- الإعلانات -

مقبوضہ کشمیر میں طاقت کا بہیمانہ استعمال کسی صورت قبول نہیں، اعزاز چوھدری

مقبوضہ کشمیر میں بھارتی فوج کی جار حیت سے 30 کشمیری شہید اور 450 سے زائد افراد زخمی ہو گئے۔ بھارتی مظالم کے خلاف اسلام آباد میں بھارتی ہائی کمشنر کو طلب کرکے احتجاج کیا گیا۔سیکرٹری خارجہ اعزاز چوھدری نے کہا ہے کہ بھارت مقبوضہ کشمیر میں ریاستی دہشت گردی کررہا ہے۔ مقبوضہ وادی میں حالیہ کشیدگی کو ہر سطح پر اُٹھایا جائےگا۔ دفتر خارجہ کے مطابق اسلام آباد میں بھارتی ہائی کمشنر کو طلب کر کے مقبوضہ کشمیر میں بھارتی فوج مظالم پر احتجاج کیا گیا۔سیکرٹری خارجہ اعزاز چودھری نے کہا کہ پرامن مظاہرین پر طاقت کا بے دریغ استعمال آزادی اظہار رائے اور پرامن احتجاج کے حق کی سنگین خلاف ورزی ہے۔طاقت کا بہیمانہ استعمال کسی صورت قابل قبول نہیں ہے۔پرامن مظاہرین پر بھارتی فورسز کی فائرنگ قابل مذمت ہے۔پاکستان نے بھارتی ہائی کمشنر سے مطالبہ کیا کہ کشمیریوں کی ہلاکتوں کے ذمہ دار افراد کے خلاف صاف شفاف انکوائری کی جائے۔جابرانہ اقدامات کشمیر کے بہادر عوام کو ان کے حق خودارادیت کے مطالبے سے نہیں ہٹاسکتے۔

برطانوی نشریاتی ادارے کو انٹرویو میں سیکرٹری خارجہ کا کہنا تھا کہ بھارت مقبوضہ کشمیر میں ریاستی دہشت گردی کررہا ہے، مقبوضہ کشمیر میں حالیہ کشیدگی کو ہر سطح پر اُٹھایا جائےگا۔ کشمیریوں کی ہلاکتیں ماورائے عدالت قتل ہیں ۔ادھر ترجمان سیکریٹری جنرل اقوام متحدہ بان کی مون کے مطابق،بان کی مون نے بھی مقبوضہ کشمیرکی صورتحال پر اظہارتشویش کیا ہے