- الإعلانات -

تھریسامے نے بھارتی ویزا پالیسی میں ڈو مورکا مطالبہ مسترد کر دیا

لندن : بھارتی حکومت نے برطانوی وزیراعظم سے ویزا پالیسی میں ڈو مورکا مطالبہ کیا تو تھریسامے نے اپیل مسترد کرتے ہوئے کہا کہ بھارت کے لیے پہلے ہی برطانوی ویزا پالیسی میں اہم اقدامات کیے گئے ہیں۔ بھارت کے لیے ویزا کوٹا بڑھانے کی ضرورت نہیں ہے۔

مودی حکومت کی تھریسامے سے توقعات، ویزا پالیسی میں نرمی، زیادہ سے زیادہ بھارتی شہری برطانیہ میں کام اور بزنس کے لیے جانا چاہتے ہیں۔ برطانوی وزیراعظم نے مودی کو قانون کا سبق یاد دلا دیا۔ تھریسامے کا کہنا ہے کہ بھارتی تاجروں کے لیے ویزا پالیسی اور ایئرپورٹ پر مشکلات کا ازالہ کیا گیا ہے خاص سروس دی گئی ہے اس سے زیادہ نرمی نہیں ہوسکتی۔ برطانوی اخبار کی شہہ سرخی نے بھی تھریسامے کے بیان کی تصدیق کردی۔

مگر بھارتی میڈیا نے بجائے شرمندگی کے تھریسامے کے بیان کو یوں بیان کیا جیسے ویزا پالیسی کی ڈو مور کی اپیل پر فتح پالی ہو۔ این ڈی ٹی وی کی شہہ سرخی میں سب اچھا ہے کا راگ الاپا گیا۔

برطانوی وزیراعظم نے مودی حکومت کو بتایا کہ بھارت کے لیے ویزا کوٹہ بڑھانے کی ضرورت نہیں ہے، برطانیہ کی ویزا پالیسی دنیا کی بہترین سکیموں میں سے ایک ہے۔ بھارتی تاجروں اور سرمایہ داروں کے لیے رجسٹرڈ ٹریولرز سکیم متعارف کرائی گئی ہے۔

تھریسامے نے کہا کہ برطانیہ امید کرتا ہے کہ یورپی یونین سے علیحدگی کے بعد بھی سرمایہ کار برطانیہ پر اعتماد کریں گے اور معاملات معمول کے مطابق چلتے رہیں گے۔

تھریسامے، ٹریڈ سیکرٹری لیام فوکس اور وزیر تجارت گریگ ہینڈز کے علاوہ تینتس برطانوی کمپنی کے نمائندے بھارت میں اہم تجارتی دورے پر ہیں۔