- الإعلانات -

شامی حکومت اور اپوزیشن جماعتوں میں جنگ بندی کا معاہدہ طے

شام میں پانچ سالہ خانہ جنگی روکنے کے لیے ایک اور کوشش کی گئی ہے، شامی حکومت اور اپوزیشن جماعتوں کے درمیان جنگ بندی کے معاہدے پر اتفاق ہوگیا، عمل درآمد آج رات سے شروع ہوگا، روس اور ترکی جنگ بندی کی نگرانی کریں گے۔

عرب ٹی وی کا کہنا ہے کہ روسی صدر ولادی میر پوٹن نے شامی حکومت اور اپوزیشن کے درمیان طے پانے والے جنگ بندی کے معاہدے سے آگاہ کیا۔

روسی وزیر دفاع نے بتایا کہ آج رات سے نافذ العمل ہونے والے معاہدے پر سات اپوزیشن جماعتوں نے دستخط کیے ہیں جن کے جنگجوؤں کی تعداد ساٹھ ہزار سے زائد ہے،معاہدے کے تحت روس شام میں اپنی فوجی موجودگی کو بھی کم کرے گا۔

دوسری جانب شامی صدر بشار الاسد کی وفادار فوج نے بھی جنگ بندی پر پابندی سے عمل کرنے کا اعلان کر دیا ہے۔

روسی صدر ولادی میر پوٹن نے شام میں روسی افواج میں کمی کا اعلان کرتے ہوئے کہا ہے کہ شامی حکومت اورباغی گروہ شام امن مذاکرات شروع کرنے پر رضامند ہیں۔

غیرملکی خبرایجنسی کے مطابق شامی اپوزیشن اتحاد نے سیز فائر ڈیل کی حمایت کر دی،شامی فوج آج رات 12بجےسےفوجی آپریشنز روک دے گی۔