- الإعلانات -

مال گاڑی اور مسافر بس میں تصادم, پھاٹک کھلے رہ جانے کے باعث حادثہ پیش ایا

وفاقی وزیر ریلویز خواجہ سعد رفیق نے پھاٹک کے گیٹ کیپر اور اس کے انچارج کو معطل کر دیا اور حادثے کے ذمہ دار افراد پر مقدمہ درج کر کے انھیں گرفتار کرنے کا حکم دیا ہے۔

خواجہ سعد رفیق کی جانب سے حادثے میں ہلاک ہونے والے افراد کے ورثا کو دس، دس لاکھ اور زخمیوں کے لیے تین تین لاکھ روپے امداد کا اعلان کیا ہے۔

وزیراعلیٰ پنجاب میاں شہباز شریف کی جانب سے حادثے میں جانی ضیاع پر دکھ کا اظہار کیا ہے۔

خیال رہے کہ پاکستان میں پھاٹک کھلے رہ جانے کے باعث اور ریلوے لائن عبور کرتے ہوئے اکثر حادثات پیش آتے رہتے ہیں اور حکام خود تسلیم کرتے ہیں کہ اس وقت بھی مین ریلوے لائنز پر ایسے کراسنگ مقامات کی بڑی تعداد موجود ہے جہاں پر پھاٹک نہیں یا وہاں عملہ تعینات نہیں ہے۔

گذشتہ ماہ ملتان کے قریب پشاور سے کراچی جانے والی عوام ایکسپریس ایک مال گاڑی سے ٹکرا گئی تھی جس کے نتیجے میں چار افراد ہلاک اور درجنوں زخمی ہوئے تھے