- الإعلانات -

حریم شاہ پاکستان سے یو کے اتنا بڑا اماؤنٹ لے کر کیسے گئیں، منی لانڈرنگ کے خلاف کی تحقیقات شروع

وفاقی تحقیقاتی ادارے (ایف آئی اے ) نے ٹک ٹاکر حریم شاہ کے خلاف منی لانڈرنگ کی تحقیقات شروع کرتے ہوئے برطانیہ کی نیشنل کرائم ایجنسی کو خط لکھنے کا فیصلہ کر لیا۔

ایف آئی اے سندھ کے ترجمان کےمطابق حریم شاہ کا اصل نام فضا حسین ہے ، خط میں نیشنل کرائم ایجنسی سے کارروائی کرنے کی درخواست کی جائے گی ، ویڈیو میں خاتون بھاری رقم منتقلی کا اعتراف کررہی ہیں جبکہ خاتون کے ویزے ،امیگریشن ،اور سفری دستاویزات کی تفصیلات حاصل کر لی گئی ہیں۔

ترجمان نے مزید کہا کہ خاتون کے خلاف فارن ایکسچینج قوانین کے تحت کارروائی کی جارہی ہے ، خاتون نے 10 جنوری کی رات کراچی انٹرنیشنل ائیرپورٹ سے قطر کے شہر دوحہ کیلئے سفر کیا تھا جبکہ ٹک ٹاکر نے بھاری رقم کے ساتھ ویڈیو اپلوڈ کی تھی جبکہ ویڈیو میں خاتون کے ہاتھوں میں بھاری کرنسی دیکھی جاسکتی ہے ۔

ایف آئی اے سندھ کے ترجمان نے کہا کہ غیر قانونی طریقے سے کرنسی منتقلی منی لانڈرنگ میں آتی ہے، حریم شاہ کے خلاف انکوائری درج کرکے تحقیقات کا آغاز کر دیاگیا ہے اور تحقیقات میں پاکستان کسٹمز ، ایئرپورٹ سکیورٹی فورس سے بھی معلومات حاصل کی جارہی ہیں ۔

قبل ازیں سوشل میڈیا پر جاری ویڈیو میں حریم شاہ نے کہا تھا کہ مجھے کسی نے نہیں روکا نہ ہی روک سکتا ہے، پہلی مرتبہ پاکستان سے یو کے اتنا بڑا اماؤنٹ لے کر آرہی تھی، پاکستانی پیسے اور پاسپورٹ سمیت کسی چیز کی وقعت نہیں۔