- الإعلانات -

انوپم کھیر نئی فلم میں منموہن سنگھ کا روپ دھاریں گے

بالی ووڈ کے ہدایت کار وجے رتن سابق بھارتی وزیراعظم منموہن سنگھ کی زندگی پر فلم بنارہے ہیں جس میں مرکزی کردار کے لیے سینئر اداکار انوپم کھیر کو لینے کا فیصلہ کیا گیاہے۔

انوپم کھیر موجودہ حکمران جماعت بھارتیہ جنتا پارٹی کے ہم خیال تصور کیے جاتے ہیں اور کئی بار کانگریس کو تنقید کا نشانہ بھی بنا چکے ہیں۔

ایسے میں کانگریسی رہنما پر بننے والی فلم میں کام کرنے پر رضامندی ظاہر کرنے کو حیران کن سمجھا جا رہا ہے۔

من موہن سنگھ پربننے والی فلم 2019 میں بھارت میں عام انتخابات سے پہلے نمائش کے لیے پیش کی جائے گی جب کہ فلم کو پروڈیوس سنیل بوہرا کررہے ہیں اور اس کا اسکرین پلے معروف ہدایتکار ہنسل مہتا نے لکھا ہے۔

سابق بھارتی وزیراعظم کی زندگی پر بننے والی فلم ان کے میڈیا ایڈوائزر سنجے بارو کی کتاب ’’دی ایکسیڈنٹل پرائم منسٹر‘‘ پر مبنی ہے۔

فلمساز سنیل بوہرا نے فلم کو ہالی ووڈ ہدایتکار رچرڈ اٹین برگ کی 1982 کی فلم ’’گاندھی‘‘ سے زیادہ بڑی فلم قرار دیا ہے۔

اداکار انوپم کھیر بھی فلم میں کام کرنے کے لیے بیتاب ہیں۔

ایک انٹرویو میں انوپم کھیر نے فلم میں مرکزی کردار کی تصدیق کرتے ہوئے کہا کہ من موہن سنگھ کی زندگی پر بننے والی فلم میں کام کرنا میرے لیے اعزاز کی بات ہے جب کہ ان کا کردار نبھانا میرے لیے ایک چیلنج ہے جس کے لیے پوری طرح تیار ہوں۔

یاد رہے کہ 2014 میں سنجے بارو کی کتاب ’’دی ایکسیڈنٹل پرائم منسٹر‘‘نے بھارت میں طوفان کھڑا کردیا تھا اور کرپشن کی میگا اسکینڈل کی کہانیاں سامنے آئی تھیں۔

جب کہ انہوں نے کتاب میں من موہن سنگھ کو مکمل طور پر بے قصور اور بے بس وزیر اعظم قرار دیا تھا۔