- الإعلانات -

بھارتی فوج کی فائرنگ سےجاں بحق کشمیریوں کی تعداد20 ہوگئی

مقبوضہ وادی میں حریت پسند برہان مظفر وانی کی شہادت کے خلاف احتجاج کے دوران قابض بھارتی فوج کی فائرنگ سےجاں بحق کشمیریوں کی تعداد 20 ہوگئی جبکہ 200 سے زائد زخمی ہیں ۔مقبوضہ وادی میں دوسرے روز بھی مکمل شٹر ڈاؤن ہڑتال ہے۔ حریت رہنما میرواعظ عمر فاروق کا کہنا ہے کہ حق خودارادیت کے مطالبے سے دست بردار نہیں ہوں گے۔مقبوضہ کشمیر کے مقبول ترین حریت پسند اور حزب المجاہدین کے نوجوان کمانڈر برہان مظفر وانی کی شہادت کے خلاف وادی میں آج بھی ہڑتال کی جارہی ہے اور ودی میں موبائل فون ، انٹرنیٹ سروس سمیت مواصلاتی نظام بدستور معطل ہے۔قابض فوجیوں نے ممکنہ احتجاج کوروکنے کےلیے پوری وادی میں کرفیونافذ کررکھا ہے ۔حریت رہنما گذشتہ روز سے قابض فوج کے ہاتھوں نظر بند ہیں جبکہ مظفر وانی کی شہادت کے خلاف ہونےوالےمظاہروں میں بھارتی فائرنگ سے شہید ہونےوالوں کی تعداد میں اضافہ ہوتاجارہا ہے ۔گذشتہ روز مقبوضہ کشمیر کی جدوجہد آزادی میں نئی روح پھونکنے والے برہان مظفر وانی کے جلوس جنازہ میں ہزاروں کشمیریوں نے شرکت کی جبکہ جابجا پاکستانی پرچم بھی لہرائے جاتے رہے ۔حریت رہنما میرواعظ عمر فاروق کا کہنا ہے کشمیری حق خودارادیت کے مطالبے سے دست بردار نہیں ہوں گے، بھارت دیکھ لے، کشمیر کی سڑکوں پر صرف عوام ہیں