- الإعلانات -

پاک-بھارت تعلقات، اوم پوری کا اہم بیان

لاہور: بولی وڈ سٹار اوم پوری نے باہمی مسائل پر امن طریقے سے حل کرنے کیلئے پاکستان اور ہندوستان کے درمیان غلط فہمیاں دور کرنے کی ضرورت پر زور دیا ہے۔لاہور کے الحمرا ہال میں جاری تین روزہ فلم فیسٹیول میں شرکت کے لیے آئے اوم پوری نے کہا کہ دونوں ملکوں کو ایک دوسرے کے خلاف انتشار پھیلانے والی مہم روکنی چاہیے۔فلم فیسٹیول کے پہلے سیشن میں عثمان پیرزادہ، اوم پوری اور سلمان شاہد نے بیٹھک سجائی اور پاک-انڈیا تعلقات کو موضوع بنایا۔اس موقع پر اوم پوری نے انڈیا میں پاکستانی چینلز نہ دکھانے اور گائے کا گوشت کھانے کے معاملے پر تحفظات کا اظہار کیا۔اوم پوری نے مودی سرکار کو آڑے ہاتھوں لیتے ہوئے کہا کہ دنیا بھر میں گائے کا گوشت کھایا جاتا ہے۔’انڈیا خود گائے کا گوشت برآمد کرتا ہے اور ملک میں جو لوگ گائے کا گوشت کھاتے ہیں اس پر کسی کو اعتراض نہیں ہونا چاہیے‘۔’انڈیا میں گائے کا گوشت کھانا کوئی ظلم کی بات نہیں۔ ظلم کا راستہ چھوڑ کر پیار کرنا ہوگا‘۔انہوں نے کہا کہ دنیا کا کوئی بھی ایسا مذہب نہیں جو بچوں کو مارنے کا حکم دے۔اس موقع پر بولی وڈ ہدایت کار مدھر بنڈھارکر کا کہنا تھا کہ پاکستان اور انڈیا کے لوگے بے پناہ ٹیلنٹ کے مالک ہیں، جس سے دونوں ملکوں کو استفادہ کرنا چاہیے۔فیسٹیول تین روز تک شرکاء کو پاکستان ہی نہیں بلکہ غیر ملکی شارٹ فلموں کے ذریعے تفریح فراہم کرتا رہے گا۔