- الإعلانات -

خاتون پر آوازیں کسنے والے اوباش طوطے کوحراست میں لے لیا گیا

Parrot-Abusive

بھارتی ریاست مہاراشٹر میں پیش آنے والے  ایک انوکھے واقعے میں  پولیس نے ایک طوطے سے تفتیش شروع کردی ہے جس پر ایک بوڑھی خاتون کو ستانے اور آوازیں کسنے اور گالیاں دینے کا الزام لگایا گیا ہے۔

مہاراشٹرا ریاست ضلع چندراپور کے راجوڑا پولیس اسٹیشن میں  پولیس نے ایک ایسے طوطے کو حراست میں لیا ہے جس کے  مالک پر شک  ہے کہ اس نے طوطے کو نازیبا الفاظ سکھائے ہیں۔ پولیس کے مطابق گاؤں کی 85 سالہ خاتون جان بائی نے اپنے سوتیلے بیٹے سریش پر الزام عائد کیا ہے کہ اس نے ’ہریال‘ نامی طوطے کو نازیبا الفاظ سکھائے ہیں اور جب وہ طوطے کےپاس سے گزرتی ہے تو وہ ہمیشہ اس کی طرف رجوع کرکے یہی نازیبا الفاظ بولتا ہے۔

پولیس نے شکایت موصول ہونے  کے بعد بوڑھی خاتون، سریش اورطوطے کو تھانے طلب کرلیا  تاہم طوطا پولیس والوں کی خاکی وردی کو بھانپتے ہوئے خاموش رہا اوراپنے پنجرے میں رہتے ہوئے کچھ نہیں بولا۔ پولیس تفتیش کے دوران یہ جاننا چاہتی تھی کہ طوطا کس طرح سے نازیبا الفاظ ادا کرتا ہے۔