- الإعلانات -

مقبوضہ کشمیر، بھارتی فورسز کی فائرنگ سے 15 مظاہرین شہید، 200زخمی

مقبوضہ کشمیر میں نوجوان حریت پسند رہنما برہان وانی کی ہلاکت کے بعد حالات بدستور خراب ہیں۔ وادی کے مختلف علاقوں میں مظاہروں کا سلسلہ جاری ہے۔ بھارتی فورسز کی فائرنگ سے پندرہ مظاہرین شہید دو سو زخمی ہوگئے۔مقبوضہ کشمیر میں بھاری مظالم کا سلسلہ جاری ہے۔ مقبوضہ وادی میں نوجوان حریت پسند رہنما برہان وانی کی شہادت مکمل ہڑتال کی جارہی ہے۔ کئی اضلاع میں برہان وانی کے قتل کے خلاف ہزاروں لوگ سڑکوں پر ہیں اور بھارت مخالف مظاہرے جاری ہیں جبکہ بھارتی فورسز نے نہتے مظاہرین پر فائرنگ کر دی جس سے 15 مظاہرین شہید جبکہ 200 سے زائد زخمی ہو گئے۔حریت رہنماؤں نے سید علی گیلانی اور میرواعظ عمرفاروق نے برہان کی غائبانہ نماز جنازہ کی اپیل کی ہے۔ کٹھ پتلی انتظامیہ  نے یاسین ملک، شبیر شاہ، میر واعظ اور علی گیلانی کو گھروں میں نظربند کر دیا ہے۔ بھارتی سرکار نے مقبوضہ کشمیر میں انٹرنیٹ اور موبائل کی سہولت معطل کردی ہے۔ یونیورسٹیز اور کالجوں میں امتحانات بھی ملتوی کردیے گئے ہیں  جبکہ اضلاع کے درمیان رابطے بھی معطل ہیں