- الإعلانات -

پاکستان کےلئے جاسوسی کے الزام میں بھارتی افواج کے7افسران برطرف

نئی دہلی :  بھارت نے پاکستان کیلئے جاسوسی کے الزام پر بری فوج کے تین اور فضائیہ کے دو افسروں کو برطرف کردیا۔ وزیر دفاع منوہر پاریکر نے پارلیمنٹ کے ایوان بالا (راجیہ سبھا) میں ارکان کے سوالوں کے جوابات دیتے ہوئے کہاکہ گزشتہ تین سال کے دوران پاکستانی خفیہ ایجنسی کیلئے مبینہ جاسوسی کرنے پر بری فوج کے تین اور فضائیہ کے دو افسران کو گرفتار کیا گیا اور انہیں ملازمت سے برطرف کیا گیا ہے ان میں سے ایک کو 7 سال قید بامشقت سنائی گئی ہے۔ انہوں نے کہاکہ بری فوج کے جن افسران کو برطرف کیا گیا وہ بہت بڑے عہدوں پر نہیں تھے۔ انہوں نے کہا کہ جاسوسی کے یہ واقعات ماضی میں بھی ہوتے رہے ہیں اور حاضر سروس فوجی اہلکاروں کو پاکستانی خفیہ ایجنسی کے ایجنٹوں کی طرف سے اختیار کئے جانیوالے طریقوں کے بارے میں معمول کے مطابق آگاہ کیا جاتا ہے۔ انہوں نے کہاکہ جن معاملات کے بارے میں جاسوسی کی جاتی ہے وہ ان میں فوج کی تعیناتی، نقل وحمل ، تربیتی مشقوں، اعلی افسران کی تعیناتیوں، فارمیشنز کی علامت اور تکنیکی نمبرز وغیرہ کے بارے میں معلو مات کی فراہمی شامل ہے۔ ایک سوال پر انہوں نے کہاکہ مجموعی طور پر 11 فوجی اہلکاروں کو آئی ایس آئی کے ساتھ تعلق کے الزام میں گرفتار کیا گیا جبکہ7سابق فوجیوں کو بھی ایسی سرگرمیوں پر حراست میں لیا گیا۔