- الإعلانات -

استنبول: ایئرپورٹ پر3خودکش دھماکے اور فائرنگ، 41 افرادہلاک،147 زخمی

ترکی کے شہر استنبول کے اتاترک ایئرپورٹ پر تین خودکش دھماکوں میں اکتالیس افراد ہلاک اور ایک سو سینتالیس سے زائد افراد زخمی ہوگئے ہیں۔ ذرائع کے مطابق حملہ آوروں نے پہلے فائرنگ کی اور پھر سیکیورٹی چیک پوسٹ کے سامنے خود کو دھماکے سے اڑا لیا۔ دھماکوں کے بعد ایئرپورٹ بند کردیا گیا ہے۔ وزیراعظم نواز شریف اور امریکا کی جانب سے دھماکوں کی شدید مذمت کی گئی ہے۔ترک حکام کے مطابق تین حملہ آوروں نے ترکی کے شہر استنبول کے اتاترک ایئرپورٹ کے بین الاقوامی آمد کے ٹرمینل پر چیک پوسٹ کے قریب حملہ کردیا، دہشت گردوں کی جانب سے پہلے فائرنگ کی گئی اورپھر خود کو دھماکے سے اڑا لیا۔ دہشتگردوں کا ہدف ٹرمینل کا داخلی راستہ تھا۔ عینی شاہد کا کہنا ہے کہ پولیس افسر نے ایک حملہ آور کو قابو کرکے گرایا تو اس نے خود کو دھما کے سے اڑالیا، تاہم فوجی دستوں کی جانب سے ایئرپورٹ کو گھیرے میں لیکر سرچ آپریشن شروع کردیا گیا ہے۔ذرائع کے مطابق حملوں کے بعد کئی پروازوں کا رُخ موڑ دیا گیا، جبکہ پروازیں معطل ہونے پر مسافروں کو ہوٹل منتقل کردیاگیا ہے۔ سعودی وزارت خارجہ کے مطابق زخمیوں میں سات سعودی شہری بھی شامل ہیں۔ترک صدر کا کہنا ہے کہ دھماکے ملک کے خلاف پروپینگڈے کیلئے کئے گئے ہیں، جبکہ حملوں میں داعش کے ملوث ہونےکےشواہد ملے ہیں۔ ان کا کہنا تھا کہ دنیا کو دہشتگردی کے خلاف فیصلہ کن موقف اپنانا ہوگا۔وزیراعظم نوازشریف نے دھماکوں کی شدید مذمت کرتے ہوئے ترک حکومت اور عوام سے ہمدردی کا اظہار کیا ہے، جبکہ امریکا نے بھی مذمت کرتے ہوئے ترکی کے ساتھ اظہار یکجہتی کیا ہے اور ہرممکن تعاون کا یقین دلایا ہے۔