- الإعلانات -

فوج اور رینجرز کے رول کو کم کر نے کیلئے ملک میں نیب کو خود مختار کر نا ہوگا،عمران خان

لاہور: تحر یک انصاف کے چیئر مین عمران خان نے کہا ہے کہ پو لیس کی نگرانی میں ضمنی انتخابات شفاف نہیں ہوسکتے فوج کو پو لنگ اسٹیشن کے اندر اور باہر تعینات کیا جا ئے‘ضمنی انتخابات میں (ن) لیگ کی کر پشن بارے بڑے بڑے انکشافات کر وں گا ‘حکمرانوں کی نااہلی اور کر پشن کی وجہ سے ملک میں فوج کا رول بڑھ رہا ہے ‘فوج اور رینجرز کے رول کو کم کر نے کیلئے ملک میں نیب کو آزاد اور خود مختار کر نا ہوگا۔ (ن) لیگ کے پاس اقتدار میں رہنے کا کوئی اخلاقی جواز نہیں اور خواجہ حسان کے بلامقابلہ منتخب ہونے کی انکوائری کی جائیگی اور ذمہ داروں کے خلاف کاروائی ہوگی۔ سپر یم کورٹ کے کسی حکم میں میرے ضمنی انتخابات کی مہم چلانے پر کوئی پابندی نہیں میں لاہور اور لودھراں میں بھر پور انتخابی مہم چلاو¿ں گا۔وہ ہفتے کے روز چےئر مین سیکرٹر یٹ لاہور میں پنجاب کے آرگنائزر چوہدری محمدسرور کے ہمراہ پر یس کا نفر نس کر رہے تھے جبکہ اس موقعہ پر سنٹر ل آرگنائزر جہانگیر خان تر ین ‘اپوزیشن لیڈر میاں محمودالر شید ‘محمد فضیل آصف ‘حامد خان ایڈ وکیٹ ‘عمر سرفراز چیمہ‘میاں اسلم اقبال ‘شفقت محمود ‘جمشید چیمہ اور دیگر بھی موجود تھے عمران خان نے پر یس کا نفر نس کے دوران کہا کہ لاہور میں ایس پی سی آئی اے عمر ورک اور ڈی ایس پی ریاض شاہ (ن) لیگ کی ضمنی انتخابات کی مہم چلارہے ہیں دونوں کے خلاف کاروائی کیلئے الیکشن کمیشن اور آئی جی پنجاب کو خط لکھ رہے ہیں انکے خلاف عدالت میں بھی جائیں گے۔ بلدیاتی انتخابات کے امیدوار غفار گجر کو بھی عمر ورک نے دھمکیاں دیں ، سخت کاروائی کر کے انکو عہدوں سے ہٹایا جائے۔ مسلم لیگ(ن) نے پو لیس کو ”گلو پو لیس “بنادیا ہے ‘شر یف برادارن سب سے زیادہ کر پٹ ہیں انکے اقتدار میں آنے سے انکی فیکٹریوں میں اضافہ ہوتا ہے‘ پشاور اےئر بیس پر جس طر ح کی دہشت گردی ہوئی ہے اسکو پو لیس نہیں صرف فوج ہی روک سکتی ہے ‘ اےئر بیس پر دہشت گردی معمولی بات نہیں اس کو صرف فوج ہی روک سکتی ہے۔انہوں نے کہا کہ مجھے سمجھ نہیں آئی کہ مجھے الیکشن کمیشن نے کیوں منع کیا میں کوئی صدر ‘وزیر اعظم یا وزیر نہیں ہوں میرے پاس کون سے فنڈز ہیں جو انتخابی مہم کیلئے استعمال کرو ں گا۔ انہوں نے کہا کہ (ن) لیگ نے پو لیس کو گلو بنا دیا ہے اور ہم اس حوالے سے مکمل ثبوت کے ساتھ الیکشن کمیشن کو خط لکھنے کے ساتھ ساتھ (ن) لیگ کی انتخابی مہم چلانے والوں کے نام ویب سائٹ پر دیں گے اور اقتدار میں آکر ایسے پولیس افسران کے خلاف سخت کاروائی کر یں گے۔ انہوں نے کہا کہ ہمیں پہلے سندھ اور کر اچی میں کر پشن نظر آئی ہے مگر شکر ہے کہ اب پیپلزپارٹی نے پنجاب کی کر پشن کی بات کی ہے۔ قوم کو بتائیں گے کہ نندی پور منصوبے کی لاگت22ارب سے کیسے 80ارب سے زائد ہوگئی قوم کو قائداعظم سولر اور ایل این جی کی کر پشن کے حوالے سے قوم کو تمام حقائق بتائیں گے۔اب شر یف برادارن 2نئی شوگز ملز لگا رہے ہیں جسکے خلاف عدالت نے بھی فیصلہ دیدیا ہے مگر اسکے باوجود ونوں شوگر ملز کا کام جاری ہے۔ انہوں نے کہا کہ پنجاب کی تمام اپوزیشن جماعتوں نے ریاض کیانی پر عدم اعتماد کا اظہار کر دیا ہے اب ریاض کیانی کے پاس کیا جواز رہ جا تا ہے کہ وہ الیکشن کمیشن میں بطور ممبر کام کریں۔ انہوں نے کہا کہ 4اکتوبر کو الیکشن کمیشن کے سامنے ہم بہت بڑا جلسہ کر نے جا رہے ہیں اور ہم حق اور سچ کیلئے اپنی جنگ جاری رکھیں گے۔ ایک سوال کے جواب میں عمران خان نے کہا کہ سندھ اور پنجاب میں لوگ پو لیس سے تنگ ہیں اور ملک سے کر پشن کا خاتمہ اور امن چاہتے ہیں لیکن کے پی کے میں پو لیس میں تمام فیصلے میرٹ پر ہوتے ہیں۔ انہوں نے کہا کہ سندھ میں نصیر اللہ بابر کے آپر یشن کے بعد ایم کیوایم نے آپر یشن میں حصہ لینے والے پو لیس افسران کو چن چن کر مارا ہے اور جو بھی لوگوں کو امن دیگا عوام انکو سپورٹ کر یں گے۔ انہوں نے کہا کہ ہم نے الیکشن کمیشن کو بتایا دیا ہے کہ (ن) لیگ ضمنی اور بلدیاتی انتخابات میں سر کاری وسائل استعمال کر رہی ہے اور میں (ن) لیگ سے پو چھتاہوں کہ (ن) لیگ کو ہمارے حافظ آباد میں کسان کنونشن کے بعد ہی کسان پیکج کا خیال آیا ہے ؟اصل میں یہ کسان پیکج بلدیاتی انتخابات میں دھاندلی کا منصوبہ ہے اور الیکشن کمیشن کو بھی اس غیر قانونی اقدام کا نوٹس لینا چاہیے کیونکہ الیکشن کمیشن کے شیڈول کے بعد فنڈز نہیں دے سکتے مگر نوازشر یف نے گلگت میں بھی ایسا کیا جہاں40ارب کے فنڈز دے دےئے ہیں۔ انہوں نے کہا کہ تحر یک انصاف کا بہت جلد دور آنیوالا ہے اور تحر یک انصاف اقتدار میں آکر ملک کو اندھیروں سے نجات دلائیں گے۔ انہوں نے کہاکہ 2013میں تحر یک انصاف تھی اور آج کی تحر یک انصاف اور ہے مگر جو ڈیشل کمیشن کے فیصلے کے بعد اس بات میں کوئی شک نہیں کہ عام انتخابات میں بدتر ین دھاندلی ہوئی ہے غلطیاں ایک دو ہزار ہو سکتی ہے مگر لوگ اتنے بے وقوف نہیں کہ عام انتخابات میں میرے حلقے میں53ہزار لوگوں نے غلط ووٹ ڈال دیئے ہیں۔