- الإعلانات -

طالبان سربراہ ملا اختر منصور ڈرون حملے میں شدید زخمی

طالبان سربراہ ملا اختر منصور ڈرون حملے میں شدید زخمی ہو گیا جبکہ اسکا ساتھی مارا گیا ۔

پینٹاگون کی جانب سے جاری بیان میں کہا گیا ہے کہ امریکی فورسز نے طالبان سربراہ ملا اختر منصور کی گاڑی پر ڈرون حملہ کیا جس کے نتیجے میں دو شدید زخمی ہو گیا جبکہ اس کا قریبی ساتھی مارا گیا تاہم ملا اختر منصور کی ہلاکت کی تصدیق نہیں کی جا سکتی۔

بیان میں مزید بتایا گیا ہے کہ ملا اختر منصو ر پر حملے کی منظور ی امریکی صدر باراک اوباما نے دی تھی جس کے بعد اسے پاک افغان سرحد کے قریب احمد وال میں  نشانہ بنایا گیا ۔ پینٹاگون کا کہنا ہے کہ ملا اختر منصور افغان حکومت اور طالبان کے درمیان مذاکرات میں بڑی رکاوٹ تھا ۔
ملا اختر منصور کے قافلے کو دو روز قبل  نشانہ بنایا گیا تھا تاہم پینٹاگون کی جانب سے حملے کی تصدیق آج سامنے آئی ہے ۔
دوسری جانب طالبان کے ترجمان نے اپنے بیان میں کہا ہے کہ ملا اختر منصور پر ڈرون حملے کی خبر بے بنیاد اور من گھڑت ہے جس میں کوئی صداقت نہیں ۔

امریکی سٹیٹ ڈیپارٹمنٹ کا کہنا ہے کہ حملے سے متعلق پاکستان اور افغان حکومت کا آگاہ کر دیا تھا تاہم امریکی کو ملا اختر منصور کی ہلاکت کا موقع ملا جس سے فائدہ اٹھایا گیا ۔

دوسری جانب امریکی خبر رساں ادارے نے دعویٰ کیا ہے کہ سینئرطالبان کمانڈرنےافغان طالبان امیر ملااخترمنصورکے مارے جانے کی تصدیق کردی ہے۔ امریکی میڈیا کا کہنا ہے کہ سینئر طالبان کمانڈر نے اپنے بیان میں کہا ہے کہ ملااخترمنصورڈرون حملے میں مارے گئےہیں