- الإعلانات -

فرانس لیبائی عہدے داروں کے خلاف پابندیاں تجویز کرے گا

پیرس:  فرانس نے لیبیا میں قومی اتحاد کی حکومت کی تشکیل کی راہ میں حائل ہونے والے عہدے داروں کے خلاف یورپی یونین کی پابندیاں تجویز کرنے کا اعلان کیا ہے۔فرانسیسی وزیر خارجہ ڑاں مارک آریو نے ایک ٹی وی انٹرویو میں کہا ہے کہ ”میں انھیں پابندیوں کی دھمکی سے آزاد نہیں کررہا ہوں۔صورت واقعہ کچھ ہی ہو میں آیندہ سوموار کو برسلز میں اپنے خارجہ امور کے ہم منصبوں کو پابندیوں کی تجویز پیش کروں گا”۔انھوں نے کہا کہ ”ہم ایک طویل عرصہ تک انتظار نہیں کرسکتے ہیں”۔فرانسیسی وزیر خارجہ نے لیبیا میں قومی اتحاد کی حکومت کے قیام میں ذاتی مفاد کی خاطر حائل ہونے والوں کی مذمت کی ہے۔برسلز میں ایک سفارتی ذریعے نے بتایا ہے کہ فرانسیسی تجویز کے تحت لیبی عہد داروں پر یورپ آنے پر پابندی عاید کر دی جائے گی اور ان کے اثاثے منجمد کر لیے جائیں گے۔ان پابندیوں کا ہدف لیبیا کی بین الاقوامی سطح پر تسلیم شدہ پارلیمان کے اسپیکر عقیلہ صالح اور طرابلس میں جنرل نیشنل کانگریس کے اسپیکر نوری ابو سہمین اور اس حکومت کے سربراہ خلیفہ غویل ہوں گے۔