- الإعلانات -

12 ہزار فٹ بلندی پر پھنسے تمام سیاحوں کو بچا لیا گیا

فرانس میں حکام کے مطابق پہاڑی سلسلے ایلپس میں کیبل کاریں خراب ہونے کی وجہ سے پھنس جانے والے تمام سیاحوں کو بحفاظت نکال لیا گیا ہے۔

یہ امدادی آپریشن جمعرات کی شب کیبل کار میں گزارنے والے 33 افراد کو بحفاظت نکالے جانے کے بعد مکمل ہوا ہے۔

حکام کا کہنا ہے کہ جمعرات کی دوپہر ماؤنٹ بلانک کے گلیشیئرز کے اوپر 12 ہزار فٹ کی بلندی پر 110 سیاح اس وقت کیبل کاروں میں پھنس گئے تھے جب تیز ہواؤں کی وجہ سے وہ آہنی رسے آپس میں الجھ گئے جن پر یہ کاریں چلتی ہیں۔

 

جمعرات کو 48 افراد کو ہیلی کاپٹروں سے ذریعے نکالا گیا تھا جبکہ زمین کے قریب موجود کیبل کاروں پھنسے 30 افراد کو رسیوں کے ذریعے اتار لیا گیا تھا۔

 

جمعرات کی شب تاریکی کی وجہ سے جب ریسیکیو آپریشن رکا تو ایک دس سالہ بچے سمیت 33 افراد وہاں موجود تھے جنھوں نے یہ شب ہوا میں معلق کیبل کاروں میں گزاری۔

کیبل کاروں میں موجود افراد کو کمبل، قوت بخش خوراک اور پانی کی بوتلیں پہنچا دی گئی تھیں۔

جمعے کی صبح امدادی کارروائیاں دوبارہ شروع ہوئیں اور چند گھنٹوں کے دوران ان 33 افراد کو بھی بحفاظت اتار لیا گیا۔

مقامی پولیس کے سربراہ سٹفین بوزون نے جمعے کو امدادی آپریشن کے حوالے سے خبررساں ادارے اے ایف پی کو بتایا تھا کہ ’ہم رات بھر ان کے ساتھ رابطے پر رہے تھے، اور لوگوں کو ٹھنڈ لگ رہی تھی۔‘

جمعے کی صبح ریسکیو آپریشن دوبارہ شروع کیا گیا

امدادی آپریشن میں فرانسیسی، اطالوی اور سوئس ٹیمیں شریک تھیں اور انھیں تین ہیلی کاپٹروں کی مدد حاصل تھی۔

خیال رہے کہ حادثے کا شکار ہونے والی کیبل کار فرانس میں واقع ایگوئیل ڈی میڈی نامی چوٹی کو اٹلی میں واقع پوائنٹ ہیلبرونر سے جوڑتی ہے اور اس سفر کے دوران سیاحوں کو ماؤنٹ بلانک کے مسحور کن نظارے دیکھنے کو ملتے ہیں۔