- الإعلانات -

جنسی تفریق صرف مرد نہیں خواتین بھی کرتی ہیں: ودیا بالن

بھارتی اداکارہ ودیا بالن نے انکشاف کیا ہے کہ انہیں کئی مرتبہ صنفی تعصب کا سامنا کرنا پڑا ہے۔ اداکارہ ودیا بالن نے میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے اپنے ساتھ پیش آنے والے ایک واقعے کا تذکرہ کیا۔

ودیا بالن کا کہنا تھا کہ ایک مرتبہ کھانے کی میز پر مجھے سب نے تعجب کی نظر سے دیکھا اور پوچھا کہ تمہیں کھانا پکانا نہیں آتا؟ اس پر جواب دیا کہ نہیں مجھے اور میرے شوہر سدھارتھ کو کھانا بنانا نہیں آتا۔ اداکارہ نے اعتراف کیا کہ مجھے صنفی تعصب کا سامنا کرنا پڑا اور گھر آئے مہمانوں نے خاص طور پر مجھے کہا کہ تمہیں کھانا بنانا آنا چاہیے۔

انہوں نے کہا کہ جنسی تفریق محض مرد حضرات کی طرف سے ہی نہیں بلکہ خواتین کی طرف سے بھی کی جاتی ہے۔
انٹرویو کے دوران ودیا بالن نے بتایا کہ میری والدہ ہمیشہ مجھے کہتی رہیں کہ کھانا پکانا سیکھو لیکن میرا جواب یہ ہی ہوتا تھا کہ میں کیوں سیکھوں؟ میں اتنے پیسے کماؤں گی کہ باورچی رکھ سکوں یا کسی ایسے شخص کے ساتھ شادی کروں گی جو کھانا پکانا جانتا ہو۔

خیال رہے کہ اس سے قبل ودیا بالن کئی مرتبہ تنقید کی زد میں رہیں، اداکارہ کو ان کے وزن بڑھنے کے بعد صارفین کی جانب سے تنقید کا نشانہ بنایا گیا تھا۔