- الإعلانات -

ڈونلڈ ٹرمپ کو عہدہ سنبھالنے کے بعد زبان قابو میں رکھنا ہوگی، سی آئی اے چیف

واشنگٹن: امریکا کی خفیہ ایجنسی کے سربراہ جان برینن نے نو منتخب صدر ڈونلڈ ٹرمپ کو خبردار کیا ہے کہ  انہیں صدارتی عہدہ سنبھالنے کے بعد اپنی زبان پر قابو رکھنا ہوگا کیوں کہ ان کے حلف لینے کے بعد ریاست ہائے متحدہ امریکا کا مفاد اولین ہوگا۔

غیرملکی خبررساں ادارے کے مطابق سی آئی اے چیف جان برینن کا کہنا ہے کہ نومنتخب صدر ڈونلڈ ٹرمپ جب بات کرتے ہیں یا ٹوئٹر پر کوئی پیغام دیتے ہیں تو انہیں یہ یقینی بنانا ہوگا کہ اس سے ملکی مفادات متاثر نہ ہوں کیوں کہ اب یہ معاملہ صرف ان کا نہیں بلکہ ریاست ہائے متحدہ امریکا کا ہے اور جب وہ اپنے عہدے کا حلف اٹھا لیں گے تو سب سے مقدم ملکی مفاد ہوگا۔ انہوں نے کہا کہ ڈونلڈ ٹرمپ روس کی اہلیت اور نیتوں کے بارے میں زیادہ اداراک نہیں رکھتے اور روس کو ہرمعاملے میں بری الذمہ قرار دینے میں احتیاط کا مظاہرہ کریں۔

سی آئی اے چیف نے کہا کہ امریکا کا صدر ٹوئٹر پر پیغامات کے ذریعے ملکی اہمیت کےاعلانات نہیں کر سکتا، نو منتخب صدر ڈونلڈ ٹرمپ تواتر کے ساتھ قومی اہمیت کےحامل معاملات پر ٹوئٹر پیغامات کےذریعے اعلانات کر رہے ہیں۔

نومنتخب صدر ڈونلڈ ٹرمپ کی جانب سے ان کی نجی زندگی کے بارے میں خبر ذرائع ابلاغ کو فراہم کرنے سے متعلق انٹیلی جنس اداروں پر الزام عائد کرنے پر سی آئی اے چیف نے انہیں شدید تنقید کانشانہ بنایا اور کہا کہ ایسی معلومات جو پہلے ہی میڈیا کے پاس تھیں اس پر امریکی انٹیلی جنس اداروں کو مورد الزام ٹہھرانے کا کوئی جواز نہیں ہے۔