- الإعلانات -

ڈرامہ فلم ’مور‘ آوسکر کی دوڑ سے باہر

جامی محمود کی ڈرامہ فلم ’مور‘ 88ویں آسکر ایوارڈز کی غیر ملکی زبان کی کیٹیگری کے لئے جگہ بنانے میں ناکام ہو گئی ہے۔غیرملکی جریدے ورائٹی کے مطابق اکیڈمی نے اس کیٹیگری کے لیے 9 فلموں کو شارٹ لسٹ کیا ہے جس میں جامی کی فلم ‘مور’ شامل نہیں ہے.اکیڈمی نے جن فلموں کو شارٹ لسٹ کیا ہے اسن میں بیلجیئم کے ہدایت کار جیکو وین ڈورمیل کی فلم ’دی برینڈ نیو ٹیسٹامنٹ‘، کولمبیا سے ہدایت کار سیرو گیورا کی فلم ’ایمبریس آف دی سرپنٹ‘، ڈنمارک سے ہدایت کار توبیس لنڈہولم کی فلم ’آ وار‘، فن لینڈ سے ہدایت کار کلاوس حارو کی فلم ’دی فرینسر‘، فرانس سے ہدایت کار ڈینز گیمز ارگووین کی فلم ’مستانگ‘، جرمنی سے ہدایت کار گیولیو ریسیاریلی کی فلم ’لیبیرنتھ آف لائس‘، ہنگری سے ہدایت کار لاسزلو نیمز کی فلم ’سب آف سول‘، آئر لینڈ سے ہدایت کار پیڈی بریتھناچ کی فلم ’وائوا‘ اور اردن سے ہدایت کار ناجی ابو نوور کی فلم ’تھیب‘۔’مور’ کے ایوارڈ کی دوڑ سے باہر ہونے کے باوجود تاہم ابھی بھی آسکر ایوارڈز میں پاکستان کی امیدیں زندہ ہیں۔پاکستانی ہدایت کار شرمین عبید چنائے کی فلم ’آ گرل ان دی ریور: دی پرائز آف فارگونس‘ بہترین دستاویزی فلم کی کیٹیگری میں شارٹ لسٹ کی گئی 9 فلموں میں شامل ہے۔شرمین عبید چنائے اور ہوم باکس آفس کی مشترکہ پروڈکشن میں بنی یہ دستاویزی فلم غیرت کے نام پر قتل کے موضوع پر مبنی ہے۔اس حوالے سے منتخب کی گئی آخری پانچ فلموں کا اعلان 14 جنوری کو کیا جائے گا۔