- الإعلانات -

شمالی کوریا ، جوہری ہتھیار سازی کی پالیسی کی باضابطہ منظوری

شمالی کوریا میں 40 سال میں پہلی مرتبہ جوہری ہتھیار سازی کی پالیسی کی باضابطہ طور پر منظوری دے دی گئی۔ پیر کو ذرائع نے کے مطابق شمالی کوریا کی حکومت ساز پیپلز کانگریس کے اجلاس میں پہلی مرتبہ باضابطہ طورپر جوہری ہتھیار سازی اور اس شعبہ میں بہتری لانے کی منظوری دی گئی ہے۔ پیپلزکانگریس کااجلاس گزشتہ جمعہ کوشروع ہواتھا جس میں فیصلہ کیاگیاکہ شمالی کوریا کی اقتصادی تعمیر و ترقی پر بھرپور توجہ دی جائے گی اور اس کے ساتھ سیلف ڈیفنسو نیوکلیئر فورس کو معیار اور مقدار دونوں لحاظ سے فروغ دیاجائے گا تاہم کہاگیاکہ شمالی کوریا اس وقت تک اپنے جوہری ہتھیار یا طاقت کو استعمال نہیں کرےگا جب تک ملک کی سلامتی و خود مختاری کے تحفظ کیلئے ان کا استعمال ناگزیر نہ ہو جائے۔ کانگریس میں آبنائے کوریا کے مرحلہ وار الحاق کی پالیسی پر بھی کام کیلئے عزم ظاہر کیاگیا۔ انہوںنے کہاکہ اگر جنوبی کوریا نے ہم سے جنگ کرنا چاہی تو ہم بھی الحاق کی پالیسی پس پشت ڈالتے ہوئے جنگ کریں گے۔ شمالی کوریا کی کانگریس کا اس سے قبل آخری اجلاس 1980میں ہوا تھاجب کم جونگ ال نئے لیڈر بنے تھے اس وقت کم جونگ ان پیدابھی نہیں ہوئے تھے۔