارہ کش ہوجائیں گے۔

مداحوں کو حمزہ علی عباسی کے اعلان کا بے چینی سے انتظار ہے تاہم حمزہ جو بھی فیصلہ کرتے ہیں وہ اپنے مداحوں کے “پیارے افضل” ہی رہیں گے۔ حمزہ کے لیے سوشل میڈیا صارفین نے نیک تمناؤں کا اظہار کیا ہے۔

’معروف اداکار نے سب کے سامنے چھاتی سے پکڑا اور سب دیکھتے رہے‘

حال ہی میں ریلیز ہونے والی ہولی وڈ تھرلر فلم ’بلیک اینڈ بلیو‘ میں پولیس اہلکار کا کردار نبھانے والی برطانوی اداکارہ 43 سالہ ناؤمی حارث نے انکشاف کیا ہے کہ ایک معروف اداکار نے سب کے سامنے ان کو چھاتی سے پکڑا اور سب لوگ یہ منظر خاموشی سے دیکھتے رہے۔

ناؤمی حارث اس سے قبل 2017 میں خواتین کو جنسی ہراساں کرنے سے متعلق شروع ہونے والی مہم کے بعد کہہ چکی تھیں کہ انہیں کبھی بھی جنسی ہراساں نہیں کیا گیا اور نہ ہی کسی نے ان کا جنسی استحصال کیا۔

اداکارہ نے ’می ٹو مہم‘ شروع ہونے کے بعد ایک انٹرویو میں کہا تھا کہ اگرچہ می ٹو سے خواتین کے مسائل سامنے آئے ہیں اور اس سے بہت تبدیلی بھی آئی ہے لیکن انہیں اس طرح کے کسی تجربے سے نہیں گزرنا پڑا۔

ناؤمی حارث ماضی میں اعتراف کر چکی ہیں کہ انہیں کبھی ہراساں نہیں کیا گیا—فوٹو: رائٹرز
ناؤمی حارث ماضی میں اعتراف کر چکی ہیں کہ انہیں کبھی ہراساں نہیں کیا گیا—فوٹو: رائٹرز

لیکن اب اداکارہ نے انکشاف کیا ہے کہ انہیں بھی کم عمری میں سب کے سامنے جنسی استحصال کا نشانہ بنایا گیا۔

برطانوی اخبار ’دی گارجین‘ کو دیے گئے خصوصی انٹرویو میں اداکارہ نے نہ صرف جنسی ہراساں کرنے کے معاملے پر کھل کر بات کی بلکہ انہوں نے ’می ٹو مہم‘ شروع ہونے کے بعد ہونے والی تبدیلیوں پر بھی خیالات کا اظہار کیا۔

ناؤمی حارث نے دعویٰ کیا کہ آج سے 2 دہائیاں قبل ایک اوڈیشن کے دوران معروف اداکار نے ان کے اسکرٹ میں ہاتھ ڈال کر ان کی چھاتی کو پکڑا تھا اور یہ منظر سب لوگ دیکھتے رہے۔

اداکارہ جیمز بانڈ سیریز کی فلموں میں بھی نظر آ چکی ہیں—فوٹو: شٹر اسٹاک
اداکارہ جیمز بانڈ سیریز کی فلموں میں بھی نظر آ چکی ہیں—فوٹو: شٹر اسٹاک

اداکارہ نے الزام عائد کیا کہ معروف مرد اداکار کی جانب سے کی جانے والی اس نازیبا حرکت کو کاسٹنگ ڈائریکٹر سمیت فلم کی ٹیم میں شامل دیگر مرد حضرات نے دیکھا لیکن انہیں کسی نے بھی ایسا کرنے پر نہیں ٹوکا۔

ناؤمی حارث کے مطابق جب ان کے ساتھ یہ واقعہ پیش آیا تب ان کی عمر محض 20 برس تھی اور حیرانی کی بات یہ ہےکہ یہ منظر دیکھنے والی کسی بھی مرد کو یہ غلط نہیں لگا۔

ناؤمی حارث نے اگرچہ اپنے ساتھ ہونے والے اس واقعے کا تفصیلی ذکر کیا لیکن انہوں نے یہ حرکت کرنے والے اداکار کا نام نہیں لیا لیکن انہوں نے اس اداکار کو بہت ہی بڑا اور معروف اداکار قرار دیا۔

ناؤمی حارث کے مطابق انہیں سب کے سامنے ہراساں کیا گیا—فوٹو: اے پی
ناؤمی حارث کے مطابق انہیں سب کے سامنے ہراساں کیا گیا—فوٹو: اے پی

اداکارہ نے انٹرویو میں ’می ٹو مہم‘ کے حوالے سے بھی بات کی اور کہا کہ اس مہم سے بہت بڑی تبدیلی آئی اور خواتین کے ساتھ نامناسب رویہ اختیار کرنے والوں کا احتساب شروع ہوا۔

ناؤمی حارث کے مطابق می ٹو مہم سے خواتین کو طاقت اور خودمختاری کا احساس بھی ہوا اور انہوں نے اپنے ساتھ ہونے والی ناانصافیوں پر کھل کر بات کی۔

انٹرویو کے دوران اداکارہ نے اپنی پیشہ ورانہ زندگی پر بھی کھل کر بات کی اور بتایا کہ وہ مستقبل میں مزید فلموں میں دکھائی دیں گی۔

اداکارہ کے مطابق یہ نازیبا حرکت کرنے والے کو کسی نے کچھ نہیں کہا تھا —فوٹو: انسٹاگرام
اداکارہ کے مطابق یہ نازیبا حرکت کرنے والے کو کسی نے کچھ نہیں کہا تھا —فوٹو: انسٹاگرام

اداکارہ کی گزشتہ ماہ ریلیز ہونے والی تھرلر ڈراما فلم ’بلیک اینڈ بلیو‘ نے اچھی کمائی کی تھی اور جلد ہی ان کی فلم ’نو ٹائم ٹو ڈائی‘ ریلیز ہوگی۔

ناؤمی حارث کا تعلق انگلینڈ سے ہے ان کے والد کا تعلق افریقا سے تھا، اداکارہ نے بچپن سے اداکاری کی شروعات کی تھی اور وہ کئی سال تک بطور چائلڈ اسٹار کام کرتی رہیں۔

ناؤمی حارث فلموں کے علاوہ ٹی وی اور تھیٹر پر بھی کام کر چکی ہیں اور ان کی اب تک 3 درجن کے قریب فلمیں ریلیز ہوچکی ہیں۔

ناؤمی حارث کی پہلی فلم ’کرسٹ‘ 2001 میں ریلیز ہوئی تھی اور ان کی دیگر معروف فلموں میں ’پائریٹس آف دی کیریبیئن، 28 ڈیز لیٹر، میامی وائس، اسٹریٹ کنگز، اگست، سیکس اینڈ ڈرگس اینڈ راک اینڈ رول، مائی لاسٹ 5 گرل فرینڈ، جیمز بانڈ: اسکائے فال، اسپیکٹر، مون لائٹ اور موگلی: لیجنڈ آف دی جنگل‘ شامل ہیں۔

ریلیز سے قبل ’زندگی تماشا‘ عالمی ایوارڈ جیتنے میں کامیاب

فلم ساز سرمد کھوسٹ کی فیچر فلم ’زندگی تماشا‘ کا ٹریلر گزشتہ ماہ 29 ستمبر کو جاری کیا گیا تھا جس نے ریلیز ہوتے ہی دھوم مچادی تھی۔

فلم کے جاری کیے گئے مختصر دورانیے کے ٹریلر سے فلم کی کہانی سمجھنا مشکل ہے لیکن اندازہ ہوتا ہے کہ فلم کی کہانی انتہائی حساس اور اہم موضوع کے گرد گھومتی ہے۔

فلم کے ٹریلر میں عندیہ دیا گیا تھا کہ فلم میں مذہب اور سیاست کا لبادہ اوڑھے لوگ کس طرح اپنا مقاصد حاصل کرنے والے افراد کے حوالے سے بتایا گیا ہے۔

فلم میں کچھ کرداروں کو بظاہر اچھے مگر چھپے ہوئے خراب کرداروں میں بھی دکھایا گیا تھا۔

زندگی تماشا کے ٹریلر کو بہت سراہا گیا—اسکرین شاٹ
زندگی تماشا کے ٹریلر کو بہت سراہا گیا—اسکرین شاٹ

ٹریلر کے ساتھ یہ بھی بتایا گیا تھا کہ فلم کو رواں ماہ 2 اکتوبر سے جنوبی کوریا کے شہر بوسان میں ہونے والے عالمی فلم فیسٹیول میں پیش کیا جائے گا۔

بعد ازاں فلم ساز سرمد کھوسٹ نے سوشل میڈیا کے ذریعے بتایا تھا کہ ان کی فلم کو بوسان فلم فیسٹیول میں ’کم جیسوئک‘ ایوارڈ کے لیے بھی نامزد کیا گیا ہے۔

’کم جیسوئک‘ بوسان فلم فیسٹیول کا اعلیٰ ترین ایوارڈ ہے جو ہر سال کسی ایک فلم کو دیا جاتا ہے۔

فلم کو پاکستان میں ریلیز کرنے کی تاریخ کا اعلان نہیں کیا گیا —اسکرین شاٹ
فلم کو پاکستان میں ریلیز کرنے کی تاریخ کا اعلان نہیں کیا گیا —اسکرین شاٹ

اور اب یہی ایوارڈ پاکستانی اور بھارتی فلموں کو مشترکہ طور پر دے دیا گیا۔

شوبز ویب سائٹ ’ورائٹی‘ کے مطابق بوسان فلم کے اعلیٰ ترین ایوارڈ میں شمار ہونے والا ’کم جیسوئک‘ ایوارڈ پاکستانی فلم ’زندگی تماشا‘ اور بھارتی فلم ’مارکیٹ‘ کو مشترکہ طور پر دیا گیا۔

بھارتی فلم ’مارکیٹ‘ کی ہدایات پردیپ کرباہ نے دی ہیں اور اس فلم کا ٹریلر بھی گزشتہ ماہ 8 ستمبر کو جاری کیا گیا تھا۔

’مارکیٹ‘ کی کہانی بھارت کی شمالی ریاست میگھالیہ کے دارالحکومت ’شلونگ‘ میں واقع ’لیودھ‘ نامی ایک قدیم ترین بازار میں کام کرنے والے مختلف قبائل اور مذہب سے تعلق رکھنے والے افراد کی زندگی کے گرد گھومتی ہے۔

’مارکیٹ‘ میں دکھایا گیا ہے کہ کس طرح ایک ہی مارکیٹ میں الگ الگ نسلوں اور عقائد سے تعلق رکھنے والے افراد کس قدر ایک دوسرے سے مشابہت رکھتے ہیں اور کس طرح ان کے درد، ان کی خوشیاں اور مسائل ایک جیسے ہی ہیں۔

مارکیٹ کی کہانی بھارتی شہر شلونگ کے قدیم ترین بازار کے افراد کی زندگی کے گرد گھومتی ہے —اسکرین شاٹ
مارکیٹ کی کہانی بھارتی شہر شلونگ کے قدیم ترین بازار کے افراد کی زندگی کے گرد گھومتی ہے —اسکرین شاٹ

پاکستانی اور بھارتی فلم سازوں کو ایرانی فلم ساز نے ایوارڈ دیا۔

خیال رہے کہ پاکستانی فلم ’زندگی تماشا‘ کی کہانی نرمل بانو نے لکھی ہے اور اسے سرمد کھوسٹ نے بنایا ہے۔

فلم کی کاسٹ میں عارف حسین، سمیعہ ممتاز، علی قریشی اور ایمان سلیمان سمیت دیگر اداکار شامل ہیں۔

اہلیہ مجھ سے زیادہ قابل ہیں، حمزہ علی عباسی

کراچی: اداکارحمزہ علی عباسی کا کہنا ہے کہ ان کی اہلیہ نیمل خاوران سے زیادہ قابل ہیں۔

دوماہ قبل شادی کے بندھن میں بندھنے والے اداکار حمزہ علی عباسی اور اداکارہ نیمل خاور خبروں کی زینت بنے ہوئے ہیں۔ دونوں کی شادی انتہائی سادہ انداز میں ہوئی تھی جسے ان کے مداحوں کی جانب سے خوب سراہا گیا تھا۔

اداکار حمزہ علی عباسی نے انسٹاگرام پراسٹوری میں اہلیہ نیمل کی جانب سے بنائی گئی ایک پینٹنگ شئیرکرتے ہوئے  لکھا کہ نیمل نے یہ پینٹنگ ایک گھنٹے سے بھی کم وقت بنائی ہے۔

اداکار نے کہا کہ جب آپ کی اہلیہ آپ سے زیادہ قابل ہوں تو کیسا لگتا ہے؟ اوراپنے اس سوال کا جواب خود ہی دیتے ہوئے انہوں نے کہا کہ بہت زیادہ فخر اور خوشی محسوس ہوتی ہے۔

کایلی جینر شادی سے قبل دوسرے بچے کی خواہاں

دنیا کی کم عمر ترین سیلف میڈ ارب پتی خاتون کا اعزاز حاصل کرنے والی امریکی ماڈل و ٹی وی اسٹار 22 سالہ کایلی جینر اپنے فیشن، معاشقوں و انداز کی وجہ سے یوں تو ہمیشہ خبروں میں رہتی ہیں۔

تاہم گزشتہ چند ہفتوں سے وہ اپنے پارٹنر ریپر و گلوکار تریوس اسکاٹ سے علیحدگی کی وجہ سے خبروں میں تھیں۔

ابھی کایلی جینر اور تریوس اسکاٹ کے درمیان علیحدگی کی مکمل تصدیق بھی نہ ہوئی تھی کہ ماڈل نے مزید بچے پیدا کرنے کی خواہش کرکے سب کو حیران کردیا۔

دلچسپ بات یہ ہے کہ کایلی جینر کے ہاں فروری 2018 میں پہلی بچی کی پیدائش ہوئی تھی جس کے بعد رواں برس جولائی میں ماڈل نے خواہش ظاہر کی تھی کہ وہ شادی کے بندھن میں بندھ جائیں گی۔

لیکن کایلی جینر اور تریوس اسکاٹ کی شادی تاحال نہ ہوسکی البتہ ان دونوں کے درمیان علیحدگی کی خبریں سامنے آ رہی تھیں۔

تاہم اب ایک بار پھر کایلی جینر نے بچے پیدا کرنے کی خواہش کرکے سب کو حیران کردیا، ساتھ ہی ان کے مداحوں کو اس بات کی امید بھی ہوئی کہ ماڈل اور تریوس اسکاٹ کے تاحال تعلقات ہیں۔

امریکی میگزین ’پیپلز‘ کے مطابق حال ہی میں کایلی جینر نے انسٹاگرام پر مداحوں کے سوالوں کے جوابات دیتے ہوئے کھل کر بات کی اور کہا کہ بچے پیدا کرنے جیسا احساس اور کسی احساس میں نہیں۔

کایلی جینر اور تریوس اسکاٹ کے 2 سال سے تعلقات ہیں—فوٹو: ہیلو میگزین
کایلی جینر اور تریوس اسکاٹ کے 2 سال سے تعلقات ہیں—فوٹو: ہیلو میگزین

کایلی جینر نے ایک مداح کے سوال کا جواب دیتے ہوئے کہا کہ اگرچہ ان کی بچی ابھی ایک سال کی ہے، تاہم وہ چاہتی ہیں کہ ان کے ہاں دوسرے بچے کی بھی پیدائش ہو۔

ٹی وی اسٹار نے مداح کو جواب دیا کہ اگرچہ وہ چاہتی ہیں کہ ان کے ہاں مزید بچوں کی پیدائش ہو، تاہم وہ فوری طور پر بچے پیدا نہیں کرنا چاہتیں۔

مداحوں کے سوالوں کے جواب دیتے ہوئے ماڈل نے بتایا کہ انہوں نے اپنی بیٹی اسٹورمی کے بہن کا نام بھی سوچ رکھا ہے۔

کایلی جینر نے مداحوں کو پہلے بچے کی پیدائش کے وقت حمل سے ہونے والی پیچیدگیوں سے متعلق بھی بتایا اور اعتراف کیا کہ حمل کے دوران ان کی چھاتی پر نشانات پڑگئے تھے، تاہم انہیں حمل سے ہونا اور بچہ پیدا کرنے کا تجربہ انتہائی شاندار لگا۔

کایلی جینر فیشن مصنوعات اور میک اپ کا کاروبار بھی کرتی ہیں—فوٹو: انسٹاگرام
کایلی جینر فیشن مصنوعات اور میک اپ کا کاروبار بھی کرتی ہیں—فوٹو: انسٹاگرام

حیرانگی کی بات یہ ہے کہ کسی بھی مداح نے کایلی جینر سے شادی کرنے کا نہیں پوچھا ۔

کایلی جینر کی جانب سے مزید بچوں کی پیدائش کی خواہش کے بعد خیال کیا جا رہا ہے کہ وہ جلد ہی گلوکار تریوس اسکارٹ کے ساتھ تعلقات استوار کرلیں گی۔

کایلی جینر کے ہاں ہونے والی پہلی بچی بھی انہیں اس وقت ہوئی جب ان کے تعلقات تریوس اسکارٹ سے تھے۔

کایلی جینر امریکی ماڈل کنڈیل جینر کی بڑی بہن ہیں، وہ اپنے منفرد فیشن اور ماڈلنگ انداز کی وجہ سے دنیا بھر میں جانی جاتی ہیں، دنیا بھر کی کم عمر اور نوجوان لڑکیاں ان کے فیشن کو کاپی کرتی ہیں۔

کایلی اور تریوس 2017 سے ایک ساتھ رہ رہے ہیں اور ان کی ایک بچی بھی ہے—فوٹو: پیپلز میگزین
کایلی اور تریوس 2017 سے ایک ساتھ رہ رہے ہیں اور ان کی ایک بچی بھی ہے—فوٹو: پیپلز میگزین

کایلی جینر امریکا کی اداکار فیملی سے تعلق رکھتی ہیں، وہ کارڈیشین سسٹرز کی سوتیلی بہن ہیں، انہوں نے 9 سال کی عمر سے ریئلٹی ٹی وی شو میں شرکت کرنا شروع کی اور دیکھتے ہی دیکھتے دنیا بھر میں مشہور ہوگئیں۔

کایلی جینر کو امریکی اقتصادی جریدے فوربز نے گزشتہ برس جولائی میں دنیا کی کم عمر ترین سیلف میڈ ارب پتی خاتون قرار دیا تھا، اس وقت تک ان کے اثاثوں کی مالیت ایک ارب ڈالر تھی۔

یہ بھی پڑھیں: کایلی جینر دنیا کی کم عمر ترین سیلف میڈ ارب پتی خاتون

کایلی جینر اس وقت سال میں زیادہ کمائی کرنے والی دوسری شخصیت ہیں، فوربز کے مطابق دنیا کی سب سے زیادہ کمائی کرنے والی 100 شخصیات میں پہلے نمبر پر ٹیلر سوئفٹ اور دوسرے نمبر کایلی جینر ہیں۔

کایلی جینر کی سالانہ کمائی 17 کروڑ ڈالر کے لگ بھگ ہے یعنی وہ سالانہ پاکستانی 25 ارب روپے کے قریب کماتی ہیں۔

کایلی جینر نہ صرف فیشن کی وجہ سے دنیا بھر کی نوجوان لڑکیوں میں معروف ہیں بلکہ وہ سوشل میڈیا پر بھی متحرک رہتی ہیں اور انسٹاگرام پر وہ سب سے زیادہ فالو کی جانے والی شخصیت ہیں۔

کایلی جینر کے ہاں پہلی بچی فروری 2018 میں ہوئی تھی—فوٹو: انسٹاگرام
کایلی جینر کے ہاں پہلی بچی فروری 2018 میں ہوئی تھی—فوٹو: انسٹاگرام

عروج فاطمہ کی علی ظفر کے ساتھ ’لیلیٰ او لیلیٰ‘ کے ذریعے انٹری

موسیقار، گلوکار و اداکار علی ظفر نے پسماندہ ترین صوبے بلوچستان سے تعلق رکھنے والی جواں سالہ گلوکارہ عروج فاطمہ کے ساتھ اپنا کیا وعدہ مکمل کرتے ہوئے ان کے ساتھ گانے کی ویڈیو جاری کردی۔

لائٹنگل پروڈکشن کی جانب سے جاری کردہ ویڈیو کو محض ایک ہی دن میں 87 ہزار سے زائد بار دیکھا جا چکا ہے اور شائقین عروج فاطمہ کی آواز کی تعریف کر رہے ہیں۔

گانے کی ویڈیو کو پروڈیوس بھی علی ظفر نے کیا ہے جب کہ اس کی ہدایات عمیر خان نے دی ہیں۔

عروج فاطمہ کا تعلق کوئٹہ سے ہے—فوٹو: ٹوئٹر
عروج فاطمہ کا تعلق کوئٹہ سے ہے—فوٹو: ٹوئٹر

عروج فاطمہ کا تعلق بلوچستان کے دارالحکومت کوئٹہ سے ہے اور انہوں نے گزشتہ برس علی ظفر کے ساتھ گانا گانے کی خواہش کا اظہار کیا تھا۔

عروج فاطمہ نہ صرف علی ظفر بلکہ عابدہ پروین کی بھی بڑی مداح ہیں جب کہ ساتھ ہی وہ اقوام متحدہ کے بچوں سے متعلق کام کرنے والے ذیلی ادارے ’یونیسف‘ کی بھی ٹین ایج چیمیئن ہیں۔

عروج فاطمہ اور علی ظفر نے ماضی کے مقبول لوک بلوچی گانے ’لیلیٰ او لیلیٰ‘ کو جدید انداز میں پیش کرکے اپنے مداحوں کو تحفہ دیا ہے۔

’لیلیٰ او لیلیٰ‘ کو سب سے پہلے بلوچ لوک گلوکار استاد فیض محمد بلوچ نے گایا تھا جب کہ اسے ایرانی نژاد سویڈن کے بلوچی، پارسی و پشتو گلوکار روستم میر لاشاری نے بھی کوک اسٹوڈیو کے لیے گایا تھا۔

تاہم پرانے گانوں کے مقابلے علی ظفر اور عروج فاطمہ کے گانے میں کوئٹہ سمیت بلوچستان کے خوبصورت نظاروں کو شامل کرکے اسے منفرد انداز میں پیش کیا گیا ہے۔

عاطف اسلم کی آوازمیں ’حمد‘ سن کرمداح جھوم اٹھے

کراچی: عالمی شہرت یافتہ گلوکارعاطف اسلم نے کوک اسٹوڈیو 12 میں حمد ’وہی خدا ہے‘ اپنی آوازاورمنفرد انداز میں پڑھ کرمداحوں کو بہت محظوظ کیا۔

کوک اسٹوڈیو کی جانب سے گزشتہ روز عاطف اسلم کی آوازمیں پڑھی گئی حمد ’وہی خدا ہے‘ کی کچھ جھلکیاں شیئرکی گئی تھیں جو دیکھتے ہی دیکھتے وائرل ہوگئی تھیں جب کہ مداح اُن جھلکیوں سے تو محظوظ ہو ہی رے تھے تاہم وہ پوری حمد سننے کے لیے بھی بے تاب نظر آئے اور ان کا یہ انتظاراب ختم ہوگیا۔

عاطف اسلم کی آواز میں پڑھی گئی حمد جیسے ہی سوشل میڈیا پر اپ لوڈ کی گئی تو ویسے ہی مداحوں کا ہجوم امڈ آیا اور عاطف اسلم کے پڑھنے کے اندازسمیت حمد کی کمپوزیشن کی بے حد تعریف کی گئی۔

عاطف اسلم کی آواز اورحمد پڑھنے کے منفرد انداز کو دنیا بھر میں موجود ان کے مداحوں کی جانب سے خوب سراہا جارہا ہے۔

 

لاہور ہائیکورٹ: علی ظفر کے خلاف میشا شفیع کی درخواست مسترد

لاہور ہائی کورٹ نے گلوکارہ میشا شفیع کی جانب سے دائر کردہ درخواست کو مسترد کرتے ہوئے گورنر پنجاب کا فیصلہ درست قرار دے دیا۔

یاد رہے کہ گلوکارہ میشا شفیع نے گزشتہ سال اداکار و گلوکار علی ظفر کے خلاف جنسی طور پر ہراساں کرنے کی درخواست جمع کروائی تھی جسے صوبائی محتسب اور بعد ازاں گورنر پنجاب نے مسترد کردیا تھا۔

صوبائی محتسب نے میشا شفیع کے دعویٰ کو ‘تیکنیکی بنیادوں’ پر مسترد کیا تھا۔

جس کے بعد میشا شفیع اور ان کے وکیل نے گورنر پنجاب کے فیصلے کو چیلنج کرتے ہوئے کیس کو ہائی کورٹ لے جانے کا فیصلہ کیا۔

میشا شفیع کا درخواست میں مؤقف تھا کہ صوبائی محتسب پنجاب نے علی ظفر کے خلاف ہراساں کرنے کی درخواست خارج کی جس پر انہوں نے صوبائی محتسب کے فیصلے کے خلاف گورنر پنجاب سے اپیل کی۔

بعدازاں گورنر پنجاب نے قانون کے برعکس فیصلہ دیا، انہوں نے درخواست کی تھی کہ عدالت گورنر پنجاب کا فیصلہ کالعدم قرار دے۔

تاہم لاہور ہائی کورٹ کے جسٹس شاہد کریم نے بھی درخواست پر محفوظ فیصلہ سناتے ہوئے گورنر پنجاب کا میشا شفیع کی ہراساں کرنے سے متعلق درخواست مسترد کرنے کا فیصلہ برقرار رکھا۔

جبکہ عدالت نے خاتون محتسب کی جانب سے میشا شفیع کی درخواست مسترد کرنے کا فیصلہ بھی درست قرار دیا۔

خیال رہے کہ رواں سال 19 اپریل کو میشا شفیع نے ایک ٹوئٹر پیغام میں علی ظفر پر جنسی ہراساں کرنے کا الزام عائد کیا تھا۔

انہوں نے کہا تھا کہ ‘آج میں نے بولنے کا فیصلہ کیا ہے کیونکہ میرا ضمیر مجھے مزید خاموش رہنے کی اجازت نہیں دیتا، اگر ایسا کچھ میرے جیسے کسی فرد یعنی ایک معروف آرٹسٹ کے ساتھ ہوسکتا ہے تو پھر کسی بھی نوجوان لڑکی کے ساتھ ایسا ہوسکتا ہے جو انڈسٹری میں آگے بڑھنا چاہتی ہے اور اس نے مجھے بہت زیادہ فکرمند کردیا ہے’۔

انہوں نے دعویٰ کیا تھا کہ انہیں علی ظفر کے ہاتھوں ایک سے زائد مرتبہ جسمانی طور پر جنسی ہراساں ہونے کا سامنا کرنا پڑا۔

دوسری جانب اسی روز علی ظفر نے میشا شفیع کے الزامات پر ردعمل ظاہر کرتے ہوئے تردید کی۔

رواں ماہ بی بی سی ایشین نیٹ ورک کو ایک انٹرویو کے دوران علی ظفر نے کہا کہ ‘لوگ وقت کے ساتھ جان سکیں گے، وقت گزرنے کے ساتھ سب کچھ سامنے آئے گا اور سچائی خود سامنے آئے گی، میں شروع سے کہہ رہا ہوں کہ میں اس معاملے پر سوشل میڈیا پر لڑنا نہیں چاہتا کیونکہ میں پروفیشنل طریقہ اپنانا چاہتا ہوں، اور میں پروفیشل طریقے سے اس کا حل چاہتا ہوں اور قانون کے ذریعے انصاف ملے گا’۔

گزشتہ ڈیڑھ سال سے علی ظفر اور میشا شفیع کے درمیان قانونی تنازع جاری ہے جس میں اب تک علی ظفر کی جانب سے پیش کیے گئے 12 گواہوں کے بیانات قلم بند کیے جاچکے ہیں۔

عدالت میں پیش کیے گئے گواہوں نے میشا شفیع کے الزامات کو جھوٹا قرار دیا تھا۔

Google Analytics Alternative