انٹر ٹینمنٹ

مومنہ مستحسن، عزیر جسوال کا گانا ‘ہمیشہ’ ریلیز

گلوکارہ مومنہ مستحسن نے اپنا نیا گانا ریلیز کردیا جس میں ان کے ہمراہ گلوکار عزیر جسوال نے پرفام کیا ہے۔

‘ہمیشہ’ نامی اس گانے کی ویڈیو میں بھی مومنہ مستحسن اور عزیر جسوال ایک دوسرے کو پسند کرتے نظر آئے۔

ویڈیو میں دکھایا گیا کہ عزیر اور مومنہ ایک ریسٹورنٹ میں کام کرتے ہیں لیکن وہاں نظر آنے والے باقی کردار بھی ان ہی کی شکل کے ہیں۔

اس گانے کی موسیقی کو سرمد غفور نے پروڈیوس کیا جبکہ اس کی ہدایات رضا شاہ نے دی ہیں۔

گزشتہ سال مومنہ مستحسن کا ایک اور گانا ریلیز ہوا تھا جس میں انہوں نے بھارتی گلوکار ارجن کننگو نے پرفارم کیا۔

خیال رہے کہ مومنہ مستحسن کو مقبولیت کوک اسٹوڈیو کے گانے ’آفریں آفریں‘ سے ملی۔

وہ بولی وڈ فلم ’ایک ولن‘ کے لیے بھی گانا گا چکی ہیں۔

نازیبا وڈیوز پر رابی پیرزادہ کے انتہائی قریبی شخص پر ہی انگلیاں اٹھنے لگیں

کراچی: معروف گلوکارہ رابی پیرزادہ کی وائرل ہونے والی نازیبا تصاویر اور ویڈیوز کی وجہ سے اُن کے انتہائی قریبی شخص پر ہی انگلیاں اٹھنے لگیں۔

نازیبا تصاویر اور ویڈیوز وائرل ہونے کی اصل وجہ جاننے کے سلسلے میں رابی پیرزادہ سے رابطہ کیا گیا تو ان کی نئی منیجر سارہ نے کہا کہ وہ اس وقت بات کرنے کی پوزیشن میں نہیں ہیں۔

رابی پیرزادہ کی منیجر نے انکشاف کرتے ہوئے بتایا کہ یہ درست ہے کہ ویڈیوز وائرل ہونے سے اب تک ان کی سابقہ منیجر سے کسی قسم کا کوئی رابطہ نہیں ہو پا رہا مگر یہ بات یقین سے نہیں کہ سکتے کہ رابی پیرزادہ کی نازیبا تصاویر اور ویڈیوز انہوں نے ہی وائرل کیں تاہم ایف آئی اے کی تحقیقات کے بعد ہی اصل حقائق سامنے آئیں گے۔

دوسری جانب ذرائع نے بتایا کہ رابی پیرزادہ کی نازیبا تصاویر اور ویڈیوز کلپ دبئی سے سوشل میڈیا پر وائرل ہوئی ہیں اور تب سے ان کی سابقہ منیجر بھی غائب ہیں۔

واضح رہے کہ کچھ روز قبل رابی پیرزادہ کی نازیبا تصاویر اور ویڈیوز سوشل میڈیا پر وائرل ہوئیں تھیں جس کے بعد انہوں نے شوبز انڈسٹری چھوڑنے کا اعلان کر دیا تھا۔

ماہرہ خان اقوام متحدہ کی خیر سگالی سفیر مقرر

اسلام آباد: بین الاقوامی شہرت یافتہ اداکارہ ماہرہ خان اقوام متحدہ کے ہائی کمیشن برائے مہاجرین کی خیر سگالی سفیر مقرر ہوگئیں ہیں۔

اسلام آباد میں اقوام متحدہ کے ہائی کمیشن برائے مہاجرین کی جانب سے ملک کی خیر سگالی سفیر ماہرہ خان کے اعزاز میں تقریب کا انعقاد کیا گیا۔ تقریب سے خطاب کرتے ہوئے ماہرہ خان کا کہنا تھا کہ میں خوش قسمت ہوں کہ اس نیک مقصد کے لئے میرا انتخاب ہوا اور میں اقوام متحدہ کے ادارہ برائے مہاجرین (یو این ایچ سی آر) کی شکر گزار ہوں کہ جنہوں نے مجھ پر اعتماد کیا، اللہ نے مجھے اس مقصد کیلئے چنا جس پر میں پوری اتروں گی۔

ماہرہ خان نے کہا کہ پاکستانی عوام نے افغان مہاجرین کو کھلے دل سے خوش آمدید کہا، یہی وجہ ہے کہ پاکستان 4 دہائیوں سے 40 لاکھ افغان مہاجرین کی مدد کر رہا ہے۔ ماضی میں مہاجرین کے مسائل کو اتنی اہمیت نہیں دی گئی لیکن یہ بات بھی اہم ہے کہ مہاجرین کا مسئلہ کسی ایک ملک کا نہیں پوری دنیا کا مسئلہ ہے۔

ابھی تک کسی اچھی فلم میں کام کیا ہی نہیں ، عائشہ عمر

کراچی: ٹی وی ڈراموں اور فلموں کی معروف پاکستانی اداکارہ عائشہ عمر نے کہا ہے کہ پاکستان کی فلم انڈسٹری صحیح ڈگر پر چل نکلی ہے اب یہاں بھی اچھی فلمیں بن رہی ہیں۔

وائس آف امریکا کو دئیے گئے انٹرویو میں عائشہ عمر نے کہا کہ پاکستان فلم انڈسٹری اب صحیح راہ پر چل پڑی ہے۔  اپنی سب سے پسندیدہ فلم کے بارے میں پوچھے گئے سوال پر انہوں نے ہنستے ہوئے کہا کہ “سب سے اچھی فلم تو ابھی بنی ہی نہیں، لیکن جلد بنے گی۔”

عائشہ عمر کافی عرصے سے اسکرین سے غائب تھیں جس کے بعد وہ اب ایک بار پھر فلمی اسکرین پر جلوہ گر ہوئی ہیں۔ ان کی نئی فلم “کاف کنگنا” 25 اکتوبر کو ریلیز ہو چکی ہے جب کہ کچھ مزید فلمیں بھی جلد ریلیز ہونے والی ہیں۔

فلمی پردے سے دو سال تک غیر حاضر رہنے سے متعلق عائشہ عمر نے بتایا کہ دو سال پہلے میں نے سوچا کہ “یہ جوانی پھر نہیں آنی” تو کیوں نہ دنیا ہی دیکھ لی جائے۔ اس لیے دنیا گھومنے نکل پڑی اور پچھلے دو سالوں میں بہت سی جگہوں کا سفر کیا۔

عائشہ عمر کے بقول اس عرصے کے دوران انہوں نے تین فلموں میں بھی کام کیا ہے جن میں سے ایک “کاف کنگنا” ریلیز ہو چکی ہے جب کہ “رہبرا” پر دوبارہ کام کا آغاز ہو چکا ہے۔ اپنی فلم “رہبرا” کے بارے میں بتاتے ہوئے عائشہ نے کہا کہ ’’رہبرا‘‘ کی شوٹنگ کا آغاز دو سال پہلے ہوا تھاجس میں اداکار احسن خان ان کے مقابل مرکزی کردار ادا کررہے ہیں۔ عائشہ نے کہا کہ کچھ مسائل کی وجہ سے فلم “رہبرا” کی شوٹنگ رک گئی تھی لیکن اب دوبارہ اس پر کام شروع ہونے جارہا ہے۔

عائشہ عمر نے مزید کہا کہ تیسری فلم کامران شاہد کی ہے جس کی شوٹنگ مکمل ہو چکی ہے اور پوسٹ پروڈکشن کا کام جاری ہے جس کی تکمیل کے بعد اسے ریلیز کیا جائے گا۔ اس کے علاوہ دو اور فلموں پر بھی جلد کام شروع ہونے والا ہے۔

فلم “کاف کنگنا” میں نبھائے گئے اپنے کردار سے متعلق عائشہ عمر نے بتایا کہ ان کا کردار ایک باہمت اور نڈر لڑکی گلناز کا ہے، جو اپنے خوابوں کو تعبیر دینا چاہتی ہے، اس سلسلے میں وہ بہت سنجیدہ نظر آتی ہے۔

ڈائیلاگ ’دوٹکے کی عورت‘ پر شوبز شخصیات کا ردعمل

کراچی: ڈراماسیریل ’میرے پاس تم ہو‘کے مشہور ڈائیلاگ’دو ٹکے کی لڑکی کے لیے 50 ملین‘کی بازگشت سوشل میڈیا سے نکل کر شوبز انڈسٹری اور کھلاڑیوں تک پہنچ چکی ہے اورفنکار و کھلاڑیوں کے اس ڈرامے اور ڈائیلاگ پر مثبت ومنفی تبصرے سامنے آرہے ہیں۔

اداکار ہمایوں سعید اورعائزہ خان کا مشہور ڈراما’میرے پاس تم ہو‘جہاں مقبولیت میں سب کو پیچھے چھوڑتا جارہا ہے وہیں اسکرین رائٹر خلیل الرحمان قمر کے ڈائیلاگ’دو ٹکے کی لڑکی‘ نے سوشل میڈیا پر نئی بحث کا آغاز کردیا ہے ۔ کئی سوشل میڈیا صارفین اس ڈائیلاگ کو سراہتے ہوئے کہہ رہے ہیں کہ لالچی، خود غرض اوردھوکے باز عورتوں کے ساتھ ایسا ہی ہونا چاہیئے جب کہ عورت کے حقوق اور برابری کی بات کرنے والی خواتین اس ڈائیلاگ کو عورت کی توہین قرار دیتے ہوئے خلیل الرحمان قمرپر تنقید کررہی ہیں۔

اداکارہ ومیزبان ثمینہ پیرزادہ نے سوشل میڈیا پر مشہور ہونے والے اس ڈائیلاگ پر تنقید کرتے ہوئے کہا ہے’’دو مردوں نے آپس میں مہوش کی قیمت طے کرلی اور پھر اسے دو ٹکے کا کہہ دیا۔یعنی عورت کی اپنی کوئی مرضی ہے ہی نہیں۔ واہ رے پیدار شاہی ذہن اور سوچ۔‘‘

وہیں دوسری طرف ’’ہم سفر‘‘، ’’اڈاری‘‘ جیسے کامیاب ڈراموں کی مصنفہ فرحت اشتیاق نے بھی سوشل میڈیا پر اس ڈائیلاگ پر تنقید کرتے ہوئے کافی لمبی چوڑی پوسٹ کی ہے۔ انہوں نے معاشرے کے دوہرے معیار کو آئینہ دکھاتے ہوئے لکھا، اگر عورت آدمی کے ساتھ دھوکا کرے تو کہا جاتا ہے۔ ’’دوٹکے کی عورت، بے حیا عورت،لالچی گھٹیا عورت، جہنم میں جائے گی، عورت تو ہے ہی فتنہ، اچھے آدمی کی زندگی تباہ کردی، پورے خاندان کی ناک کٹوادی، جاؤ مرجاؤ مگر واپس مت آنا، دو ٹکے کی عورت‘‘۔

لیکن جب آدمی عورت کے ساتھ  دھوکا کرے تو کہا جاتا ہے’’ وہ کسی دوسری عورت نے پھنسایا بیچارے کو، معاف کردو غلطی ہوگئی، بہک گیا تھا بیچارا، کالا جادو ہوگیا تھا بیچارے پر، اپنے بچوں کے لیے معاف کرنا پڑتا ہے، دل بھر جائے گا تو واپس تمہارے پاس ہی آئے گا آخر بیوی ہو، ان کی فطرت میں ہی انکار نہیں ہے، آزمائش تھی بیٹی تمہاری، اس کو برا مت بولو شوہر ہے تمہارا، صبر کرلو بیٹی سب ٹھیک ہوجائے گا۔

جہاں اس ڈرامے اورڈائیلاگ پر شوبز فنکاروں نے تنقید کی وہیں اداکار عمران عباس نے اس ڈرامے کو ماسٹر پیس قرار دیتے ہوئے کہا کہ ایسے ڈرامے دہائیوں میں بنتے ہیں جو ہمیشہ یاد رکھے جاتے ہیں۔ انہوں نے ڈرامے کے ہدایت کار، مصنف اور اداکاروں کو اتنی بہترین کاوش پیش کرنے پر سراہا۔

فیروز خان کی ماورا حسین کے ہمراہ کامیڈی فلم میں انٹری

کراچی: معروف اداکار فیروز خان نے ماورا حسین کے ہمراہ کامیڈی فلم میں انٹری کی تیاریاں مکمل کر لیں۔

’’رانگ نمبر‘‘، ’’رانگ نمبر ٹو‘‘ اور ’’مہرالنساء لو یو‘‘ جیسی کامیاب کامیڈی فلمیں بنانے والے اداکار و ہدایت کار یاسر نواز ایک بار پھر کامیڈی اور تھرل سے بھرپور فلم کے ساتھ آرہے ہیں، کامیڈی کے تڑکے سے بھرپور اس فلم میں چھوٹی اسکرین پر کامیابی کے جھنڈے گاڑنے والے فیروز خان مرکزی کردار ادا کریں گے جب کہ اُن کے ہمراہ ماورا حسین بھی اداکاری کے جوہر دکھاتی نظر آئیں گی۔

یاسر نواز نے ایک ویب سائٹ کو انٹرویو میں تصدیق کرتے ہوئے کہا کہ نئی آںے والی اس کامیڈی فلم میں فیروز خان اور ماورا حسین مرکزی کردار میں نظر آئیں گے جب کہ مجھ سمیت جاوید شیخ اور احمد حسن معاون کردار ادا کریں گے۔

یاسر نواز نے فیروز خان کی کاسٹ کے حوالے سے بتایا کہ  وہ اس کردار کے لئے بالکل موضوع ہیں۔ اور جہاں تک اداکارہ کی بات ہے تو میں ہمیشہ ہر فلم میں نئی اداکارہ کو سامنے لانے کے حق میں ہوں کیوں کہ اس سے قبل میں اپنی فلموں میں سہائے علی آبرو، ثناء جاوید اور نیلم منیر کے ساتھ کام کر چکا ہوں اس لئے اس فلم میں ماورا حسین کا انتخاب کیا گیا ہے۔

یاسر ںواز نے کہا کہ فلم کی شوٹنگ اگلے سال جنوری میں شروع کی جائے گی جب کہ فلم عید الفطر پر سنیما گھروں کی زینت بنے گی۔

’جوانی پھر نہیں آنی‘ کے بعد ہمایوں سعید اور واسع چوہدری کی فلم ’نرم گرم‘

کچھ دن قبل ہی اس بات کی تصدیق سامنے آئی تھی کہ آنے والی رومانٹک مصالحہ فلم ’لندن نہیں جاؤں گا‘ میں ہمایوں سعید اور مہوش حیات ایک بار پھر رومانس کرتے دکھائی دیں گے۔

ان دونوں کی جوڑی کو ’پنجاب نہیں جاؤں گی‘ میں بھی بہت سراہا گیا تھا اور اب دونوں ’لندن نہیں جاؤں گا‘ میں بھی ایک ساتھ دکھائی دیں گے۔

ساتھ ہی اس بات کی بھی وضاحت کی تھی کہ ’لندن نہیں جاؤں گا‘ سیکوئل نہیں ہے بلکہ یہ ’پنجاب نہیں جاؤں گی‘ سے مختلف ہوگی۔

اور اب خبر سامنے آئی ہے کہ ہمایوں سعید ’جوانی پھر نہیں آنی‘ کے ساتھی اداکار واسع چوہدری کی لکھی گئی اگلی فلم ’نرم گرم‘ کو بھی پروڈیوس کریں گے۔

جی ہاں،  اس بات کی تصدیق کی کہ وہ ہی واسع چوہدری کی آنے والی فلم ’نرم گرم‘ کو پروڈیوس کریں گے۔

مہوش حیات اور ہمایوں سعید لندن نہیں جاؤں گا میں بھی ایک ساتھ دکھائی دیں گے—اسکرین شاٹ
مہوش حیات اور ہمایوں سعید لندن نہیں جاؤں گا میں بھی ایک ساتھ دکھائی دیں گے—اسکرین شاٹ

ہمایوں سعید نے فلم کے حوالے سے تفصیلات بتائے ہوئے انکشاف کیا کہ فلم کی کہانی 2 مرد مرکزی اداکاروں کے گرد گھومتی ہے۔

انہوں نے اس بات کی بھی تصدیق کی ایک مرکزی مرد کا کردار واسع چوہدری ادا کریں گے، تاہم تاحال دوسرے اداکار کو کاسٹ کرنے کے حوالے سے کوئی پیش رفت نہیں ہوسکی۔

ساتھ ہی ہمایوں سعید نے بتایا کہ فلم کی مرکزی اداکاراؤں سمیت دیگر کاسٹ کے حوالے سے بھی کوئی فیصلہ نہیں کیا جا سکا۔

اداکار نے بتایا کہ اگرچہ یہ بھی واضح نہیں ہے کہ فلم کو کب تک ریلیز کیا جائے گا، تاہم اس کی شوٹنگ پاکستان میں ہی کی جائے گی۔

خیال کیا جا رہا ہے کہ ’نرم گرم‘ کے حوالے سے جلد ہی فلم کی ٹیم دیگر کاسٹ اور اسے ریلیز کرنے کی تاریخ کا اعلان کرے گی۔

واسع چوہدری اور ہمایوں سعید دونوں جوانی پھر نہیں آنی فلموں میں ایک ساتھ دکھائی دیے تھے—اسکرین شاٹ
واسع چوہدری اور ہمایوں سعید دونوں جوانی پھر نہیں آنی فلموں میں ایک ساتھ دکھائی دیے تھے—اسکرین شاٹ

’ای شارپ بینڈ‘ کی ’شبانہ‘ نے جوانوں کے دل جیت لیے

صوبہ سندھ کے دارالحکومت کراچی سے تعلق رکھنے والے میوزیکل بینڈ ’ای شارپ‘ نے اپنے ’پیپسی بیٹل آف دی بینڈز‘ میں پیش کیے گئے گانے ’او شبانہ‘ کی ویڈیو ریلیز کردی۔

’ای شارپ‘ نے ابتدائی طور پر ’او شبانہ‘ کو میوزیکل مقابلے پروگرام ’پیپسی بیٹل آف دی بینڈ‘ کے رواں برس نشر ہونے والے چوتھے سیزن میں پیش کیا تھا۔

’ای شارپ‘ کے اسی گانے کو ’پیپسی بیٹل آف دی بینڈز‘ کے ججز نے سنتے ہی سراہا تھا اور میوزیکل بینڈ کے اراکین نے تعریفیں بٹوری تھیں۔

اب ’ای شارپ‘ نے اسی گانے کو ’پیپسی بیٹل آف دی بینڈز‘ کے تعان سے جاری کردیا۔

’او شبانہ‘ نامی گانے کی ویڈیو 5 منٹ سے بھی کم دورانیے پر مبنی ہے اوراس میں اسکول کے طلبہ و طالبات کو دکھایا گیا ہے۔

گانے کی شاعری سمیت ویڈیو کو بھی سراہا جا رہا ہے—اسکرین شاٹ
گانے کی شاعری سمیت ویڈیو کو بھی سراہا جا رہا ہے—اسکرین شاٹ

گانے میں جوان سالہ اسکول کے طالب علم کو شبانہ نامی لڑکے کے عشق میں گرفتار ہوتے ہوئے دکھایا گیا ہے۔

گانے میں جہاں رومانس، جوانی، لڑکپن، اسکول کی زندگی اور محبت کو دکھایا گیا ہے، وہیں گانے میں تفریح بھی شامل کی گئی ہے اور مرکزی لڑکے کو گرمیوں سمیت ہر وقت ہاتھوں پر گلوز پہنے ہوئے دکھایا گیا اور اس کے اسی عمل پر ان کے کلاس فیلو انہیں چڑاتے دکھائی دیتے ہیں۔

گانے کو دو دن قبل ہی ریلیز کیا گیا تھا اور گانے نے ریلیز ہوتے ہی جوانوں کے دل جیت لیے، کئی افراد نے نہ صرف گانے کی میوزک بلکہ ویڈیو کو بھی سراہا۔

Google Analytics Alternative