- الإعلانات -

فلپائن کے صدرنے اقوام متحدہ چھوڑنے کی دھمکی دیدی

منیلا: فلپائن کے صدر روڈ ریگو ڈوٹیرٹے نے دھمکی دی کہ ان کا ملک اقوام متحدہ کو چھوڑ بھی سکتا ہے کیوں کہ عالمی ادارے نے غیر قانونی منشیات کے خلاف ان کی حکومت کی خوںریز مہم کو ہدف تنقید بنایا تھا۔

ڈوٹیرٹے نے الزام عائد کیا کہ اقوام متحدہ اور اس کے ماہرین منشیات کا دھندا کرنے والے مشتبہ افراد کی ہلاکتوں کے سلسلے کو روکنے کا مطالبہ کرتے ہوئے فلپائن کے اندرونی معاملات میں مداخلت کر رہے ہیں۔ انہوں نے ان اقوام متحدہ کو ایک ’فاحشہ کے بیٹے‘ سے تشبیہ دیتے ہوئے کہا کہ اگر تم ہماری عزت نہیں کرتے تو ہم بھی تمہیں چھوڑ دیں گے۔ فلپائن کے صدر نے منشیات کے دھندے سے وابستہ افراد کو ہلاک کرنے پر سیکیورٹی اہلکاروں کو تحفظ اور انہیں خصوصی انعام دینے کا اعلان کر رکھا ہے۔

و اضح رہے کہ جون کو ڈوٹیرٹے کے برسراقتدار آنے کے بعد سے اب تک 1500 سے زائد افراد کو ہلاک کیا جا چکا ہے جن میں میں تقریباً 600 ایسے افراد ہیں جن پر منشیات کے دھندے سے وابستہ ہونے کا شبہ تھا،فلپائن کے صدر اپنے ملک میں سخت یا تیزابی بیانات دینے کی وجہ سے شہرت رکھتے ہیں اورکئی مرتبہ پہلے بھی اقوام متحدہ کے خلاف بیانات دینے والے فلپائنی صدر کا کہنا تھاکہ شاید ہمیں اقوام متحدہ سے الگ ہونے کا فیصلہ کرنا پڑے گا۔