- الإعلانات -

اندرون سندھ ہونے والے رینجرز آپریشن کی تفصیلات جاری

سندھ حکومت نے پاکستان رینجرز کو کراچی سمیت سندھ میں پولیس طرز کی کاررائیاں کرنے سے متعلق آرٹیکل 147 خصوصی اختیارات میں توسیع نہیں کی جس پر رینجرز نے صوبے میں آپریشن بند کرکے تین سال کے دوران اندرون سندھ کئے گئے آپریشنز کی تفصیلات جاری کردی ہیں۔ ترجمان رینجرز کے مطابق 5 ستمبر 2013 سے اب تک اندرون سندھ کے مختلف علاقوں میں جرائم پیشہ عناصر کیخلاف ٹارگٹڈ آپریشن کیے گئے۔ اس دوران سنگین جرائم میں ملوث 533 ملزمان کو گرفتار کیا گیا جن میں سے 478 کو قانونی کارروائی کے لئے پولیس کے حوالے کیا گیا۔ ترجمان رینجرز کے مطابق 55 ملزمان کو دیگر قانون نافذ کرنے والے اداروں کے حوالے کیا گیا۔

ترجمان رینجرز کے بیان کے مطابق اندرون سندھ کارروائیوں میں رینجرز کے دو افسران اور ایک جوان کی شہادت بھی ہوئی۔کارروائیوں میں ملزمان کی فائرنگ سے 2 جوان زخمی بھی ہوئے۔

ترجمان کے مطابق رینجرز نے اندرون سندھ سے 34 کالعدم اور 16 علیحدگی پسند تنظیموں کے کارکن گرفتار کیے۔ ترجمان اندرون سندھ سے متحدہ قومی موومنٹ کے عسکری ونگ کے 4 ملزمان کو بھی گرفتار کیا گیا۔

پانچ ستمبر کے بعد اندرون سندھ سے 127 غیرقانونی افغان باشندے بھی گرفتار کیے گئے۔ترجمان کا کہنا ہے کہ رینجرز نے 18 ڈاکو، 10 اسمگلرز، 11 غیرقانونی شکاری اور 24 منشیات فروش بھی پکڑے تاہم اب آپریشن بند کردیا گیا ہے